مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
اندرونی وبیرونی مسائل کے باعث مسئلہ کشمیر پھر سرد خانے کی طرف بڑھ رہا ہے: ظفر معروف
لوٹن ...سابق ایڈمنسٹریٹر ضلع میرپور وسینئر رہنما مسلم کانفرنس راجہ ظفر معروف نے کہا ہے کہ ملکی ترقی میں ہاتھ بٹھانے اور انٹرنیشنل سطح پر مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے میں تارکین وطن کیمونٹی کا اہم کردار ہے بیرونی ممالک بسنے والی کشمیری تمام تر سیاسی وابستگیوں سے بالاتر ہوکر مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے کے لیئے کاوشیں جاری رکھیں بیرون ممالک کشمیریوں کو وقت کی نزاکت کا احساس کرتے ہوئے ایک مشترکہ جہدوجہد سے آگے بڑھنا ہوگا تارکین وطن کمیونٹی تمام ترسیاسی وابستگیوں سے بالاتر ہو کر مسئلہ کشمیر بہتر طریقے سے اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کر سکتی ہے پاکستان کے اندرونی مسائل کی وجہ سے گزشتہ کئی سالوں سے مسئلہ کشمیرپرموثر لابنگ نہیں کی جا سکی ،جس کی وجہ سے پیدا ہونے والےسکوت کو توڑنا وقت کی ضرورت بن چکا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے مسلم لیگ ن برطانیہ کے صدرزبیر اقبال کیانی،پی پی کے وحید راسب،صدر مسلم لیگ ن واٹفورڈ راجہ مظہر نوابی،راجہ نثار،راجہ آصف،راجہ نواز،راجہ زاروب کے علاوہ لوٹن میں آباد کمیونٹی کے چودھری سجاد، چودھری زوالفقار، چودھری افتخار، چودھری زہیر، چودھری ملک، جنید چودھری، ماجد مرزا، میاں یاسین، قاضی ظھیرو دیگر سے بات چیت کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا کہ پاکستان کے اندرونی وبیرونی مسائل کے باعث مسئلہ کشمیر ایک مرتبہ پھر سرد خانے کی طرف بڑھ رہا ہے جسے زندہ رکھنے کے لیئے کشمیری کیمونٹی کو بیداری کا مظاہرہ کرنا ہوگا انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان تاریخ کے نازک دور سے گزر رہا ہے جہاں اندرونی طور پر دشت گردی سمیت مختلف مسائل کا سامنا ہے ہمیں پاکستان کی مضبوطی اور استحکام کے لیئے بھی مخلصانہ کوششوں کا ساتھ دینا ہوگا ایک مضبوط اور مستحکم پاکستان ہی کشمیریوں کی بہتر وکالت کر سکتا ہے راجہ ظفر معروف نے کہا کہ مسئلہ کشمیر حل کیئے بغیر جنوبی ایشاء میں امن کا قیام ممکن نہیں مسئلہ کشمیر سمیت دنیا کے تمام مسائل کو حل کرنا عالمی برادی کی ذمہ داری ہے دنیا میںتبدیلیاں تیزی سے رونما ہو رہی ہیں اگر ایک سیاہ فام شخص دنیا کی تاریخ رقم کرتے ہوئے امریکہ کا سربراہ بن سکتا ہے تو مسئلہ کشمیر سمیت دیگر حل طلب مسئلے حل کیوں نہیں ہو سکتے ،ان تمام مسائل کو حل کرتے ہوئے ہی امن کا خواب شرمندہ تعبیر ہو سکتا ہے مسئلہ کشمیر کو حل کرنا عالمی برداری کے لیئے نہایت اہم ہو چکا ہے بھارتی مظالم عالمی برادری کا منہ چڑا رہے ہیںانہوں نے کہابھارت کو کشمیریوں کے حق خودارادیت کا احترام کرنا چاہیے جس طرح وہ انگریزوں سے آزادی حاصل کرنے کی بدولت آزاد اور جموری ملک ہونے کے دعویدار ہیں اسی طرح کشمیریوں کو بھی حق حاصل ہے کہ انہیں بھی جموری حق دیا جائے بھارتی حکمران گزشتہ کئی سالوں سے بزور جبر اور طاقت کے بل بوتے پر کشمیریوں کو کچلنے کی جس غیر اخلاقی اور غیر انسانی ڈگر پر چل رہے ہیں وہ پورے خطے کے لیئے تباہی کا باعث بن سکتی ہے بھارت کے اس ہٹ دھرم روئیے پر عالمی طاقتوں کی خاموشی نے مسئلے کو مزید گمبھیر بنا دیا ہے لہذا عالمی برداری ان مظام پر خاموش تماشائی بننے کے بجائے اپنی آواز بلند کرے انہوں نے کہا کہ بھارت کے ظلم اور ستم اور ریاستی جبر کی انتہا ہو چکی ہے جس پر عالمی برادری کو خاموش تماشائی بننے کے بجائے انسانی حقوق کی ان خلاف ورزیوں کا سختی سے نوٹس لینا چاہیے ورنہ جنوبی ایشاء کے خطے کو کسی بڑے خطر ے سے بچانا مشکل ہو جائے گا f