مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سقوط ڈھاکہ قوم کیلئے ناقابل فراموش اورتکلیف دہ سانحہ ہے: تحریک کشمیر برطانیہ
برمنگھم:سقوط ڈھاکہ اور سانحہ پشاور قوم کے لیے ناقابل فراموش تکلیف دہ سانحات ہیں۔ ایک دن کے لیے تعزیتی ریفرنس اور تقریبا ت منعقد کرانے جذباتی تقاریر نغمے اوترانے پڑھنے سے شہدا کے خون کا حق ادا نہیں ہوگا۔ صدر تحریک کشمیر برطانیہ راجہ فہیم کیانی نے مقامی لائبریری میں سقوط ڈھاکہ اور سانحہ پشاور کے حوالہ منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سقوط ڈھاکہ تاریخ پاکستان کا سیاہ ترین دن ہے جب دشمنوں کے ساتھ ساتھ اپنوں کی نالائقیوں اور حماقتوں سے ملک کو دوحصوں میں تقسیم کر دیا گیا۔ مقتدر حلقوں کی متنازعہ پالیسیوں، سیاسی مفادات کی جنگ عوامی حقوق کی غیر منصفانہ تقسیم، رائے عامہ کی نفی، زاتی سیاسی عناد اور قومی نوعیت کے امور کو غیر سنجیدگی سے نمٹانے کے نتیجہ میں ملک کو دو لخت کر دیا گیا۔ سیاسی اور عوامی حقوق کی غیر مساویانہ تقسیم ایسے قومی سانحات کو جنم دیتی ہے۔ موجودہ حالات میں کشمیر اور اہل کشمیر کے حقوق کی عد م دستیابی ان کی محرومیوں میں اضافے کا باعث بن رہی ہیں جن کا برقت اور دیر پا حل انتہائی ضروری ہے دشمن کی مکارانہ چالوں کے ساتھ ساتھ اپنی کمزور پالیسیوں پر نظر ثانی کی اشدضرورت ہے۔ سانحہ پشاور دردناک اور ناقابل فراموش ہے معصوم جانوں کے ضیاع کے دکھ درد او ر کرب قوم کے لیے ناقابل برداشت ہے اس کے رونما ء ہونے کے تمام عوامل کا سد باب کیا جانا انتہائی ضروری ہے۔ شہدا ء پشاور سمیت ملک بھر میں دہشت گردی کے مختلف واقعات میں جانیں قربانیں کرنے والے عوام و سکیورٹی اہلکاروں کو خراج عقیدت پیش کرنے کے ساتھ ساتھ دہشت گردی کے اسباب نے نمٹنے کے لیے ہر سطح پر موثر اقدامات کی اشد ضرورت ہے۔ تقریب سے مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے اہم دانش، مفکرین اور اہل قلم نے اظہار خیال کیا۔