مقبول خبریں
کشمیر میں مظالم کیخلاف اقدامات نہ اٹھائے تو تباہی کی ذمہ داری بین الاقوامی کمیونٹی پر ہو گی:نعیم الحق
ڈیبی ابراھم کی قیادت میں ممبران پارلیمنٹ اور کمیونٹی رہنماؤں کی لارڈ طارق احمد سے ملاقات
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کی وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور شاہ غلام قادر سے ملاقات
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
راجہ نجابت حسین کا مسئلہ کشمیر پر بحث میں حصہ لینے پر ارکان یورپی پارلیمنٹ کو خراج تحسین
سوچنے کے موسم میں سوچنا ضروری ہے!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
7لاکھ کشمیریوں کا مقدس لہو رائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا: وزیراعظم آزادکشمیر
نیویارک ... وزیر اعظم آزادکشمیر نے مہذب دنیا سے کہا ہےکہ وہ مسئلہ کشمیر کو جلد حل کروائے۔ مسئلہ کشمیر کے حل میں تاخیر اس ریجن کے امن کو شدیدخطرات سے دوچار کر دے گا۔ بھارت طاقت کے ذریعے مسئلہ کشمیر کو حل کروانے کی بھارتی کوششوں نے اس خطے کے امن کو مسلسل شدیدخطرات سے دوچار کر رکھا ہے۔بھارتی حکمرانوں کا غیر ذمہ دارانہ رویہ اس خطے کو کسی بڑے سانحے سے دوچار کر سکتا ہے۔ جس سے نیوکلیئر ایشیاء کا امن تہس نہس ہو سکتا ہے اور عالمی امن بھی متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکتا۔ وزیراعظم نے کہا کہ نیوکلیئر ایشاء میں امن کے قیام کے لیے مسئلہ کشمیر کا حل ناگزیر ہو چکا ہے۔ مسئلہ کشمیر کے حل کے حوالے سے بھارتی حکمرانوں کے تاخیری حربے اس خطے کے ڈیڑھ ارب انسانوں کا مستقبل دائر پر لگا رکھا ہے۔ وزیراعظم آزادکشمیر نے کہا کہ بین الاقوامی دنیا بھارت کو نیوکلیئر ایشیاء کا امن برباد کرنے سے باز رکھے ان خیالات کا اظہار انہوں نے او آئ سی کے اجلاس میں شرکت کے لئے امریکی ریاست نیو یارک پہنچنے کے بعد اپنے استقبال کیلئے آنے والے تارکین وطن سے خطاب میں کیا جنہوں نے نعرے لگا کر وزیراعظم آزادکشمیر کا پرجوش استقبال کیا۔ وزیراعظم نے اس موقع پر کہا کہ ریاست جموں وکشمیر کے عوام نے اپنے لہو کا نذرانہ دے کر حق خودارادیت کی تحریک کو فیصلہ کن مرحلے میں داخل کر دیا ہے۔ آج ضرورت اس امر کی ہے کہ تارکین وطن سیاسی وابستگیوں سے بالا تر ہو کر کشمیریوں کی جدوجہد کو کامیابی سے ہمکنار کرنے کے لیے اپنی کوششوں کو منظم اور مضبوط بنائیں۔ وزیراعظم آزادکشمیر نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی عوام گذشتہ 65برسوں سے بین الاقوامی طورپر تسلیم شدہ حق حق خودارادیت کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں۔کشمیریوں نے اس جدوجہد میں اپنی تین نسلیں قربان کردیں اور سات لاکھ سے زائد کشمیریوں نے اپنا مقدس لہو بہایا۔ وزیراعظم نے کہا کہ 7لاکھ کشمیریوں کا مقدس لہو رائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا۔ وزیراعظم نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی عوام نے بھارت کے غیر قانونی قبضے کو مسترد کر رکھا ہے۔ بھارت کی طرف سے مسلسل کرفیو اور کالے قوانین کے نفاذ اور تمام تر بھارتی ہتھکنڈے جاری رکھے ہوئے ہیں۔ اس موقع پر وزیراعظم نے تارکین وطن کے مختلف وفود سے ملاقات بھی کی ۔