مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاک بھارت کو کشمیریوں کو بغیر کسی طفل تسلی کے مذاکرات میں شامل کرنا چاہئے:فہیم کیانی
برمنگھم :وقت آگیا ہے روائتی مذاکرات اور بیان بازی کے تسلسل کو ختم کرکے پاک بھارت سنجیدگی سے کشمیریوں کو شامل مذاکرات کریں اور کشمیر کے منصفانہ حل کی طرف پیش رفت کی جائے۔ تحریک کشمیر برطانیہ کی مرکزی مجلس شوریٰ کے اہم ارکان سے اہم مشاورت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوے صدر تحریک کشمیر راجہ فہیم کیانی کا کہنا تھا کہ ماضی میں جب کبھی بھارت پر عالمی دباو میں اضافہ ہوا فوراً پاک بھارت مذاکرات کا عمل شروع کرکے کشمیریوں اور عالمی دباو کو کم کرنے کے بعد ایک دوسرے پر الزام تراشیاں کرکے بغیر کسی اہم پیش رفت کے مذاکرات کو ختم کر دیا جاتا رہا ہے اور اہم ترین کشمیر ایشو کو جوں کا توں رہنے دیا گیا جس سے لاکھوں انسانی جانیں ضائع ہوئیں اور آج بھی کشمیری خود اپنے حق کے حصول کی خاطر مصروف عمل ہیں اور عالمی اور علاقائی قوتوں کے درمیان تختہ مشق ستم بنے ہوے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پاک بھارت کے درمیان نیا مذاکراتی سلسلہ بھی اگر ماضی کی طرح فقط پاک بھارت دوطرفہ محدود اعتماد سازی کے اقدامات کے بعد معطل ہو گیا تو کشمیر ایشو پر اہم پیش رفت کا ایک اور تاریخی موقع ہاتھ سے نکل جائے گا۔ پاک بھارت سنجیدہ حلقوں کو اب کشمیریوں کو بغیر کسی روائتی طفل تسلی کے فوراً مذاکرات میں شامل کرنے اور غیر جانبدار قوتوں کے ساتھ ملکر کشمیریوں کی خواہشات کو اولیت دیتے ہوے صدی کے طویل ترین عالمی تصفیہ طلب مسئلے کے حل کی طرف بڑھنا چاہیے دیگر اہم ممالک اور اقوام متحدہ کو بھی شامل کیا جائے جو اس مسئلے کے اہم فریق ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کے برطانیہ سمیت یورپ بھر میں عنقریب بڑے پیمانے پر کشمیر ایشو کے سلسلہ اہم مہم کا آغاز کیا جارہا ہے جس کے نتیجے میں مظلوم کشمیریوں کی آواز کو عالمی سطح پر بلند کرنے کشمیر پر غاصبانہ قبضے کو بے نقاب کرنے اور عالمی ضمیر کو جگانے میں مدد ملے گی۔