مقبول خبریں
برطانیہ کے ابھرتے ہوئے گلوکار عثمان فاروقی کے گانے جلوہ نے دنیا بھر میں دھوم مچا دی
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
فیض کی شاعری میں پائی جانے والی بے چینی محکوموں کے جذبات کی ترجمان تھی:سلیمہ ہاشمی
لندن... فرینڈز ہاؤس لندن میں فیض میلہ پوری شان و شوکت سے منعقد ہوا جس میں برطانیہ کے علاوہ پاکستان، جاپان، کینیڈا، جرمنی، بیلجیئم اور کئی دوسرے ممالک سے خواتین و حضرات نے شرکت کی خصوصی مہمانوں میں وزیر اعلی بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک نے فیتہ کاٹ کر میلے کا افتتاح کیا ۔ مقررین میں ڈاکٹر عبدالمالک، پاکستانی ہائی کمشنر واجد شمس الحسن، فیض احمد فیض کی صاحبزادی سلیمہ ہاشمی، حاصل بزنجو، مجاہد بریلوی، ضیاء محی الدین، سردار مظہر علی خان، حارث خلیق،بسیم بیگ و دیگر شامل تھے۔ جبکہ جواد احمد، حمیرا چنا اور دوسرے فنکاروں نے فیض کی غزلیں اور نظمیں گائیں۔ پرنیہ نے رقص پیش کیا جبکہ فیض کی شاعری پر مشتمل ایک ڈرامہ بھی پیش کیا گیا جس کی ہدایات آرشمیم نے دیں۔ اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے مقررین نے کہا فیض احمد فیض جیسے انقلابی شاعر اور دانشور صدیوں میں پیدا ہوتے ہیں۔ انہوں نے اپنی ساری زندگی پاکستان سمیت تیسری دنیا کے محروم ومحکوم انسانوں کے حقوق حاصل کرنے کی جدوجہد کی۔ ان کی شاعری میں پائی جانے والی بے چینی اس بات کی غمازی کرتی ہے کہ فیض محکوموں کے لئے انتہائی پریشان تھے۔ یہ تقریب فیض کلچرل فاؤنڈیشن یو کے زیر اہتمام منعقد کی گئی جسکے منتظمین میں ایوب اولیا،تنویر زمان خان، اکرم قائم خانی، عاصم علی شاہ شامل تھے ..