مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
وزیرا عظم ڈیوڈ کیمرون نے بھی پانچ دن بعد آف شورز کمپنی میں حصہ داری کا اقرار کر لیا
لندن: پانامہ لیکس کے منظر عام پر آنے کے بعد عالمی سیاست میں ہل چل مچی ہوئی ہے ۔ برطانوی وزیرا عظم ڈیوڈ کیمرون نے پانچ دن بعد اقرار کر لیا کہ ان کا حصہ والد کے آف شور فنڈ میں تھا اور 5 ہزار شیئر ان کی ملکیت تھے ۔ ان کا کہنا تھا کہ آف شور کمپنی سے جتنا کمایا اس پر ٹیکس ادا کیا تھا جبکہ 2010 میں انہوں نے اپنے شیئرز فروخت کر دیے تھے ۔ کیمرون کا کہنا تھا کہ اسکینڈلز سے بچنے کے لیے انہوں نے وزیر اعظم بننے سے پہلے کاروبار سے علحیدگی اختیار کی تھی۔