مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بگ جان میلہ :70ہزار سے زائد افراد کی شرکت،پاکستانی کلچرل، ثقافت سے لطف اندوز ہوتے رہے
برمنگھم:بگ جان برمنگھم میلہ میں70ہزار سے زائد افراد نے شرکت کر کے پاکستانی کلچرل اور ثقافت سے بھرپور لطف اندوز ہوئے جنوبی ایشیا اور بالخصوص پاکستان کے کلچر کو برطانیہ میں فروغ دینے کیلئے بگ جان میلہ مدد گار ثابت ہو گا،برنگھم میں بسنے والی تمام کمیونٹیز پاکستانی ثقافت کی دل دادہ بن گئی،میلہ کی افتتاحی تقریب میں فرانس پاکستان و کشمیر میں حالیہ دہشت گردی میں مرنے والوں کی یاد میں ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی، بگ جان میلہ کا باقاعدہ افتتاح لارڈ میئر برنگھم کونسلر کارل رائس نے آرگنائزر کے ہمراہ کیا،اس موقع پر بگ جان میلہ کے مین سپانسرز جہانگیر صدیق، بابر صدیق،قاسم چوہدری،سٹی کونسل میلہ کمیٹی کی چیئر پرسن کونسلر مریم خان،کونسلر ذاکر اللہ چوہدری،عنصر خان محمد ادریس سمیت کثیر تعداد میں سپانسرز نے شرکت کی،نظامت کے فرائضBBCکی مشہور پرزنٹر نورین خان اور تامی سانڈو نے اپنے مخصوص انداز میں کمپیئرنگ کی،میلہ میں بھارتی،پاکستانی گلوکاروں،رقاصائوں اور بھنگڑا گروپ،ڈھولچیوں نے اپنے اپنے فن کا مظاہرہ کر کے شرکاء کو جھومنے پر مجبور کر دیا،معروف گلو کاروں میں عمران خان،برمنگھم کے مقامی سنگر آصف خان،پنجابی گیتوں کی ملکہ میں پوجا ذیگ نائٹ،جگی ڈی،بھونا مائیڈنے اپنے اپنے مخصوص انداز میں اپنے فن کا جادو جگایا،خواتین بچوں کے ہمراہ کھانوں اور شاپنگ کے سٹالوں میں مصروف نظر آئیں،پنجابی بھنگڑا گروپ نے اپنے فن کا مظاہرہ کر کے نوجوانوں کو جھومنے پر مجبور کر دیا،میلہ کے آرگنائزر نے شرکاء کی گہری دلچسپی کو دیکھ کر آئندہ برس اس سے بھی بڑے پیمانے پر انعقاد کا اعلان کر دیا،میلہ میں پاکستانی ثقافتی،روایتی کھیل کبڈی،کراٹے اور دیگر کھیل سے شرکا لطف اندوزہوتے رہے،بالخصوص پاکستانی کھانے شرکا کی توجہ کا مرکز بنے رہے،پاکستانی کشمیری خواتین سمیت دیگر کمیونٹیز کی خواتین شاپنگ میں مصروف رہیں،سلائیڈنگ رائیڈز اور دیگر گیمز سے کھیلتے رہے،بڑا سٹیج سجا رہا،نوجوان لڑکے،لڑکیاں دن بھر اپنے پسند کے گلو کاروں سے گیتوں کی فرمائشیں کرتے رہے،بالخصوص پنجابی روایتی ڈانس بھنگڑا کے موقع پر نوجوان لڑکے لڑکیاں ناچ ناچ کر داد دیتے رہے،پورا دن مزے ہی مزے،کھانا،گانا دو ہی کام تھے،صحیح معنوں میں کمیونٹیز نے انجوائے کیا،نظم و ضبط کا بہترین نظام دیکھنے میں آیا،زیادہ تر لوگوں نے پبلک ٹرانسپورٹ استعمال کی،اطراف کی سڑکوں پر پبلک پارکنگ اور پرائیوٹ سکیورٹی اہلکاروں کی ٹیمیں موجود تھیں،ویسٹ مڈ لینڈ پولیس،فائر بریگیڈ،ایمبو لینس اور سٹی کونسل کی ٹیمیں ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے چوکس تھے تاہم کوئی نا خوشگوار واقعہ پیش نہ آیا۔