مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان کرکٹ بورڈ کے مدہوش عہدیدار کھلاڑیوں کو کیا سبق دے سکتے ہیں ؟
لندن ... پاکستان کرکٹ ٹیم کی بہادری یا نئے لڑکوں کی وجہ سے برکت کے باعث انگلش سیریز میں عزت بچی ہوئی ہے ورنہ بڈھے اور مدہوش عہدیداران ک ے حواس پر تو سارا دن کھیل کے دوران بھی رات کی رنگینیاں ہی چھائی ہوتی ہیں۔ کشمیر لنک کی انویسٹی گیشن ٹیم کے مطابق ٹیم کے کچھ لڑکے انضمام الحق کی وجہ سے نماز اور اللہ توبہ پر مائل ہیں ورنہ سیکولر چیئرمین اور وڈے چیئرمین تو محفلوں میں سرعام اچھی وائن کا نام بتانے سے بھی گریز نہیں کرتے۔ پہلے ہی ٹیسٹ کے دوران میڈیا مینیجر صاحب ٹن پروگرام کے بعد ایسے جھومے کے سیدھے ناک کے بل گرے جس پر کافی چوٹیں بھی آئیں لیکن صحافی دوستوں کو دی جانے والی ایکسٹرا مراعات کی وجہ سے معاملہ دب گیا۔ واضع رہے کہ جن پاکستانی صحافیوں کو ایکریڈیشن دی گئی ہے ان میں سے آدھے تو صرف ایک ہی میڈیا گروپ سے ہیں باقی بھی دائیں بائیں سے کوئی نا کوئی رابطہ رکھتے ہی ہیں۔ انہی میڈیا مینیجر کی مہربانی سے گنتی کے چند صحافی ناصرف انگلینڈ میں ایکریڈیشن حاصل کرتے ہیں بلکہ دوبئی کا قرعہ نھی انہی کے نام نکلتا ہے، انکی دیدہ دلیری کی انتہا دیکھیئے کہ کتنی دھٹائی سے اپنوں کو نوازتے ہیں۔ وطن سے محبت کی انکی ایک تازہ مثال بھی دیکھ لیں کہ سابق پاکستانی کپتان شاہد کان آفریدی نے انگلینڈ میں کھلاڑیوں کی موجودگی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایک چیریٹی ڈنر کا ارادہ کیا تو پی سی بی والوں نے صاف انکار کردیا۔ جی ہاں کسی کلب جانا ہو تو اجازت کوئی نیک کام کرنا ہو تو ناں جی ناں منڈے خراب ہوجاتے ہیں۔