مقبول خبریں
دار المنور گمگول شریف سنٹر راچڈیل میں جشن عید میلاد النبیؐ کے حوالہ سےمحفل کا انعقاد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
برطانوی حکومت مقبوضہ کشمیر میں ہونیوالی زیادتیوں پرآواز بلند کرے:راجہ نجابت و دیگر
بریڈ فورڈ:برطانوی حکومت مقبوضہ کشمیر میں خواتین پر ہونیوالی زیادتیوں پرآواز بلند کرے،ایک ملین سے زائد برٹش کشمیری اپنی حکومت اور ممبران پارلیمنٹ سے کشمیری عوام کو انصاف دلوانے کا مطالبہ کرتے ہیں،مقبوضہ کشمیر کے ریاستی انسانی حقوق کی رپورٹ کی روشنی میں ارکان پارلیمنٹ ہائوس آف کامنز میں تفصیلی بحث کروائیں،کنزرویٹو ارکان پارلیمنٹ برٹش کشمیریوں کی تشویش سے وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون کو آگاہ کریں،ان خیالات کا اظہار جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت یورپ کے چیئرمین راجہ نجابت حسین،کنزرویٹو پارٹی کے رہنمائوں بوٹا ہیری،چوہدری علی اکبر چشتی،چوہدری شاہد رسول اور چوہدری عبدالحمید مل کر الزبتھ کے برطانوی پارلیمنٹ میں کنزرویٹو ممبر پارلیمنٹ کرس ہوپکنز سے چوہدری غلام رسول کی رہائش گاہ پر ظہرانے میں ملاقات پر کیا،راجہ نجابت حسین نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ مقبوضہ کشمیر میں ہونیوالی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی مفصل رپورٹ کرس ہوپکنز کو پیش کی اور کہا کہ ہر روز وادی کے کسی نہ کسی گھر میں نوجوانوں کو شہید کر کے بھارتی افواج جو مظالم ڈھا رہی ہیں اس پر عالمی برادری کی خاموشی سمجھ سے بالاتر ہے،برطانوی حکومت جس نے1947میں مسئلہ کشمیر پیداکیا تھا آج اسے حل کروانے میں اپنا کردار ادا کرے کیونکہ برطانیہ میں بسنے والے لاکھوں لوگوں کی وابستگی اس خطے کے ساتھ ہے اور وہ براہ راست متاثر ہوتے ہیں،وفد کے ارکان نے پاکستان اور برطانیہ کے درمیان مجرموں کے تبادلے اور دیگر معاہدوں کے بارے میں بھی برٹش کشمیریوں کے جذبات سے بھی کرس ہوپکنز کو آگاہ کیا،کرس ہوپکنز نے یقین دلایا کہ وہ راجہ نجابت حسین اور انکی ٹیم کی ہر سطح پر معاونت کریں گے اور حکومت تک بھی برٹش کشمیریوں کی گزارشات پہنچائیں گے جبکہ اپریل کے آخر اور جولائی کے وسط میں ہونیوالی تقریبات میں شرکت کی بھی حامی بھری،اس سے قبل تحریک کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے بوٹا ہیری،قاضی شکیل الرحمان،چوہدری اظہر محمود اور چوہدری عثمان علی کے ہمراہ پاکستان پارلیمنٹری گروپ کے وائس چیئرمین اینڈریو سٹیفن ایم پی سے تفصیلی ملاقات کر کے انہیں جہاں دورہ آزاد کشمیر کی دعوت دی رہاں خرم پرویزکی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر مشتمل رپورٹ پر بھی بریفنگ دی اور مطالبہ کیا کہ اتنی بڑی رپورٹ کے بعد اب تو برطانوی ممبران پارلیمنٹ خصوصاً حکمران جماعت کے کشمیر دوست ارکان پارلیمنٹ میں موثر لابی کر کے ہائوس آف کامنز میں بحث کا اہتمام کر کے ایک مفصل قرارداد پاس کروائیں تاکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم بند کروائے جا سکیں،اینڈریو سٹیفن نے یقین دلایا کہ وہ بہت جلد اپنے ہم خیال ارکان سے مل کر اس مسئلہ کو پارلیمنٹ میں اٹھائیں گے اورانکی پوری کوشش ہوگی کشمیریوں کا کیس موثر انداز میں پیش کیا جا سکے تاکہ68سال سے کھٹائی میں پڑا ہوا مسئلہ کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق حل ہوسکے۔بیورورپورٹ:فیاض بشیر