مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پلاننگ پرمیشن کے بغیر مسجد تعمیر کرنے والے تین افراد کو تادیبی کاروائی کا سامنا ..!!
بلیک پول... پلاننگ پرمیشن کے بغیر مسجد تعمیر کرنے پر تین افراد کو عدالتی کارروائی کا سامنا کرنا پر گیا ہے تفصیلات کے مطابق گرفتار شدگان کے نام واٹر لو روڈ بلیک پول سے تعلق رکھنے والے 40سالہ سید حسین شاہ اور ان کی بیوی 32سالہ توراف شاہ جبکہ تیسرے شخص کانام ندیم منظور ہے اور ان کا تعلق پارک ویو روڈ بریڈ فورڈ سے ہے ۔تینوں پر الزم عائد کیا گیا ہے کہ انہوں نے بلیک پول میں واٹر لو روڈپر مسجد نورالمدینہ قائم کرکے قانون کی خلاف ورزی کی ہے ۔مذکورہ مسجد سابقہ دکانوں کے عقب میں بنائی گئی ہے۔بلیک پول کونسل حراست میں لیے گئے تینوں افراد کے خلاف اس دعوے پر مقدمہ چلارہی ہے کہ وہ پراپرٹی کو عبادت کے لیے استعمال کررہے تھے جبکہ انہیں نوٹس جاری کیا گیاتھا کہ اس کو بند کردیں۔ وکی پیڈیا پر موجود نور مدینہ مسجد کے بارے کہا گیا ہے کہ یہ علاقے کی سب سے پہلی اور بڑی مسجد ہے جسکا پیش امام امہ چینل اور غوثیہ ٹی وی کا معروف نعت خواں ہے جبکہ دو سال قبل برٹش نیشنل پارٹی نے کے سربراہ نک گریفن نے اپنی نگرانی میں یہ کمپین شروع کی تھی کہ مسلمان اس جگہ کا غلط استعمال کرتے ہووے اسے عبادت گاہ بنا رہے ہیں .. بلیک پول مجسٹریٹس کورٹ کو بتایا گیاکہ مسجد میں 2سو نمازیوں کی گنجائش ہے اور قومی سطح پر نشر ہونے والے غوثیہ چینل کے سٹوڈیوز بھی یہاں قائم ہیں۔ اس میں خواتین اور مردوں کے لیے الگ الگ حصے ہیں ۔جبکہ تجہیز وتکفین کے لیے بھی ایک حصہ مقررہے۔ بلیک پول کونسل کی پراسیکیوٹر لینڈا بینٹ نے عدالت کو بتایاکہ پلاننگ اتھارٹی نے الزام عائد کیا ہے کہ بلڈنگز جس کے زیادہ تر حصے ندیم منظور کی ملکیت ہیں کے لیے کوئی اجازت نامہ حاصل نہیں کیا گیاکہ اس میں مسجد قائم کی جائے گی۔