مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بلوچستان میں زندہ انسان بستے ہیں بنیادی انسانی ضروریات پر انکابھی حق ہے:ڈاکٹر مالک بلوچ
لندن... وزیر اعلی بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ نے کہا ہے کہ ہم لوگوں کو اس حقیقت کی طرف مائل کر رہے ہیں کہ یہ اکسویں صدی ہے جہاں محبت اور امن کی بات ہو رہی ہے لڑائی جھگڑے اور قتل و غارت گری میں کچھ نہیں رکھا جدید دور کا فائدہ اٹھاتے ہوئی ے ترقی کی راہ اپناؤ خود بھی جیو اور سب کو جینے دو، ان خیالات کا اظہار انہوں نے برطانوی دارالحکومت لندن میں ورلڈ کانگریس آف اوورسیز پاکستانیز کی جانب سے منعقدہ ایک تقریب میں بطور مہمان خصوصی کیا ، تنظیم کے چیرمین سید قمر رضا نے ڈاکٹر مالک بلوچ، میر حاصل بزنجو اور پیر مظہر الحق کو تقریب میں خوش آمدید کہا جبکہ بورڈ آف گورنرز کے ممبران مظفر چودھری، ناہیدرندھاوا، طارق چودھری, چودھری محبوب اور ماجد چودھری نے بھی اس موقع پر خیالات کا اظہار کیا..مہمان خصوصی ڈاکٹر مالک بلوچ نے مزید کہا کہ پاکستان میں جمہوریت کا تسلسل خوش آئند ہے گو سابقہ دور میں بہت کوتاہیاں ہوئیں لیکن انھیں یہ اعزاز ضرور حاصل ہو گیا کہ انہوں نے جمہوریت کو مضبوط کیا ، ایک وقت تھا جب مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی آپس میں لڑا کرتی تھیں آج ان میں اتفاق ہے تو مقصد صرف ملک و قوم کا مفاد ہے اسی طرح بلوچستان سمیت تمام ناراض لوگوں کو وطن کی خاطر ایک ہونا ہے , انہوں نے کہا ہماری حکومت کے تین ماہ میں ایک بھی کرپشن کا کیس سامنے نہیں آیا ہمارا فوکس بلوچ عوام میں احسام کمتری کو ختم کرنا ہے وہ بھی پاکستان کا حصہ ہیں انکے بچوں کا بھی حق ہے کہ وہ سکول جائیں سابقہ ادوار کی غلطیوں سے وہ بہت پسماندہ رہ گئے ہیں ہم سب کو مل کر ان غلطیوں کا ازالہ کرنا ہے انہوں نے کہا بلوچستان میں فرقہ پرستی، دراندازی، غربت اور جہالت بڑے مسائل ہیں ہمیں ان سے نبٹنا بھی ہے اور آگے بھی بڑھنا ہے بلوچستان کے عوام کو پاکستان کے عوام سے جوڑنا ہے انہوں نے کہا اس سلسلے میں ہم جلد ہی ایک کانفرنس بلانے والے ہیں جس میں ورلڈ کانگریس آف اوورسیز پاکستانیز کو بھی دعوت دی جی ے گی کہ آئین اور اپنے وطن کے پسماندہ ٹکڑے بلوچستان کو سنوارنے میں ہماری مدد کریں ہم چاہتے ہیں کہ وہاں جو سکول ہیں اس میں اساتزہ ہوں وہاں بچے روشن مستقبل کیلئے تعلیم حاصل کریں، اسپتالوں میں ڈاکٹر اور ضروری سامان موجود ہو کیونکہ وہاں بھی زندہ و جاوید انسان بستے ہیں زندگی کی بنیادی ضروریات پر تو ان کا بھی حق ہونا چا ہیے ..کانگریس کے شریک چیئرمین سید قمر رضا نے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کرتے ہووے ڈاکٹر مالک بلوچ اور میر حاصل بزنجو کو یقین دلایا کہ تارکین وطن ترقے و خوش ہالی کے ہر اقدام میں اپنے بلوچ بہن بھایوں کے ساتھ ہیں انہوں نے کہا دنیا بھر میں پہلے سات ملین اوورسیز پاکستانی صرف اپنی اور ملک کی بقا کی جنگ نہیں لڑرہے بلکہ پوری دنیا کے امن کے لئے لڑ رہے ہیں ہم باہمت لوگ ہیں ایک دن ضرور مصائب پر قابو پا لین گے ...دریں اثناء ڈاکٹر مالک بلوچ کی لندن آمد کے بارے میں بلوچستان حکومت کے نمائندے نے کہا تھا کہ وزیرِ اعلیٰ کو سیاسی و دیگر مسائل کے مذاکراتی حل کے لیے تمام ضروری اقدامات کا اختیار دیا گیا ہے اور اُن کا دورہِ لندن اس سلسلے کی ہی کڑی ہے۔ وہ سیاسی لوگ جو اس وقت پاکستان سے اپنی بے زاری کی بات کر رہے ہیں، علیحدگی کی بات کر رہے ہیں اُن کو اس بات پر قائل کیا جائے کہ وہ آ کر میز پر بیٹھیں اور اپنے سیاسی مسائل، معاملات کو بیٹھ کر حل کرنے میں ہماری مدد کریں۔ ڈاکٹر مالک بلوچ اپنی کوششوں کے سلسلے میں دیگر مقامی قائدین کے ہمراہ ان دنوں لندن کا دورہ کر رہے ہیں، جہاں خود ساختہ جلا وطنی کی زندگی گزارنے والے بی ایل اے کے راہنما حربیار مری سے اُن کی ملاقات کا عندیہ دیا گیا ہے.. اطلاعات کے مطابق ڈاکٹر مالک بلوچ لندن میں ایک درمیانے درجے کے ہوٹل میں اپنے خرچ پرپرانے دوستوں کے ساتھ قیام پزیر ہیں انہوں نے پاکستان ہائی کمیشن کی طرف سے کسی قسم کا پروٹوکول لینے سے انکار کردیا تھا ۔