مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
عوام اور خطے کی بہتری کیلئے کشیدگی کے باوجود پاک بھارت وزرا اعظم ملاقات پر تیار !!
اسلام آباد...اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کے لئے امریکہ گئے وزیر اعظم پاکستان میاں محمّد نواز شریف نے کہا ہے کہ وہ اپنے بھارتی ہم منصب سے ملاقات کے منتظر ہیں تاکہ دونوں ممالک کے درمیان امن کی کوششوں کو پھر سے شروع کیا جاسکے۔ پاكستانی وزیر اعظم نواز شریف اور ان كے بھارتی ہم منصب منموہن سنگھ كے درمیان ملاقات اتوار كو شیڈول ہے جس میں باہمی تعلقات سمیت امن مذاكرات بحال كرنے پر بات چیت كی جائے گی۔ نواز شریف کا بیان بھارتی وزیراعظم من موہن سنگھ کی اس بات کے ردعمل میں تھا جس میں انھوں نے جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر پاکستانی رہنما سے ملاقات کا کہا تھا۔ تاہم بھارتی میڈیا اور انتہا پسند سیاستداں ایسی ملاقات کے نہ ہونے پر زور دے رہے ہیں اور مقبوضہ کشمیر کے حالیہ واقع کو پاکستان کے سر تھوپ رہے ہیں جس میں ان کا ایک لیفٹیننٹ کرنل اور دیگر سپاہی جاں بحق ہو گئے ہیں.. بھارتی میڈیا اور بی جے پی نے تحقیقات سے قبل ہی سارا الزام پاکستان پر ڈالتے ہوئے من موہن سنگھ سے پاک بھارت مذاکرات ختم کرنے کا مطالبہ کردیا۔ مقبوضہ جموں میں حملہ آوروں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان مقابلے کے انجام تک پہنچنے سے پہلے ہی بھارتی میڈیا اور بی جے پی نے اپنا کام شروع کردیا، تاحال نہ کوئی حملہ آور پکڑا گیا، کسی کی شناخت ہوئی نہ کسی نے ذمہ داری قبول کی، تاہم بھارتی میڈیا نے ہمیشہ کی طرح اپنا منفی روپ دکھانا شروع کردیا، میڈیا نے حملے کا الزام پاکستان پر ڈال دیا اور نواز من موہن ملاقات منسوخ کرانے کیلئے کوششیں تیز کردیں۔ بھارتی وزیراعظم من موہن سنگھ نے مذاکرات سبوثاز کرنے کی تمام سازشوں کو یکسر مسترد کردیا اور جرأتمندانہ موٴقف اپنا یا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں حملوں جیسے واقعات مذاکرات کو ڈی ریل نہیں کرسکتے۔ دونوں ہمسایہ ایٹمی طاقتوں کے درمیان حالات حالیہ مہینوں میں لائن آف کنٹرول پر فائرنگ کے تبادلوں کے بعد تناؤ کا شکار رہے ہیں لیکن پاکستان بھارت کے ساتھ اچھے ہمسایوں جیسے تعلقات استوار رکھنے کا عزم ظاہر کر چکا ہے۔