مقبول خبریں
اولڈہم ہوپ ووڈ ہاؤس ہیلتھ سنٹر میں خواتین کو آگاہی دینے کیلئے لیڈی ہیلتھ ڈے کا اہتمام
بھارتی لابی نے کشمیر کانفرنس کوانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کیے: شاہ محمود قریشی
تحریک کشمیر ڈنمارک کے زیر اہتمام کوپن ہیگن میں اظہار یکجہتی کشمیر کانفرنس کا انعقاد
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
کشمیر‘ جہاں خواب بھی آنسو کی طرح ہیں!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
OPWCکی پہلی سالگرہ کا کیک کاٹا گیا،کمیونٹی خدمات جاری رکھنے کا عزم
ہائی ویکمب:اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کی پہلی سالگرہ کی تقریب ہائی ویکمب میں منعقد ہوئی،تقریب میں میئر آف ہائی ویکمب کونسلر ضیا احمد اور ڈپٹی میئر آف ہائی ویکمب مزمل حسین نے خصوصی شرکت کی،تقریب میں پہلی سالگرہ کا کیک کاٹا گیا،چیئرمین وبانی اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل نعیم عباسی نقشبندی،مرکزی آرگنائزر راجہ شکیل حیدر،مرکزی ترجمان پروفیسر مسعود اختر ہزاروی،مرکزی وائس چیئرمین چوہدری آفتاب حسین،کوآرڈینیٹر پروفیشنل ونگ انجینئر فرخ جمیل،کو آرڈینیٹر سائوتھ زون عمران حسین،آرگنائزر چوہدری طارق،آرگنائزر گریٹر لندن امجد امین بوبی،راجہ شرجیل فیاض،اٹلی کے کوآرڈینیٹر فیاض تارڑ برکشائر کائونٹی کے آرگنائزر شمریز تارڑ،بیڈ فورڈ کائونٹی کے آرگنائزر راجہ غلام عباس،بکس کائونٹی کے آرگنائزر راجہ ارتاسف،ہمیل کے آرگنائزر تبریز راجہ،آزاد چوہدری،راجہ مسرت اقبال اور ابرار قریشی نے میڈیا کی طرف سے خصوصی شرکت کی،تقریب سے خطاب کرتے ہوئے میئر آف ہائی ویکمب راجہ ضیاء احمد نے کہا کہOPWC،12جون2015میں بنائی گئی اور ایک سال کے عرصہ میں برطانیہ و یورپ اور مڈل ایسٹ میں تنظیم سازی کی گئی اور اتنی کم مدت میں اوورسیز پاکستانیز کے جائیداد سے متعلقہ مسائل کے ساتھ ساتھ برطانیہ میں نادرا کارڈ اور پاسپورٹ کے ایشوز کے حوالے سے مسائل کو اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ انکا حل کرنے میں بھی کامیابی حاصل کی جو کہ لائق تحسین ہے،مزمل حسین ڈپٹی میئر آف ہائی ویکمب نے کہا کہOPWCکی خاص بات یہ ہے کہ تنظیم سازی میں امتیازی سلوک نہیں کیا گیا اور نہ ہی علاقہ اور برادری ازم کا پرچار کیا گیا، اس کے ساتھ ساتھ تنظیم میں تعلیم یافتہ اور با کردار افراد کو نمائندگی دی گئی اور تمام عہدیداران نے خدمت خلق کو اپناشعار بنایا جس میں کمیونٹی کو ریلیف ملا ہے،بانی و چیئرمین OPWCنعیم عباسی نے کہا کہ انکی تنظیم نے سمندر پار پاکستانیوں کیلئے ایک سال کے اندر ہائی کمیشن،قونصلیٹس اور اوورسیز کمیشن کے تعاون سے بے شمار مسائل کا حل ممکن بنایا،نادراکے بحران میں برطانیہ کے مختلف شہروں میں نادراسرجریز کا انعقاد کرا کر معزور افراد،بزرگ اور بچوںسمیت خواتین کی مدد کی جو ہائی کمیشن اور قونصلیٹس تک سفر کرنے سے قاصر تھے اسکے ساتھ ساتھ جو افراد برطانیہ میں وزٹ،شادی،شادی،سٹوڈنٹس یا ورک پرمٹ کے ذریعہ آئے اور ویزہ ختم ہونے کے بعد جب انہیں پاکستانی پاسپورٹ کے اجرا سے متعلق مسائل کا سامنا کرنا پڑتا تو انکا کوئی پرسان حال نہ تھا،OPWCنے اس مسئلے کو پرنٹ ،الیکٹرونک میڈیا اور کمیونٹی فورم کے ذریعہ اجاگر کیا اور وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان ہائی کمشنر سید ابن عباس،اور ڈپٹی ہائی کمشنر ڈاکٹر اسرار حسین،اوورسیز کمشنر افضال بھٹی اور قونصل جنرلز،سید احمد معروف،ڈاکٹر ظہور احمد،خلیل احمد باجوہ،عظمت فاروق اوراسسٹنٹ ڈائریکٹر پاسپورٹس تاج ولی خان کے نوٹس میں لا کر متاثرین کا موقف بیان کیا، جس پر ویزداخلہ نے یہ مسئلہ حل کر کے کمیونٹی کی بھرپور داد اور دعائیں حاصل کیں،جائیدادوں کے مسائل کے حوالے سے تنظیم کے پلیٹ فارم سے شکایات اوورسیز کمیشن پنجاب کو بھجوائی گئیں جس پر فوری ایکشن کراتے ہوئے افضال بھٹی اوورسیز کمشنر پنجاب اور DIGکیپٹن مبین زیدی نے بھرپور مدد کی اور ترجیحی بنیادوں پر انکے مسائل حل کئے گئے،نعیم عباسی نے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان،ہائی کمشنر سید ابن عباس،ڈاکٹراسرار حسین اور اوورسیز کمشنر افضال بھٹی کی دل کی اتھاہ گہرائیوں سے شکریہ ادا کیا جنہوں نےOPWCکے پلیٹ فارم سے اجاگر کئے گئے مسائل کی طرف توجہ دی اور کمیونٹی کو ریلیف فراہم ہوا،OPWCکے مرکزی آرگنائزر راجہ شکیل حیدر،مرکزی ترجمان پروفیسر مسعود ہزاروی اور مرکزی وائس چیئر مین چوہدری آفتاب نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ OPWCنے بھارتی ہائی کمیشن کے باہر کلبوشن یادیو،را ایجنسی کی پاکستان میں مداخلت اورکشمیر میں مظالم ک خلاف زبر دست احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں عالمی طاقتوں کی توجہ مودی سرکار اور خفیہ ایجنسی ’’ را‘‘ کے کالے کرتوتوں کی طرف مبذول کرائی گئی اورانہیں عالمی عدالت میں انصاف کے کٹہرے میں لانے کا مطالبہ کیا گیا،عہدیداروں نے مستقبل میں بھی اسی طرح کمیونٹی کیلئےOPWCکے پلیٹ فارم سے خدمت خدمت جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا اور قلیل مدت میں تنظیم کی کامیابیوں پر مسرت کا اظہار کیا گیا۔