مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سنی دیول "سنگھ صاحب دی گریٹ" بن کر بھی "جو بولے سو نہال" نہیں، گردوارہ پربندھک کمیٹی
امرتسر...سکھوں کے متعدد کا میاب فلمی کردار ادا کر کے شہرت حاصل کرنے والے سنی دیول اپنی نئی فلم سنگھ صاحب دی گریٹ میں بلآخر تنقید کی زد میں آگئے ہیں .. جھگڑا کردار کی کسی خامی کا نہیں بلکہ تنازعہ فلم کے نام پر ہے۔ بھارت میں سکھوں کی سب سے بڑی مذہبی تنظیم’شرومنی گردوارہ پربندھک کمیٹی‘ کا کہنا ہے کہ سنگھ صاحب ایک مقدس لفظ ہے۔ اسے ہر کسی کے نام کے ساتھ نہیں لکھا جاسکتا۔ بلکہ، یہ امرتسر میں واقع سکھوں کی عبادت گاہ گولڈن ٹیمپل کے گرنتھیوں اور جتھے داروں کے لئے مخصوص ہے۔ اسے تجارتی مقاصد کے لئے استعمال نہیں کیا جا سکتا۔ سکھوں کی ہی ایک اور تنظیم اکال تخت نے بھی سنگھ صاحب دی گریٹ کا سنجیدگی سے نوٹس لیا ہے۔ اکال تخت کا کہنا ہے کہ اس ٹائٹل سے سکھ کمیونٹی میں غلط فہمیاں پیدا ہوسکتی ہیں۔ اس سے پہلے سنی دیول کی فلم جو بولے سو نہال کو بھی ٹائٹل کی وجہ سے تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ فلم ’غدر ۔ ایک پریم کتھا‘ سے شہرت پانے والے انیل شرما کی ڈائریکٹ کردہ فلم ’سنگھ صاحب دی گریٹ‘ نومبر میں ریلیز کی جائے گی۔