مقبول خبریں
سیریا ریلیف کی چیئر پرسن ڈاکٹر شمیلہ کی طرف سے چیرٹی بر نچ کا اہتمام ، کمیونٹی خواتین کی شرکت
مسئلہ کشمیر بارےیورپی پارلیمنٹ انتخابات پر برطانیہ و یورپ میں بھرپور لابی مہم چلائینگے،راجہ نجابت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
سرچ آپریشن
پکچرگیلری
Advertisement
بلوچستان میں چند دن کے وقفے سے ایک اور زلزلہ امدادی ٹیموں کو مشکلات کا سامنا
کوئٹہ... پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں چند دن کے وقفے سے ہفتہ کے روز پھر زلزلے کے شدید جھٹکے محسوس کئے گئے جس سے مشکے کے علاقے میں مزید تباہی ہوئی ہے۔ مقامی وقت کے مطابق زلزلہ دن بارہ بج کر چونتیس منٹ پر آیا اور ریکٹر سکیل پر اس زلزلے کی شدت سات اعشاریہ دو ریکارڈ کی گئی محکمۂ موسمیات کے اہلکار نے بتایا کہ زلزلے کا مرکز آواران کے جنوب میں خضدار کا علاقہ تھا اور یہ چھیالیس کلومیٹر کی گہرائی میں آیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ گزشتہ منگل کو آنے والے زلزلے کا آفٹر شاک نہیں بلکہ خود ایک شدید زلزلہ تھا۔ ضلع آواران کے ڈپٹی کمشنر رشید بلوچ نے ذرائع ابلاغ کو بتایا کہ مشکے میں پہلے سے ہی امدادی کارروائیاں جاری تھیں اور اب متاثرہ علاقوں میں مزید امداد بھیجی جا رہی ہے۔ رشید بلوچ کا یہ بھی کہنا تھا کہ زلزلے سے مواصلاتی نظام بری طرح متاثر ہوا ہے جس سے متاثرہ علاقے سے معلومات کے حصول میں مشکلات کا سامنا ہے۔ اس زلزلے کے جھٹکے بلوچستان کے تمام علاقوں کے علاوہ کراچی سمیت صوبہ سندھ کے بیشتر حصے میں محسوس کیے گئے۔ اس کے علاوہ زلزلے کا اثر سلطنتِ اومان اور ایران کے جنوبی علاقوں میں بھی محسوس کیا گیا۔