مقبول خبریں
چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخر امام سے راجہ نجابت اورحریت رہنماء عبدالحمیدلون کی ملاقات
کرالے میں اوورسیزپاکستانیوں کی میٹنگ،مختلف طبقہ ہائے فکر کے افراد کی شرکت
دعوت اسلامی برمنگھم کے زیر اہتمام خراب موسم کے باوجودجشن عید میلاد النبیؐ کا جلوس
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سردار عتیق کی قیادت میں جدوجہد آزادی پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے:رہنما ایم سی
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
مقبوضہ کشمیرمظالم:عالمی طاقتوں، اقوام متحدہ کو کردار ادا کرنا ہو گا : ڈاکٹر سجاد کریم
بلقیس بانو زندہ کیوں؟؟؟؟؟
پکچرگیلری
Advertisement
عبدالستار ایدھی دکھی انسانیت کیلئے مسیحا کی حیثیت رکھتے تھے: مقامی ،سماجی اورمذہبی رہنما
اولڈہم:پاکستان کے معرض وجود آنے کے بعد انسانیت کی خدمت کو اپنی زندگی کا مسکن بنا کر تا قیامت اپنا نام امر کر گئے ہیں،عبدالستار ایدھی مرحوم دکھی انسانیت کیلئے مسیحا کی حیثیت رکھتے تھے،ہمارے پاس ایسے الفاظ و القاب نہیں ہیں جو اس عظیم ہستی کیلئے جائیں،ان خیالات کا اظہار مقامی ،سماجی اورمذہبی شخصیات حاجی بشیر،حاجی الطاف،قاری خادم حسین چشتی،مولانا عبدالشکور قادری،مولانا شفیق الرحمن شاہین،کونسلر عتیق الرحمن،راجہ مقصود حسین کاکڑوی،راجہ صغیر،چوہدری الطاف شاہد شدھو،سید باسط شاہ مشوانی،چوہدری شبیر احمد اور دیگر نے اس عظیم سانحہ کے فوراً بعد میڈیا نمائندگان سے ٹیلی فونک بات چیت کرتے ہوئے کیں،انہوں نے کہا کہ انکی شخصیت کے اندر سادگی عاجزی و انکساری کے علاوہ انسانیت کیلئے ہمدردی کوٹ کوٹ کر بھری ہوئی تھی،انکی ایمبو لینس سروس دنیا بھر میں پہلے نمبر پر تھی دنیا بھر میں تمام اقوام انکو عزت کی نگاہ سے دیکھتے تھے وہ دھرتی پاکستان کا فخر تھے اور پچھلے ساٹھ سال سے انسانیت دوستی کا رشتہ نبھا رہے تھے یہ ایک ایسا خلا ہے جو کبھی بھی پر نہیںہو سکے گا،انہوں نے کہا کہ ایسے موقع پر مرکزی اور صوبائی حکومتوں نے اسے قومی سانحہ قرار دیتے ہوئے سوگ کا اعلان کیا ہے،عبدالستار ایدھی مرحوم کی شخصیت اس کی اصل حقدار تھی بلکہ انہوں نے پاکستان کی دکھی انسانیت کی خدمت کر کے جو کام حکومتوں کوکرنا تھا خود کر کے ان پر احسان عظیم کیا،انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں فلاحی کاموں کا آغاز اسی عظیم شخصیت نے کیا تھا،انہوں نے کہا کہ دکھ کی اس گھڑی میں وہ لواحقین،دوست احباب اور عزیز و اقارب کے ساتھ برابر شریک ہیں اور رب العزت کی بارگاہ کی دعا گو ہیں کہ انہیں جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام فرمائیں اور خاندان اور پاکستان کو یہ عظیم صدمہ برداشت کرنے کی ہمیت و توفیق عطا فرمائیں ’’ آمین ‘‘