مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مرکزی جمعیت اہلحدیث برطانیہ کی سالانہ عالمی اسلامی دعوت کانفرنس
مرکزی جمعیت اہلحدیث برطانیہ ایک دعوتی ، دینی ،تعلیمی اور فلاحی اسلامی تنظیم ہے ، جس کا قیام ماہ جون ۱۹۷۵ ء میں عمل میں لایا گیا اور برطانوی قوانین کے تحت اس کو رجسٹرڈ بھی کروایا گیا ۔ جمعیت کا صدر مقام برمنگھم شہر میں ہے اور ملک میں اب تک اس کی ۴۵ سے زائد برانچز اور حلقات قائم ہوچکے ہیں ۔جمعیت کی سالانہ عالمی اسلامی دعوت کانفرنس امسال 15 ستمبر، اتوار، گرین لین مسجدبرمنگھم میں حسب سابق پورے تزک واحتشام سے منعقد ہورہی ہے جس میں امام مسجد نبوی شیخ صلاح البدیر خصوصی شرکت کر رہے ہیں ، اس کے علاوہ پاکستان سے سینیٹر پروفیسر ساجدمیر، ڈاکٹرمحمدحماد لکھوی، علامہ زبیراحمدظہیر،شیخ علی محمد ابوتراب ، ہندوستان سے ممتاز سکالر مولانا ظفرالحسن مدنی خصوصی شرکت کریں گے، جبکہ برطانیہ کے بھی ممتاز علماء، سکالرز خطاب کریں گے۔ کانفرنس کا عنوان ’دعوت وتبلیغ میں حکمت‘ ہے. جمعیت کے بنیادی اغراض ومقاصد جمعیت کی تاسیس کا اولیں مقصد برطانیہ اور یورپ میں آباد مسلمانوں کو قرآن وسنت سے اس انداز سے جوڑنا ہے کہ وہ اپنی زندگی کے مختلف گوشوں میں پیش آمدہ مسائل کا حل قرآن وسنت ہی سے تلاش کرسکیں، اور انہیں اس توحید کی طرف بلانا ہے جو ہر قسم کی آمیزش سے پاک وصاف ہو ، ان کے دلوں میں اللہ تعالیٰ کی سچی محبت اس انداز میں بٹھانی ہے کہ وہ اسی کی اطاعت کو اپنے اوپر لازم کرلیں، ان میں رسول اکرمﷺ کے ساتھ ایسی خالص محبت پیدا کرنی ہے جس کی بنیاد پر وہ رسول اللہﷺ کو اپنا مقتدیٰ ، رہنمااور آپﷺ کے فرامین کو مشعل راہ بنالیں ۔ دین کے نام پر اس وقت جس قسم کی بدعات وخرافات رائج ہیں ان کو ختم کرنا اور ان کی جگہ رسول اکرمﷺ کی صحیح سنتوں کو رائج کرنا ، نیز من گھڑت وموضوع اور ضعیف روایات کی بجائے صحیح احادیث پر عمل کی طرف راغب کرنا، اسی طرح ان تمام سنتوں کا احیاء جو زمانہ کی گردش اور جہالت کی وجہ سے متروک ہوچکی ہیں ۔ * اسلامی شریعت کے حدود میں رہتے ہوئے اس آزادئ فکر کی طرف دعوت دینا جس کے ذریعے برسوں سے ذہنوں پر چھائے ہوئے تقلیدی اور فکری جمود کے اثرات کو زائل کیا جاسکے۔ * نئی نسل کی تربیت ان اسلامی خطوط پر کرنا جن کے ذریعے وہ اپنی اسلامی شناخت کو باقی رکھ سکیں اور انہیں اسلامی روایات و ثقافت سے وابستہ رکھنے کیلئے ہر ممکنہ کوشش کو بروئے کار لانا۔ * مسلمان خواتین میں دین کا صحیح شعور پیدا کرنااور ان پر دین کے حوالے سے عائد فرائض کی انجام دہی میں ان کی راہنمائی کرنا۔ * غیرمسلم افراد تک دین کی دعوت کو مثبت انداز ، معتدل فکر اور دلنشین اسلوب میں پیش کرنا۔ * فتنوں اور آزمائش کے دور میں جوش وجذبہ کی بجائے سنجیدگی، دور اندیشی،حکمت اور دانشمندی کے ساتھ حالات کا مقابلہ کرنا. جمعیت کی دعوت کسی شخصیت اور مقام کی حدبندیوں میں محدود نہیں ، کیونکہ شخصیات اور مقامات سے وابستگی ہی امت میں فرقہ واریت انتشار اور گروہی تعصبات کو ہوا دیتی ہے ، الحمدللہ جمعیت نے اپنے دامن کو ایسی تمام وابستگیوں اور عقیدتوں سے پاک اور صاف رکھ کر اپنی محبت اور عقیدت اور وابستگی کا محور صرف اور صرف رسول اکرمﷺ کی ذات گرامی کو بنایا ہے، کہ جن کی محبت کو عین ایمان قرار دیا گیا ہے، ہماری اطاعت واتباع کا مرکز بھی ذات رسالت ماب ﷺ ہے کہ جن کی اطاعت عین اللہ تعالیٰ کی اطاعت ہے۔ **تعلیم تربیت مسلمان بچوں اور بچیوں کے لئے جمعیت نے اپنی تمام برانچز میں مدارس سلفیہ کا جال بچھایا ہوا ہے ۔جن میں قرآن وحدیث، فقہ، سیرت، اسلامی تاریخ، توحیدوعقائد اور اخلاقیات کی تعلیم دی جاتی ہے، نیز دلچسپی رکھنے والوں کیلئے عربی اور اردو زبانوں کی تعلیم کا بھی معقول انتظام ہے، اور اس مقصد کیلئے ماہر اساتذہ کرام کی خدمات حاصل ہیں، مدارس میں طلبہ وطالبات کی حوصلہ افزائی کیلئے سالانہ امتحانات کا انعقاد بھی کیا جاتا ہے اور نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے بچوں کیلئے انعامات تقسیم کئے جاتے ہیں ۔ الحمدللہ مدارس سلفیہ کی کارگردگی برطانیہ کے تمام دینی مدارس میں نمایاں مقام رکھتی ہے۔ تمام مدارس سلفیہ میں تعلیمی نصاب موجود ہے اور حالات کے تقاضوں کے مطابق اس میں ضروری تبدیلیاں بھی کی جاتی ہیں، اس شعبہ کے ناظم مولانا کنورشکیل احمد ہیں اور ان کے نائب مولانا عبدالباسط العمری ہیں جو نئے نصاب کی تدوین بھی جدید تقاضوں کے مطابق کر رہے ہیں۔ ** نشرواشاعت یہ شعبہ جمعیت کے اہم ترین شعبوں میں سے ہے جس کے تحت نہ صرف جمعیت کی دینی اور دعوتی سرگرمیوں کو مختلف اخبارات ، رسائل جرائد میں شائع کرایا جاتا ہے بلکہ اس کے ذریعے جمعیت کی دعوت کو ہرانداز سے عام کیا جاتا ہے ، کتب کی اشاعت، آڈیو ، وڈیو کیسٹ، اور سی ڈی کا اجرا اور علمائے کرام کی تقاریر کے کیسٹ میں یہ شعبہ اپنی خدمات بھرپور انجام دے رہا ہے۔ اس شعبہ کی قابل قدر کارکردگی میں ماہنامہ صراط مستقیم (اردو)کی اشاعت بھی ہے جو گذشتہ تیس برس سے باقاعدگی کے ساتھ شائع ہورہاہے، اس جریدہ میں اندرون اور بیرون ملک کے ممتاز اہل قلم کی تحریریں شائع ہوتی ہیں ۔ جمعیت کے علمائے کرام کے پروگرامز بھی کئی ایک چینلز پر باقاعدگی کے ساتھ نشرہوتے ہیں۔ ** اسلامی کیلنڈر جمعیت کے تحت ہرسال ایک خوبصورت کیلنڈر بھی شائع کیا جاتا ہے جو اپنی ظاہری اور معنوی خوبیوں کے ساتھ نہ صرف مقبول عام ہے بلکہ شائقین نئے کیلنڈر کا شدت سے انتظا ر کرتے ہیں ۔ برادر مظہر اقبال اس شعبہ کے نگران ہیں، جو جمعیت کے تمام اشاعتی موادکے بھی ذمہ دار ہیں۔ ** شعبہ ریلیف یوں تو جمعیت گذشتہ کئی سالوں سے ریلیف کا کام بھی انجام دیتی چلی آرہی ہے مگر منظم سطح پر اس کا م کا آغاز نائن الیون کے حادثے کے بعد کیا گیا ، جس کا آغاز افغانستان سے ہوا، اور بعد ازاں مستقل بنیادوں پر امدادی کاموں کا آغاز ، پاکستان، صومالیہ، سری لنکا ، مالدیپ، اور انڈونیشیا میں کیا گیا۔ سونامی کے حادثے کے بعد شعبہ ریلیف نے انڈونیشیا اور سری لنکا میں یتیموں اور بے گھر افراد کی کفالت کا ذمہ اپنے سر لیا اور مکانات کی تعمیر کا بھی بیڑا اٹھایا، حادثے سے متأثرہ افراد کو چھوٹے کاروبار کرنے میں بھی مدد دی، آزادکشمیر میں ہونے والے زلزلہ میں جہاں ہنگامی بنیادوں پر غلہ، اناج، خیموں اور ادویات کی تقسیم عمل میں لائی گئی وہاں مستقل بنیادوں پر ان کیلئے ایمبولینس بھی فراہم کی گئیں اورکئی ایک مساجد کی تعمیر، عارضی شیلٹرز ، اور مکانات کی تعمیرومرمت کی ذمہ داری بھی جمعیت نے اپنے اوپر اٹھائی، الحمد للہ سندھ اور بلوچستان میں سیلاب سے آنے متأثرہ افراد کیلئے بھی جمعیت کی تمام برانچز نے دل کھول کر تعاون کیا اور شعبہ ریلیف نے متأثرین کیلئے ہر قسم کی ضروریات کا نہ صرف اہتمام کیا بلکہ یہ سلسلہ ہنوز جاری ہے،۔اس شعبہ کے ناظم مولانا محمد ابراہیم میرپوری ہیں۔ ** دعوت وتبلیغ دعوت وتبلیغ جمعیت کے بنیاد ی اغراض ومقاصد میں سے ایک ہے ، اس شعبہ کو منظم اور مؤثر اور وسعت دینے کیلئے جمعیت کی قیادت کی طرف سے بھرپور اہتمام ہے ، خطبات جمعہ، دروس، تعلیمی و تبلیغی حلقہ جات، سٹڈی سرکل کا اہتمام جمعیت کی ہر برانچ میں موجود ہے، اس وقت جمعیت کے اہداف میں یہ بات بھی شامل ہے کہ یہاں کی نوجوان نسل اور غیرمسلم طبقے کو اسلام کی صاف اور شفاف تعلیمات سے متعارف کرایا جائے۔ اس ہدف کی تکمیل کیلئے مختلف برانچز میں دعوتی سرگرمیوں کے علاوہ انگریزی زبان میں سٹڈی سرکلز کا آغاز بھی کیا جا چکا ہے ۔ حج بیت اللہ کے موقع پر بھی مختلف برانچز میں تربیتی کورسز منعقد کروائے جاتے ہیں ، دعوتی نقطہ نظر سے فری لٹریچراور دعوتی کتب کی فراہمی بھی کی جاتی ہیں ، اور ایک سال کے دوران ہزاروں پاؤنڈز کی کتب اور خصوصا قرآن کریم ترجمہ وتفسیر مفت تقسیم کئے گئے۔اس شعبہ کے ناظم حافظ حبیب الرحمن حبیب ہیں۔ ** خواتین ونگ مرکزی جمعیت اہلحدیث برطانیہ نے شروع سے ہی اپنی مساجد کے دروازے خواتین کیلئے کھلے رکھے ہیں جہاں وہ نمازوں کی ادائیگی کے علاوہ خطبات ودروس سے استفادہ کرتی ہیں ، الحمدللہ جمعیت کی اکثر برانچز میں خواتین کے اجتماعات منعقد ہوتے ہیں۔شعبہ خواتین کے تحت مرکزی سالانہ کانفرنس بھی منعقد ہوتی ہے ، امسال خواتین کی سالانہ کانفرنس جون کو ہوچکی ہے جس میں برطانیہ بھر سے سینکڑوں خواتین نے شرکت کی۔ جبکہ اولڈہم، ہیلی فیکس، نیلسن، گلاسگو میں خواتین کے اجتماعات تواتر کے ساتھ منعقد ہوتے ہیں ، اور جبکہ کئی ایک شہروں میں خواتین کیلئے ترجمہ وتفسیر کلاس، نوجوان لڑکیوں کیلئے سٹڈی سرکلزبھی منعقدہوتے ہیں، میت کو غسل، خواتین کے مسائل پر تعلیمی اور تربیتی تشستوں کا انعقاد بھی کیا جاتا ہے. اس شعبہ میں باجی عائشہ ثاقب،ام حسن مدنی، ام حماد، محترمہ بیگم جمیل احمد، محترمہ بیگم عبدالہادی،محترمہ راحت افضل راچڈیل،قابل ذکر ہیں.