مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان کے ٹاپ سٹوڈنٹس کے اعزاز میں استقبالیہ، ہائی کمشنر نے طلبہ میں انعامات تقسیم کئے
لندن ... برطانیہ کے دورے پر آئے پاکستان بھر سے گریجویشن کی سطح پر پوزیشن حاصل کرنے والے تیس طلبہ کے ایک گروپ کے اعزاز میں پاکستان ہائی کمیشن لندن میں استقبالیہ کا اہتمام کیا گیا۔ یہ گروپ ہائی اچیورز پر مشتمل ہے جن میں سے کئی ایسے ہیں جنہوں نے اے لیول اور او لیول کے مختلف تدریسی مضامین میں عالمی ریکارڈ قائم کئے۔ طلبہ کا خیرمقدم کرتے ہوئے برطانیہ میں پاکستان کے ہائی کمشنر سید ابن عباس نے انہیں ان کی شاندار تدریسی کامیابیوں پر مبارکباد پیش کی۔ انہوں نے مختلف شعبوں میں پاکستان کی خدمت کے لئے ان کے عزم کی تعریف کی۔ ہائی کمشنر نے امید ظاہر کی کہ برطانیہ میں متعدد سرکاری اور نجی اداروں کے ساتھ میل جول ان کے لئے خاصا سودمند ثابت ہو گا۔ ہائی کمشنر نے وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے وژن کو سراہا جس کے تحت طلبہ کو غیرملکی تعلیمی اداروں کے دوروں پر بھیجا جا رہا ہے اور انہیں مختلف ثقافتوں کو گہرائی سے سمجھنے کے مواقع فراہم کئے جا رہے ہیں۔ انہوں نے طلبہ پر زور دیا کہ وہ اس موقع سے بھرپور فائدہ اٹھائیں اور زیادہ سے زیادہ سیکھیں جو انٹرنیٹ کے اس دور میں خاص طور پر اہمیت رکھتا ہے جس نے جغرافیائی سرحدوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ ڈپٹی ہائی کمشنر اور منسٹر پولیٹکل نے بھی طلبہ کو برطانوی چیوننگ سکالرشپ اور دولت مشترکہ کے سکالرشپس کی صورت میں ملنے والے مواقع کے بارے میں آگاہ کیا۔ حکومت پنجاب نے پاکستان بھر کے ذہین اور ابھرتے ہوئے طلبہ کو یورپی ممالک کے ممتاز تعلیمی اداروں سے روشناس کرانے کے لئے یہ پروگرام شروع کیا ہے۔ اس کا مقصد ان کی حوصلہ افزائی کرنا ہے کہ وہ دنیا کے سرکردہ تعلیمی اداروں میں اپنی تعلیم آگے بڑھائیں۔ دورے کے دوران پاکستانی نوجوانوں کو مغربی دنیا کی جدید ترین ٹیکنالوجیز اور تدریسی طریقوں سے بھی متعارف کرایا جائے گا۔ برطانیہ میں تین ہفتوں کے قیام کے دوران گروپ اوکسفرڈ یونیورسٹی، کیمرج یونیورسٹی، لندن سکول آف اکنامکس، سٹریتھ کلائیڈ یونیورسٹی اور گلاسکو یونیورسٹی سمیت برطانیہ کے کئی بڑے تعلیمی اداروں کے دورے کرے گا جہاں انہیں برطانیہ میں اپنائے گئے دورحاضر کے تدریسی طریقوں کو عملی طور پر دیکھنے کا موقع ملے گا۔ طلبہ نے برطانوی پارلیمنٹ کا دورہ بھی کیا او ان کے پروگرام میں میڈیا کے بعض بڑے اداروں کے دورے بھی شامل ہیں۔ برطانیہ کے بعد یہ گروپ جرمنی اور سویڈن کی یونیورسٹیوں کے دورے کرے گا۔ طلبہ کے ہمراہ ڈاکٹر طاہرہ سکندر، پرنسپل گورنمنٹ گرلز کالج لاہور اور شاہد اقبال، آڈیشنل سیکرٹری، وزیراعلیٰ سیکرٹیریٹ پنجاب بھی دورے پر آئے ہیں۔ آخر میں ہائی کمشنر نے طلبہ کو یادگاری تحائف دئیے۔ طلبہ نے ہائی کمیشن کے افسران اور میڈیا کے نمائندوں کے ساتھ بھی بات چیت کی۔