مقبول خبریں
ایسٹرن پویلین ہال اولڈہم میں آزادکشمیر میں قائم اسلام ویلفیئر ٹرسٹ کے سالانہ چیرٹی ڈنر کا انعقاد
مسئلہ کشمیر بارےیورپی پارلیمنٹ انتخابات پر برطانیہ و یورپ میں بھرپور لابی مہم چلائینگے،راجہ نجابت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
سرچ آپریشن
پکچرگیلری
Advertisement
برطانوی دارالحکومت میں پاکستانی ملبوسات کی بہار، فیشن شو میں پاکستان ہائی کمشنر کی خصوصی شرکت
لندن ... لندن میں فیشن کی آٹھ کامیاب سالانہ تقریبات کے بعد روایت کی جانب سے ایک اور شاندار تقریب نویں پاکستان فیشن ویک لندن کا اہتمام کیا گیا جوگرینڈ کوناٹ رومز میں منعقد ہوا۔ روایت کا اب تک کا سفر انتہائی شاندار رہا ہے اور اس سلسلے کی نویں تقریبات میں برصغیر اور اس سے باہر کے ممالک سے تعلق رکھنے والے 36 مایہ ناز ڈیزائنرز نے اپنی مصنوعات نمائش کے لئے پیش کیں۔ دو روزہ تقریبات میں عصری ملبوسات کے علاوہ تقریبات اور دلہن کے ملبوسات کے لئے ایشیائی ڈیزائنرز کے حالیہ رجحانات کو مرکزی حیثیت حاصل رہی۔ ان ڈیزائنرز میں دیگر کے علاوہ آغا نور، گل احمد ٹیکسٹائلز، امشاء بابر کی امشاء، سیفائر، عائشہ اعجاز، شمیل انصاری اور احسن مینز ویئر شامل تھے۔ شو کی میزبانی کے فرائض پاکستانی ٹیلی وژن کی مایہ ناز شخصیت عائشہ ثناء نے انجام دئیے۔ گرینڈ فنالے کیٹ واک شو میں روایت کی جانب سے پاکستانی ہائی کمشنر سید ابن عباس کے علاوہ ہالی وڈ کے مشہور اداکار ڈیوڈ ہوفمین کا خیرمقدم کیا گیا۔ شو میں پاکستان کی بعض چوٹی کی ماڈلز نے بھی حصہ لیا جن میں نادیہ حسین خان، ایشال فیاض، حرا اعجاز اور حرا شاہ بھی شامل تھیں۔ فلمی اداکارہ ثنا فخر نے معظم عباسی کے ملبوسات پر کیٹ واک کی۔ فیشن شو کے بعد ڈیزائنرز کی ایک نمائش منعقد کی گئی جو ان تقریبات کا ایک لازمی جزو ہے۔ نمائش کے دونوں دنوں کے دوران ہال خریداروں اور میڈیا کی شخصیات سے کھچا کھچ بھرا رہا۔ اس موقع پر فیشن بلاگرز کے علاوہ بھارت اور پاکستان جیسے ملکوں کی نامور شخصیات بھی موجود تھیں۔ میڈیا کے ادارے اے آر وائی ڈیجیٹل، پاکستان ہائی کمیشن، پیٹرن سپانسر موومنٹس بائی کلیکٹیبلز اور ڈبلیو سی او پی کی معاونت سے منعقد ہونے والی نویں تقریبات میں روایت کی کامیابی کی گونج ان تمام حلقوں میں سننے کو مل رہی ہے جہاں ایشیائی فیشن کا ذکر ہووتا ہے۔ روایت اس مشن پر عمل پیرا ہے کہ پاکستان کی بہترین مصنوعات دنیا کے سامنے پیش کی جائیں۔ نواں پاکستان فیشن ویک لندن، یورپ اور پاکستان میں اس سلسلے میں منعقد کی جانے والی تقریبات کی ایک کڑی ہے جس میں آغا نور، شازیہ کیانی، معظم عباسی، نورالعین، صدف عامر کی امبیلشڈ، گل احمد ٹیکسٹائلز، حسن ریاض، اینا علی کی لاجونتی، نجویٰ عمران، پنکس کی اراواک، امشاء بابر کی امشاء، سیفائر، عائشہ اعجاز، ارم جمال اقراء ثاقب، مدیحہ گوہر، ثناء رشید کی دیوا، بمبے سٹورز، سام دادا کی کی مہاگنی، سونالیز، کرئیشن، ماذ جی مینزویئر، سیماز، زینب وزیر، شمیل انصاری، رانی ایمان، روزینہ منیب، این کے کوچور جیولر، سارا سلمان، فوزیہ حماد کی گول، عائشہ عمران، فلورا، الزوہیب ٹیکسٹائلز، احسن مینز ویئر اورندا ازور نے اپنے اپنے ڈیزائن نمائش کے لئے پیش کئے۔