مقبول خبریں
چوہدری سعید عبداللہ ،چوہدری انور،حاجی عبدالغفار کی جانب سے حاجی احسان الحق کے اعزاز میں عشائیہ
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
کمیونٹی کی یکجہتی پر یقین رکھتا ہوں ، ہمارے پاس نفرت کے لئے وقت نہیں :کونسلر راسب
سلائو:لندن کے نواح میں واقع تاریخی قصبے سلائو میں مقیم معروف کمیونٹی لیڈرکونسلر راسب جو 2006 سے سلائو بارو کونسل میں کونسلر ہیں، نے بطور میئر گزشتہ دنوںباضابطہ طور پر اپنا ایک سال مکمل کر لیا۔ اپنی میئرشپ کے بارے میں مقامی میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سلائوکی کئی ثقافتی کمیونٹیز میرے لئے فخر کا باعث ہیں۔ انہوں نے اسی تنوع کو اپنا افتخار بنانے کی اہمیت پر زور دیا۔ کونسلر راسب 1963 میں برمنگھم سے اس بارو میں منتقل ہونے کے بعد 1964 میں سلائو کی پاکستان ویلفیئر ایسوسی ایشن کے صدر بنے۔ انٹرویو کے دوران انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں یہاں بھارت، پاکستان، امریکہ، ہالینڈ کے لوگ دیکھنے کو ملتے ہیں لیکن ان کا تعلق کسی بھی ملک سے ہو ہم ہمیشہ ان کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں کمیونٹی کی یکجہتی پر یقین رکھتا ہوں اور ہمارے پاس نفرت کے لئے وقت نہیں ہے۔ ہم مذہب سے قطع نظر ایک دوسرے سے محبت کرتے ہیں۔ کونسلر راسب نے بارو کی چیریٹی تنظیموں کی سرگرمیوں کو بھرپور انداز میں سراہتے ہوئے کہا کہ میری ذمہ داریوں میں سے میرا ایک پسندیدہ کام سلو کی چیریٹی تنظیموں کے ساتھ کام کرنا تھا۔ انہوں نے کہا کہ یہ تنظیمیں شاندار کام کر رہی ہیں اور میرے دل میں ہمیشہ ان کے لئے نرم گوشہ رہا ہے۔ ان میں سے بعض تنظیمیں جس طرح سلو کے معذور افراد کا خیال رکھتی ہیں وہ ایک شاندار بات ہے۔ کونسلر راسب نے مزید کہا کہ اپنے سکولوں کے نوجوانوں کو دیکھ کر بھی مجھے بے حد خوشی ملتی ہے۔ مجھے ان پر فخر ہے اور میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ ہمارے نوجوان باکمال لوگ ہیں اور وہ ہم سے بہتر کام کر کے دکھائیں گے۔ سابق گراسری سٹور مالک نے فارنہیم کے کونسلر کی حیثیت سے اور پھر میئر کے طور پر خدمات انجام دیتے ہوئے خاصا مصروف وقت گزارا۔ ان کا کہنا تھا کہ اضافی عہدے کی بدولت مجھے سلو کے عوام کی بہتر نمائندگی کرنے میں مدد ملی۔ انہوں نے بتایا کہ مجھے توقع تھی کہ میئر کے عہدے سے مجھے بطور کونسلر مدد ملے گی اور واقعی ایسا ہی ہوا ہے۔ میرا لوگوں کے ساتھ تعلق بہتر ہوا ہے کیونکہ کونسلر کی حیثیت سے آپ کے پاس ایک وارڈ ہوتا ہے جبکہ میئر کے طور پر پورا سلائو آپ کے پاس ہوتا ہے۔ اس اعزازی حیثیت میں ایک سال کے دوران لیبر کونسلر کو ٹائون کی متعدد سرگرمیوں میں حصہ لینے کا موقع ملا جن میں نئی تعلیمی اور کمیونٹی سہولیات کا آغاز، مسلح افواج کے ساتھ مل کر کام کرنے کے علاوہ بارو کی یادگاری سروسز میں حصہ لینا بھی شامل تھا۔ کونسلر راسب کا کہنا تھا کہ میرے نزدیک مزے سے دھوپ سینکنے کے بجائے یہ چیز زیادہ دلچسپ ہے کہ میں عوام کے خادم کے طور پر کام کرتا رہوں۔ انہوں نے کہا کہ میں اقتدار کی بڑی سیاست پر یقین نہیں رکھتا اور میں تصویریں بنوانے پر بھی یقین نہیں رکھتا۔ میں صرف اپنے عوام اور مقامی کمیونٹی کے لئے کام کرنا چاہتا ہوں۔