مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس لیوٹن برانچ کا پروفیسر امتیاز کی زیر صدارت اجلاس
لیوٹن:آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس لیوٹن برانچ کا ایک اجلاس زیر صدارت پروفیسر امتیاز چوہدری صدرلیوٹن برانچ منعقد ہوا،اجلاس میں قائد ملت چوہدری غلام عباس مرحوم کی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا گیا،مقررین نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ چوہدری غلام عباس مرحوم ایک تاریخ ساز شخصیت تھے،انہوں نے تحریک آزادی کشمیرکے علم کو تا حیات سر بلند رکھا،ان کی جلائی ہوئی شمع کو مجاہد اول نے نہایت خوش اسلوبی سے جاری و ساری رکھا اور صدر جماعت سردار عتیق احمد خان اس شمع کو لے کر کامیابی سے آگے بڑھ رہے ہیں،مسلم کانفرنس کاحالیہ منعقدہ کنونشن اس بات کا ثبوت ہے کہ کشمیری آج بھی ریاستی جماعت سے کس قدر محبت اور عقیدت رکھتے ہیں،مسلم کانفزنس آزاد کشمیر میں کشمیریوں کی واحد نمائندہ جماعت ہے،جماعت کے کارکنان قائد ملت چوہدری غلام عباس اور مجاہد اول کے مشن کو جاری رکھے ہوئے ہیں اور وہ دن دور نہیں جب تحریک آزادی کشمیر کامیابی سے ہمکنار ہو گی،اجلاس سے صدر تقریب پروفیسر امتیاز چوہدری،سابق جنرل سیکرٹری ایم سی یوکے و کونسلر ریاض بٹ،سابق صدر ایم سی لیوٹن راجہ یعقوب خان،ڈپٹی جنرل سیکرٹری یوکے پروفیسر ممتاز بٹ،سیکرٹری مالیات ایم سی یو کے ملک آزاد،سابق کونسلر فاضل ضیائ،صدر یوتھ طارق شریف،ملک ماجد محمود،ماجد بٹ،انوار ملک نے خطاب کیا،نظامت کے فرائض راجہ ماجد مسعود نے سر انجام دیئے،آخر میں قائد ملت چوہدری غلام عباس،مجاہد اول سردار عبدالقیوم اور دیگر شہدا کے درجات کی بلندی کے لئے دعا کی گئی۔