ممتازخاتون سکالراور الھدیٰ انٹرنیشنل کی سربراہ ڈاکٹرفرحت ہاشمی نے گذشتہ سہ ماہی برطانیہ کا دورہ کیا اس موقع پر تقریبا چالیس کے قریب ان کے پروگرام مختلف شہروں میں منعقدکئے گئے،ہرپروگرام میں سینکڑوں خواتین کی شرکت نے ثابت کیا کہ برطانیہ میں مسلم خواتین اپنے اسلامی تشخص کو برقرار رکھے ہوئے ہیں ۔ ** مجلس القضاء الاسلامی برطانیہ میں آباد مسلمان متعدد مسائل کا شکار ہیں ، ان میں انتہائی نازک حیثیت کے حامل خاندانی مسائل ہیں، آئے دن مسلم کیمونٹی میں طلاق کی بڑھتی ہوئی شرح بھی قابل تشویس ہوتی جارہی ہے، دوسری جانب مسلمان کیمونٹی کا بڑا طبقہ شریعت کے دئے ہوئے عائلی مسائل و قوانین سے یکسر ناواقف ہے۔ اس سلسلسہ میں مسلم کیمونٹی کی راہنمائی کی غرض سے مجلس القضاء الاسلامی کے شعبہ کا آغاز کیا گیا، جس میں جمعیت کے نامور علمائے کرام شامل ہیں ، یہ شعبہ عائلی و خاندانی مسائل، شادی بیاہ، نکاح وطلاق کے سلسلے میں قرآن وسنت کی روشنی میں حل پیش کرنے اور حلال وحرام اور دیگر مسائل کی نشاندہی پیش کرنے میں سرگرم ہے، اس شعبہ کا بنیادی مقصد شوہر وبیوی اور خاندانوں کے درمیان پیدا ہونے والی رنجشوں کو صلح وصفائی کے ذریعہ الفت ومحبت پیدا کرنا ہے۔ نیز اس شعبہ کے تحت اسلامی وصیت نامے، وقف، حصص اور وراثت کے حوالہ سے قرآن وسنت کی روشنی میں مسلم کیمونٹی کی راہنمائی کی جاتی ہے۔ اس شعبہ کے صدر مولانا عبدالہادی العمری ہیں۔ ** بیت القرآن والسنۃ جمعیت کے تحت چلنے والے تمام مدارس سلفیہ میں طلبہ میں قرآن حکیم کے ساتھ وابستگی کو برقرار رکھنے کیلئے اور طلبہ میں حفظ قرآن کا شوق پیدا کرنے کیلئے بیت القرآن والسنۃ کا قیام عمل میں لایا گیا ہے، اس شعبہ کے تحت متعدد برانچز میں حفظ کے حلقات قائم ہیں ۔جمعیت کی اکثر مساجد میں حفظ کا شعبہ قائم ہے، اس شعبہ کی سرپرستی مولانا شعیب احمد کر رہے ہیں۔ ** جمعیت کی دعوت ، اتحاد اور یکجہتی مرکزی جمعیت اہلحدیث برطانیہ اپنے آغاز سے ہی امت کے درمیان اتحادواتفاق کو فروغ دینے اور امت مسلمہ کو ایک ایسا پلیٹ فارم مہیا کرنے میں کوشاں رہی ہے جس پر تمام طبقوں کا اجتماع ممکن ہو، جمعیت کی تاریخ اس بات کی شاہد ہے ، کہ امت کے تمام مشترکہ مسائل کو حل کرنے کیلئے جمعیت ہمیشہ صف اول میں رہی ہے ۔ جمعیت جس کا آغاز مولانا فضل کریم عاصم مرحوم اور مولانا محموداحمد میرپوری نے کیا تھا ، اور قریہ قریہ بستی اس بات کے متمنی رہے کہ مملکت برطانیہ کونے کونے میں دعوت قرآن وسنت پہنچ جائے، آج ایک سایہ دار درخت بن چکا ہے ۔ جمعیت کے منبرومحراب اس بات کے شاہد ہیں کہ اس کے علماء وخطباء نے کبھی انہیں انتشار اور افتراق بنانے کیلئے استعمال نہیں کیا ۔ موجودہ حالات میں جمعیت یہ یقین رکھتی ہے کہ مسلمان اتحادو یکجہتی کے ساتھ ایک پلیٹ فارم پر متحد ہوجائیں، موجودہ دور میں مسلمانوں کے خلاف ہونے والے پروپیگنڈے اور حالات کی سنگینی کے بعدجمعیت یہ مؤقف رکھتی ہے کہ مسلمان رد عمل کے طور پر اشتعال انگیزی، انتہاپسندی، یا کوئی غیرقانونی یا غیر انسانی حرکت کا ارتکاب کرنے کی بجائے صبروتحمل ، حکمت ودانش، دور اندیشی اور معقولیت کا مظاہرہ کریں۔ گستاخانہ فلم اور خاکوں کے مسئلہ میں جمعیت یہ موقف رکھتی ہیں کہ تحفظ ناموس رسالت ہمارے ایمان کا حصہ ہے ،اور پرامن احتجاج ہر فورم پر کیا جائے اور اپنے عمل کے زریعہ محبت رسول کا حق ادا کیا جائے ، نیز سیرت نبوی پر مبنی لٹریچر غیرمسلموں تک پہنچایا جائے تاکہ وہ مقام مصطفی سے حقیقی طور پر آشنا ہوسکیں۔ مصروشام کے حالات میں تحمل وبردباری کی اشد ضرورت ہے ، مصروشام میں اخوان المسلمون اور سلفی مسلمانوں پر ہونے والا ظلم قابل مذمت ہے ، مرکزی جمعیت اہلحدیث برطانیہ سیکس گرومنگ ، ڈرگ کے استعمال میں مسلم نوجوانوں کی حرکات کی پرزور مذمت کرتی ہے اور مسلم والدین سے امید رکھتی ہے وہ اپنے بچوں کا مستقبل صرف تعلیم سے وابستہ کریں ، کیونکہ تعلیم اور اخلاقی تربیت سے ہی ہم اپنی آئندہ نسل کو اسلام سے وابستہ اور ایک بہترین شہری بننے میں مدد دے سکتے ہیں ۔ ) دارالعلوم،ناٹنگھم مرکزی جمعیت اہلحدیث برطانیہ نے نوجوان نسل کو دین کی طرف راغب کرنے اور مستقبل میں تعلیم یافتہ نوجوان سکالرز کی تعلیم وتربیت کیلئے ناٹنگھم میں ایک دارلعلوم قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے ، دارالعلوم کی بلڈنگ قریبا ایک سو کمروں پرمشتمل ہے ، بہت جلد وہاں تدریس کا آغاز کردیا جائے گا۔ ) تنظیمی ڈھانچہ اور موجودہ قیادت مرکزی جمعیت اہلحدیث برطانیہ کا تنظیمی ڈھانچہ مجلس شوریٰ ، مجلس عاملہ اور مجلس نظامت پر قائم ہے، مجلس شوریٰ تین سال کیلئے امیر، ناظم اعلیٰ اور ناظم مالیات منتخب کرتی ہے اور بعدازاں امیر مشورے سے مجلس نظامت اور مجلس عاملہ کا اعلان کرتا ہے جہاں تمام فیصلے باہمی مشورے اور افہام وتفہیم سے حل کئے جاتے ہیں ، مرکزی جمعیت اہلحدیث برطانیہ کی موجودہ قیادت درج ذیل افراد پر مشتمل ہے۔ امیر : مولانا عبدالہادی العمری۔ نائب امیر اول: مولانا منیرقاسم۔ نائب امیر دوم: قاری طاہر طیب۔ ناظم اعلیٰ : مولانا شعیب احمد میرپوری۔ نائب ناظم اعلیٰ : مولانا شیرخان جمیل العمری : ناظم مالیات ،برادر افتخار احمد : ناظم تعلیم: مولانا کنورشکیل احمد :نائب ناظم تعلیم، مولانا عبدالباسط العمری: ناظم دعوت وتبلیغ : حافظ حبیب الرحمن: ناظم ریلیف: مولانامحمد ابراہیم میرپوری :ناظم نشرواشاعت: مولاناشفیق الرحمن شاہین. (تحریر:شفیق الرحمان شاہین، ناظم نشرواشاعت)