مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر مظالم: اقوام متحدہ کا کردار قابل مذمت اور مایوس کن ہے:راجہ محمد یاسین
بولٹن:مقبوضہ کشمیر کے اندر پچھلے ایک ماہ سے بھارتی سکیورٹی اداروں کی وحشیانہ کارروائیاں نئی منصوبہ بندی سے کی جا رہی ہیں ویسے تو وہاں پر انسانیت سوز اور دلخراش واقعات کی داستان کئی سالوں پر محیط ہے،عورتوں کی اجتماعی عصمت دری سے لے کر بچوں پر ظلم و ستم ڈھانے کے واقعات معمول بن چکے ہیں لیکن اب کی باران وحشی درندوں نے انسانیت پر ظلم و ستم پہنچانے کا انوکھا طریقہ کار استعمال کرتے ہوئے شکار میں استعمال ہونے والی شرہ رائفل کا استعمال کر کے بڑوں،نوجوانوں اور بچوں کے جسموں پر داغ لگانے کے ساتھ ساتھ آنکھوں کو نشانہ بنا کر اندھا کرنا شروع کر دیا ہے اور اپنے گھنائونے منصوبے میں کامیاب ہیں ایسے میں بین الاقوامی سطح پر خاموشی اور اقوام متحدہ کا کردار انتہائی قابل مذمت اور مایوس کن ہے،ان خیالات کا اظہار آزاد کشمیر کے سابق وزیر اور مسلم کانفرنس پارلیمانی بورڈ کے چیئرمین راجہ محمد یاسین نے مسلم کانفرنس برطانیہ کے بزرگ راہنما شیخ محمد نذیراور مسلم کانفرنس برطانیہ کے نائب صدر شیخ محمد سرفراز کی رہائش گاہ پر رکھی گئی ایک ضیافت کے دوران کیا،انہوں نے مزید کہا کہ بھارت کو جان لینا چاہئے کہ جب کسی قوم کے ننھے منے ہونہار بچے غلیلوں میں پتھر ڈال کر سکیورٹی اداروں کے اہلکاروں کے ساتھ لڑنے کیلئے میدان عمل میں کود پڑیں تو پھر وہ قومیں آزادی کو حاصل کئے بغیر چین سے نہیں بیٹھتیں،انہوں نے کہا کہ اس وقت حالات اس بات کا تقاضا کرتے ہیں کہ آر اور پار کی سیاسی قیادت کو ایک میز پر بیٹھ کر جدو جہد آزادی کشمیر کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے متفقہ لائحہ عمل اختیار کرنا ہو گا وگرنہ کشمیری قوم ہمیں کبھی معاف نہیں کرے گی،تحریک آزادی کشمیر انتہائی نازک موڑ پر کھڑی ہے اب آزادی مل کر ہی رہے گی،انہوں نے کہا کشمیر کی سواد اعظم جماعت مسلم کانفرنس ہمیشہ سے تحریک کی داعی رہی ہے اور ہماری قیادت اپنا کردار ادا کرنے کیلئے مخلصانہ طور پر ہر کسی کے ساتھ چلنے کیلئے تیار ہیں اس میں تمام فریقین کو خلوص نیت کا عملی مظاہرہ کرنا چاہئے،انہوں نے آزاد کشمیر کے ہونے والے حالیہ انتخابات میں منظم دھاندلی بارے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ میں روایتی سیاست سے ہٹ کر کہنا چاہتا ہوں کہ پولنگ والے دن مسلح افواج، رینجرز اور پولیس کی موجودگی میں مجموعی طور پر پر امن انتخابات ہوئے اور اس دن دھاندلی کے واقعات رونما نہیں ہوئے لیکن وزارت امور کشمیر نے قانون کی تمام دھجیاں اڑاتے ہوئے الیکشن سے پہلے کشمیر کونسل کی مد میں دو ارب روپے بے نام مختص کئے اور ریاست بھر میں مسلم لیگ ن کے امیدواروں کو اسکیمیں دے کر عوام کو جھانسہ دیا گیا اور پھر تین دن پہلے ہر امیدوار کو5کروڑ نقد رقم دے کر عوام کا ضمیر خریدا گیا ایسا پاکستان کے کاروباری سوچ کے مالک وزیر اعظم کا وطیرہ رہا ہے اور وہی تاریخ کشمیر کے اندر دھرائی گئی پھر بھی ہم کھلے دل سے نتائج کو تسلیم کرتے ہیں اور توقع کرتے ہیں کہ موجودہ حکومت ریاست کی عوام کے حالت زندگی بہتر بنانے اور رفاع عامہ کے کاموں میں خصوصی توجہ دے کر اقدامات اٹھائے گی اور بحیثیت اپوزیشن جماعت ہم اپنا مثبت کردار ادا کرتے رہیں گے،سیاست میں انتقامی کارروائیاں برداشت نہیں کی جائیں گی،اس موقع پر مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر چوہدری بشیر احمد رٹوی،نائب صدرشیخ سرفراز،چیئرمین سفارتی بورڈ چوہدری محمد ذوالفقار،حلقہ نمبر سات بھمبر سے امیدوار اسمبلی چوہدری محمد مصطفیٰ،فہیم عباسی،شاہد آفتاب،سابق ممبر کشمیر کونسل چوہدری خورشید احمد،شیخ نوید،محمد سعید اور بزرگ ہستی شیخ حاجی محمد نذیر بھی موجود تھے۔بیورو رپورٹ:فیاض بشیر