مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
.مسیحی برادری سے اظہار یکجہتی کیلئے پاکستان تحریک انصاف لندن کاشمع بردار مظاہرہ
لندن...مسیحی برادری سے اظہار یکجہتی کیلئے پاکستان تحریک انصاف لندن کے زیر اہتمام ٹرافلگر سکوائر پر شمع بردار مظاہرہ کیا گیا. پی ٹی آئی لندن کے صدر شہباز خان سمیت دیگر شرکا نے کہا کہ دہشت گردی کی وجہ سے ہونے والی ہلاکتوں کے سبب پوری دنیا میں اسلام اور پاکستان کی بدنامی ہورہی ہے ۔انھوں نے کہا اس طرح کے شرمناک ملوث عناصر پاکستان کے دشمن ہیں،انھوں نے پاکستان کی سیاسی پارٹیوں سے مطالبہ کیا کہ ہو دہشت گردی کوشکست دینے کیلئے مشترکہ حکمت عملی ترتیب دیں، انھوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے قائد عمران خاں کی جانب سے طالبان کے ساتھ مذاکرات کامطالبہ درست ہے کیونکہ کم وبیش 12 سال کی جنگ کا کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہوا اور اس نے پاکستان کو تباہی کی جانب دھکیل دیا ہے، پی ٹی آئی لندن کے صدر شہباز خاں نے کہا کہ اوورسیز پاکستانی پشاور چرچ میں دھماکوں کی پرزور مذمت کرتے ہیں، مسیحی بھائیوں اور بہنوں پر اس حملے نے ہمیں افسردہ کردیا ہے،مسیحی برادری نے پاکستان کی حدود میں رہتے ہوئے پاکستان کی فلاح وبہبود کیلئے دوسروں کی طرح ہی کام کیا ہے، یہ پاکستان کا خوبصورت چہرہ ہیں لیکن پاکستان کے دشمن پاکستان کاچہرہ مسخ کرنا چاہتے ہیں۔اور ہم اپنے مسیحی بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔دہشت گردی کی اس جنگ میں پاکستان کی ہر کمیونٹی نے نقصان اٹھایا ہے، اب ہمیں اپنے وطن پاکستان میں قیام امن کیلئے متحد ہوجانا چاہئے، دشمن کو ہماری صفوں میں دراڑیں ڈالنے ہمیں تقسیم کرنے کاموقع نہ دیں، انھوں نے کہا کہ امن کی راہ بہت دشوار گزار ہے اس کیلئے بہت زیادہ تحمل کی ضرورت ہے لیکن پاکستان کوسپر نہیں ڈالنی چاہئے اور پاکستان کے خلاف لڑنے والے تمام لوگوں سے مذاکرات کرنے چاہئیں اور امن کو ایک موقع دینا چاہئے۔ شرکا شمعین ہاتھوں میں اٹھائے 2 گھنٹے سے زیادہ دیر تک ٹرافلگر سکوائر پر کھڑے رہے..