مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاک بھارت کو کشمیریوں کو بغیر کسی طفل تسلی کے مذاکرات میں شامل کرنا چاہئے:فہیم کیانی
برمنگھم :وقت آگیا ہے روائتی مذاکرات اور بیان بازی کے تسلسل کو ختم کرکے پاک بھارت سنجیدگی سے کشمیریوں کو شامل مذاکرات کریں اور کشمیر کے منصفانہ حل کی طرف پیش رفت کی جائے۔ تحریک کشمیر برطانیہ کی مرکزی مجلس شوریٰ کے اہم ارکان سے اہم مشاورت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوے صدر تحریک کشمیر راجہ فہیم کیانی کا کہنا تھا کہ ماضی میں جب کبھی بھارت پر عالمی دباو میں اضافہ ہوا فوراً پاک بھارت مذاکرات کا عمل شروع کرکے کشمیریوں اور عالمی دباو کو کم کرنے کے بعد ایک دوسرے پر الزام تراشیاں کرکے بغیر کسی اہم پیش رفت کے مذاکرات کو ختم کر دیا جاتا رہا ہے اور اہم ترین کشمیر ایشو کو جوں کا توں رہنے دیا گیا جس سے لاکھوں انسانی جانیں ضائع ہوئیں اور آج بھی کشمیری خود اپنے حق کے حصول کی خاطر مصروف عمل ہیں اور عالمی اور علاقائی قوتوں کے درمیان تختہ مشق ستم بنے ہوے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پاک بھارت کے درمیان نیا مذاکراتی سلسلہ بھی اگر ماضی کی طرح فقط پاک بھارت دوطرفہ محدود اعتماد سازی کے اقدامات کے بعد معطل ہو گیا تو کشمیر ایشو پر اہم پیش رفت کا ایک اور تاریخی موقع ہاتھ سے نکل جائے گا۔ پاک بھارت سنجیدہ حلقوں کو اب کشمیریوں کو بغیر کسی روائتی طفل تسلی کے فوراً مذاکرات میں شامل کرنے اور غیر جانبدار قوتوں کے ساتھ ملکر کشمیریوں کی خواہشات کو اولیت دیتے ہوے صدی کے طویل ترین عالمی تصفیہ طلب مسئلے کے حل کی طرف بڑھنا چاہیے دیگر اہم ممالک اور اقوام متحدہ کو بھی شامل کیا جائے جو اس مسئلے کے اہم فریق ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کے برطانیہ سمیت یورپ بھر میں عنقریب بڑے پیمانے پر کشمیر ایشو کے سلسلہ اہم مہم کا آغاز کیا جارہا ہے جس کے نتیجے میں مظلوم کشمیریوں کی آواز کو عالمی سطح پر بلند کرنے کشمیر پر غاصبانہ قبضے کو بے نقاب کرنے اور عالمی ضمیر کو جگانے میں مدد ملے گی۔