مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ہمنوا یوکے ‘ محفل فکر و فن کے مشترکہ تعاون سے محفل مشاعرہ اور شام غزل کی تقریب کا اہتمام
ووکنگ:برطانوی دارالحکومت لندن کے مضافات میں سرے کائونٹی کے ایک انتہائی خوبصورت اور تاریخی شہر ووکنگ میں ہمنوا یوکے اور محفل فکر و فن کے مشترکہ تعاون سے محفل مشاعرہ اور شام غزل کی ایک پر وقار تقریب کا اہتمام کیا گیا جس میں ہر مکتبہ فکر کے لوگوں جس میں شاعر،ادیب،دانشور،فنکار اور اچھے ذوق سماعت کے مالک سامعین کے ساتھ ساتھ پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی بھرپور نمائندگی تھی،پروگرام کا پہلا حصہ محفل مشاعرہ پر مشتمل تھا جس کی نظامت کی ذمہ داری ہمنوا یوکے کے کوارڈینیٹر اور محفل فکر و فن کے بانی ممبر کونسلر راجہ محمد الیاس کے سپرد کی گئی تو انہوں نے سورہ آل عمران کی ان آیات سے پروگرام کا آغا ز کیا،جس کی ترجمہ یہ ہے کہ لوگوں کی رہنمائی کیلئے جس قدر امتیں پیدا ہوئی ان میں تم مسلمان سب سے بہتر ہو کہ اچھے کام کرنے کا کہتے ہو اور برے کاموں سے منع کرتے ہو اور اللہ پر ایمان رکھتے ہو اور سامعین سے گزارش کی کہ اگر ہر مسلمان ان تعلیمات پر عمل کرتے ہوئے سوسائٹی میں اپنا مثبت رول پلے کرے تو یہ عمل امت مسلمہ کی عزت و وقار میں خاطر خواہ اضافے کا باعث بن سکتا ہے تلاوت قرآن مجید فرقان حمید کے بعد انہوں نے لندن سے آئے ہوئے ایک نعت گو شاعر محمود علی کو حضورؐ کی شان اقدس میں ہدیہ عقیدت پیش کئے جانے کی دعوت دی،محفل مشاعرہ کی مہمان خصوصی پاکستان سے آئی ہوئی معروف شاعرہ نیلما ناہید درانی تھیں جبکہ صدارت لندن کے ایک سینئر شاعر ایوب اولیاء نے کی،شامل مشاعرہ دوسرے شعراء میں ووکنگ کی ہی ایک نئی شاعرہ مسرت لندن سے عامر امیر،وقار اقبال،رانا ساجد،ریڈنگ سے عذرا ناز لندن ہی سے رانا عبدالرزاق خان،فرزانہ فرحت،سلطانہ صابری،احسان شاہد اور مظفر احمد مظفر نے اپنا اپنا کلام سنا کر سامعین سے خوب داد وصول کی،ان کے بعد مہمان خصوصی محترمہ نیلما ناہید درانی کو زحمت کلام دی گئی تو انہوں نے اپنی اردو اور پنجابی کی متعدد نظمیں اور غزلیں سنا کر حاضرین محفل سے خوب داد وصول کی،قارعین کرام کے ادبی ذوق کے پیش نظر ان کی ایک غزل پیش خدمت ہے،’’اداس لوگوں سے پیار کرنا کوئی تو سیکھے،سفید لمحوں میں رنگ بھرنا کوئی تو سیکھے،کوئی تو آئے خزاں میں پتے اگانے والا‘گلوں کی خوشبو کو قید کرنا کوئی تو سیکھے‘‘