مقبول خبریں
کشمیر سالیڈیرٹی کیلئے یکم فروری سے 11فروری تک تقریبات منعقد کرائی جائیں گی
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سنی دیول "سنگھ صاحب دی گریٹ" بن کر بھی "جو بولے سو نہال" نہیں، گردوارہ پربندھک کمیٹی
امرتسر...سکھوں کے متعدد کا میاب فلمی کردار ادا کر کے شہرت حاصل کرنے والے سنی دیول اپنی نئی فلم سنگھ صاحب دی گریٹ میں بلآخر تنقید کی زد میں آگئے ہیں .. جھگڑا کردار کی کسی خامی کا نہیں بلکہ تنازعہ فلم کے نام پر ہے۔ بھارت میں سکھوں کی سب سے بڑی مذہبی تنظیم’شرومنی گردوارہ پربندھک کمیٹی‘ کا کہنا ہے کہ سنگھ صاحب ایک مقدس لفظ ہے۔ اسے ہر کسی کے نام کے ساتھ نہیں لکھا جاسکتا۔ بلکہ، یہ امرتسر میں واقع سکھوں کی عبادت گاہ گولڈن ٹیمپل کے گرنتھیوں اور جتھے داروں کے لئے مخصوص ہے۔ اسے تجارتی مقاصد کے لئے استعمال نہیں کیا جا سکتا۔ سکھوں کی ہی ایک اور تنظیم اکال تخت نے بھی سنگھ صاحب دی گریٹ کا سنجیدگی سے نوٹس لیا ہے۔ اکال تخت کا کہنا ہے کہ اس ٹائٹل سے سکھ کمیونٹی میں غلط فہمیاں پیدا ہوسکتی ہیں۔ اس سے پہلے سنی دیول کی فلم جو بولے سو نہال کو بھی ٹائٹل کی وجہ سے تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ فلم ’غدر ۔ ایک پریم کتھا‘ سے شہرت پانے والے انیل شرما کی ڈائریکٹ کردہ فلم ’سنگھ صاحب دی گریٹ‘ نومبر میں ریلیز کی جائے گی۔