مقبول خبریں
دار المنور گمگول شریف سنٹر راچڈیل میں جشن عید میلاد النبیؐ کے حوالہ سےمحفل کا انعقاد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بلوچستان میں چند دن کے وقفے سے ایک اور زلزلہ امدادی ٹیموں کو مشکلات کا سامنا
کوئٹہ... پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں چند دن کے وقفے سے ہفتہ کے روز پھر زلزلے کے شدید جھٹکے محسوس کئے گئے جس سے مشکے کے علاقے میں مزید تباہی ہوئی ہے۔ مقامی وقت کے مطابق زلزلہ دن بارہ بج کر چونتیس منٹ پر آیا اور ریکٹر سکیل پر اس زلزلے کی شدت سات اعشاریہ دو ریکارڈ کی گئی محکمۂ موسمیات کے اہلکار نے بتایا کہ زلزلے کا مرکز آواران کے جنوب میں خضدار کا علاقہ تھا اور یہ چھیالیس کلومیٹر کی گہرائی میں آیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ گزشتہ منگل کو آنے والے زلزلے کا آفٹر شاک نہیں بلکہ خود ایک شدید زلزلہ تھا۔ ضلع آواران کے ڈپٹی کمشنر رشید بلوچ نے ذرائع ابلاغ کو بتایا کہ مشکے میں پہلے سے ہی امدادی کارروائیاں جاری تھیں اور اب متاثرہ علاقوں میں مزید امداد بھیجی جا رہی ہے۔ رشید بلوچ کا یہ بھی کہنا تھا کہ زلزلے سے مواصلاتی نظام بری طرح متاثر ہوا ہے جس سے متاثرہ علاقے سے معلومات کے حصول میں مشکلات کا سامنا ہے۔ اس زلزلے کے جھٹکے بلوچستان کے تمام علاقوں کے علاوہ کراچی سمیت صوبہ سندھ کے بیشتر حصے میں محسوس کیے گئے۔ اس کے علاوہ زلزلے کا اثر سلطنتِ اومان اور ایران کے جنوبی علاقوں میں بھی محسوس کیا گیا۔