مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال نےرضاکارانہ خدمات پرتنظیم وائی فائی کو تعریفی سرٹیفکیٹ اور شیلڈ سے نوازا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مسئلہ کشمیر کو حل کئے بغیر دنیا غیر محفوظ رہے گی:برطانوی اراکین پارلیمنٹ
لندن :برطانوی اراکین پارلیمنٹ نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کو حل کئے بغیر دنیا غیر محفوظ رہے گی اور دو ایٹمی قوتوں کے درمیان یہ تناز ع کسی بھی وقت دنیا میں تباہی پھیلا سکتا ہے ۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ اقوام متحدہ اپنی قراردادوں پر عمل درآمد کرا کے خطے سے ایٹمی جنگ کے خطرے کو ختم کرے ۔ لندن میں ہائوس آف کامنز میں منعقدہ ایک سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے آل پارٹیز پارلیمانی گروپ کے چیئرمین ڈیواینڈرسن ایم پی نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کو حل کئے بغیر خطے میں امن و امان قائم نہیں ہو سکتا اور نہ ہی دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات بہتر ہو سکتے ہیں۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے پاکستانی ہائی کمشنر سید ابن عباس نے کہا کہ پاکستان نے کشمیر کاز کی ہمیشہ سیاسی، اخلاقی اور سفارتی مدد کی ہے اور وہ چاہتا ہے کہ کشمیریوں کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حق خودارادیت دیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیریوں پر جو مظالم ہو رہے ہیں ان کے حوالے سے پاکستان کی غیر متزلزل سپورٹ کشمیریوں کے ساتھ ہے ۔ لارڈ نذیر احمد نے کہا کہ اگرچہ نائن الیون، 7/7 اور مشرق وسطیٰ میں پیدا ہونے والے حالات کی وجہ سے دنیا کی نظریں مسئلہ کشمیر سے ہٹی ہوئی ہیں مگر کسی کو یہ نہیں سمجھنا چاہئے کہ یہ مسئلہ ایسے ہی ختم ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان یا کشمیری اس مسئلہ کو اقوام متحدہ میں نہیں لے کر گئے بلکہ یہ انڈیا تھا جس نے اس تنازع کو اقوام متحدہ میں پیش کیا اور جنگ بندی کی درخواست کی، اب عالمی برادری اپنی ذمہ داریاں پوری کرے ۔ رکن پارلیمنٹ سرجیرالڈ کافمین نے کہا کہ برطانوی حکومت کو ان کشمیریوں کو نہیں بھولنا چاہئے جو تسلط میں ہیں اور جن پر بے پناہ ظلم ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت خود جموں میں اپنے ہی مہاجرین کو نظر انداز کر رہا ہے اور وہاں پر مہاجرین کسمپرسی کا شکار ہیں۔