مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی برسلز آمد، سینکڑوں پاکستانی و کشمیری مظاہرین کااحتجاج
بریڈفورڈ . . . بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی برسلز آمد پر سینکڑوں پاکستانی و کشمیری مظاہرین نے احتجاج کیا۔ مظاہرین کا کہنا تھا یورپی یونین کشمیر میں بھارتی فوج کے ظلم و ستم کا نوٹس لے ۔ یورپی یونین قاتل مودی کے داخلے پر پابندی لگائے ۔ مظاہرے میں سکھ بھی شریک ہوئے ۔بھارتی وزیراعظم نریندر مودی برسلز کے دورے پر بعد میں پہنچے مظاہرے پہلے شروع ہو گئے ۔ پی ٹی آئی کے سینئر رہنما بیرسٹر سلطان محمود احتجاج میں خصوصی طور پرشریک ہوئے ۔ مودی کی یورپی ارکان پارلیمنٹ سے ملاقات کے دوران مظاہرین نے اس عمارت کے باہر شدید احتجاج کیا۔ اس موقع پر مسلمانوں کا قاتل مودی قاتل ،کشمیر میں ظلم بند کرو ،بھارت کشمیر چھوڑ دو، لے کے رہیں گے آزادی ہے حق ہمارا آزادی، گو مودی گو جیسے فلک شگاف نعرے لگائے گئے ۔ اس موقع پر شرکاء سے بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مودی جہاں بھی جائیں گے ان کا تعاقب کریں گے ۔ مظاہرین کا کہنا تھا بھارت کشمیر سے اپنی فوجیں نکالے ۔ وہ جہاں بھی قدم رکھتے ہیں دہشتگردی شروع ہو جاتی ہے ۔ مظاہرے میں شریک سکھوں کا کہنا تھا مودی قاتل اور نام نہاد جمہوریت کا راگ الاپتا ہے ۔ بھارت میں جمہوریت نہیں وہاں اقلیتوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑے جا رہے ہیں۔مودی بدھ کی صبح زاوینٹم ایئر پورٹ پہنچے تو وہاں سے سیدھے وہ میئل بیک میٹرو سٹیشن گئے جہاں انہوں نے یادگار پر پھول چڑھائے ۔انہوں نے یورپی پارلیمنٹ کے اراکین اور وزیر اعظم چارلس میکل کے ساتھ لنچ کیا اور دوطرفہ تعلقات کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا۔مودی نے بیلجیئم کی کمپنیوں کے سی ای اوز سے بھی ملاقات کی جبکہ بھارتی کمیونٹی سے بھی خطاب کیا۔