مقبول خبریں
lets talk گروپ کے زیر اہتمام کمیونٹی کو ذہنی امراض کی آگاہی کے لیے ورکشاپ کا انعقاد
صادق خان رسوائی کا باعث اور برطانیہ کے دارالحکومت لندن کو تباہ کررہے ہیں: ڈونلڈ ٹرمپ
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
سابق صدر پی ٹی آئی یارکشائر اینڈ ہمبر ریجن طاہر ایوب خواجہ کا اپنی رہائش گاہ پر محفل کا انعقاد
رنگ خوشبو سے جو ٹکرائیں تو منظر مہکے!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان کی جمہوری حکومت سے توقعات تھیں مگر لگتا ہے اسکے ارادے ٹھیک نہیں : نریندرمودی
نئی دہلی ... بھارت کی اپوزیشن جماعت بی جے پی کیطرف سے آیندہ انتخابات کیلئے نامزد کیے گئے وزیر اعظم کے امیدوار نریدر مودی اس نامزدگی کے بعد پہلے ہی جلسے میں پاک بھارت کنٹرول لائن کشیدگی کو پاکستان کے کھاتے میں ڈال دیا ہے انہوں نے پاکستان پردہشتگردی کو فروغ دینے کا الزام لگایا ہے انہوں نے کہا پاکستان میں جمہوری طریقے سے منتخب حکومت کی آمد کے بعد ایک امید تھی کہ وہ بھارت کے خلاف احتجاج کی سیاست چھوڑ کر ایک دوست ملک کے طور پر کام کریں گے، لیکن سرحد پر جس طرح سے ہمارے فوجیوں کو ہلاک کردیا گیا اس سے لگتا ہے کہ پاکستان کے ارادے نیک نہیں ہیں۔.. گجرات بلوے میں سینکڑوں مسلمانوں کے قتل عام میں ملوث ہونے سے ورلڈ فیم حاصل کرنے والے نریدر مودی کا کہنا ہے کہ سرحد پار کشیدگی سے نا تو بھارت کا بھلا ہے اور نا ہی یہ پاکستان کیلئے سود مند ہے .. دہلی سے متصل ریاست ہریانہ کے علاقے ریواڑي میں اتوار کو ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مودی نے کہا کہ بھارت، پاکستان اور بنگلہ دیش کو آپس میں لڑنے کی بجائے غربت اور ناخواندگی سے لڑنا چاہیے۔ مودی نے کہا کہ بھارت نے جتنے جوان جنگ میں گنوائے ہیں ، اس سے کہیں زیادہ جوان دہشت گرد اور نکسلی تشدد میں گنوائے ہیں۔ پاکستان کی طرف اشارہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کچھ ملک دہشت گردی کے خلاف مخصوص کارروائی کرتے ہیں جو ان کی داخلی سیاست کے مطابق ہوتی ہے، لیکن اس سے مسئلہ حل نہیں ہو سکتا۔ انہوں نے کہا کہ ’آج ملک میں فوج کو نظر انداز کیے جانے کی وجہ سے ہمارے ملک کی نوجوان نسل فوج میں جانا نہیں چاہتی ہے۔ یہ ملک کے لیے بہت بڑا چیلنج ہے۔ واضح رہے نریندر مودی کو امریکہ اور برطانیہ ان کے انتہا پسندانہ عزائم کی وجہ سے ویزہ دانے سے انکار کر چکے ہیں ..