مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
اقوام متحدہ کی قراردادوں کے ذریعے مسئلہ کشمیر کا پائیدار حل ضروری ہے:بیرونس سعیدہ وارثی
پیٹر برا:برطانیہ کے شہر پیٹر برا میں مسلم کونسل آف پیٹر برا کی جانب سے ایک عید ملن پارٹی کا اہتمام کیا گیا جس میں مسلمانوں کے علاوہ دیگر مذاہب کی بھی ایک اکثریت نے شرکت کی،مہمان خصوصی کنزرویٹو پارٹی کی سابق چیئرمین برطانوی ہائوس آف لارڈ کی رکن بیرونس سعیدہ وارثی ہائی شرف کیمبرج شائر،کاروباری شخصیت چوہدری عبدالعزیز،چیف ایگزیکٹو جیلسن بیسلے،نوید ملک اسسٹنٹ چیف کانسٹیبل،سابق میئر چوہدری محمد ایوب،ڈاکٹر نواز اور دیگر نے شرکت کی،اس موقع پر مقبوضہ کشمیر میں بھارتی سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں حالیہ دنوں میں شہادتوں اور فرانس میں دہشت گردی سے جاں بحق ہونے والے افراد کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے اور انکی فیملیز کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ایک منٹ کی خاموشی بھی اختیار کی گئی،بیرونس سعیدہ وارثی نے اپنے خطاب میں کہا کہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے ذریعے مسئلہ کشمیر کا پائیدار حل ضروری ہے وگرنہ خطے کا دائمی امن نا ممکن ہے،سعیدہ وارثی کا کہنا تھا کہ1980کے بعد شام،عراق،افغانستان اور لیبیا کے حالات خراب ہونے کے بعد دہشت گردی کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے انہوں نے کئی سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے رمضان المبارک میں روزے کی فضیلت اور اہمیت کو بھی اجاگر کیا،پاکستان ہیومن رائٹس کے چیئرمین چوہدری عبدالعزیز نے کہا کہ برطانیہ میں تجارت،سیاست اور دیگر شعبوں میں ترقی کے یکساں مواقع میسر ہیں جس کی وجہ سے وہ خود پاکستانی ہونے کے باوجود آج ایک کامیاب بزنس مین ہیں ان کا کہنا تھا جب ہم اپنی تقریبات کا اہتمام کریں تو غیر مسلموں یا دیگر مذاہب کے لوگوں کو بھی اگر مدعو کریں تو ہم آہنگی اور باہم رواداری کا کلچر فروغ پا سکتا ہے،انہوں نے کہا کہ برطانیہ میں رہتے ہوئے یہ فکر چھوڑ دینی چاہئے کہ یہ ہمارا ملک نہیں ہے،برطانیہ کے مفادات بھی ہمارے مفادات سے جڑا ہوا ہے،اس موقع پر سابق میئر چوہدری ایوب،راجہ لیاقت، افضل چوہدری اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