مقبول خبریں
جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی برطانیہ برانچ کے زیرِ اہتمام فکر مقبول بٹ شہید ورکز یونیٹی کنونشن کا انعقاد
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پیر علاو الدین صدیقی کی سرپرستی میں برٹش مسلم الائنس کا پلیٹ فارم متحرک ہونا چاہیے..!!
برمنگھم ...برمنگھم میں منعقدہ ایک تقریب میں علمائے اہلسنت نے اس امر پر اتفاق کیا ہے کہ پیر طریقت رہبر شریعت پیر علاو الدین صدیقی کی سرپرستی میں برٹش مسلم الائنس کا پلیٹ فارم متحرک ہونا چاہیے.. مسلم ایکشن کمیٹی میں شامل مذہبی، دینی اور سماجی قائدین جمعیت علمائے برطانیہ کے مولانا علامہ امداد اللہ قاسمی، مولانا رفیق احمد شاہ، صابر میر، مرکزی جمعیت اہل حدیث کے مولانا ابراہیم میرپوری، شیعہ مجلس عمل کے مولانا امیر حسین نقوی، اہل سنت والجماعت کے مرکزی قائدین مولانا نصیر اللہ نقشبندی، مولانا محمد طیب قادری، یوکے اسلامک مشن کے مفتی محمد فاروق علوی، مولانا محمد سجاد، برادر سجاول خان، محمد غوث اور حافظ محمد ادریس اس محفل میں شریک تھے ۔ مجلس کے شرکاء نے اس بات پر اتفاق کا اظہار کیا کہ برٹش مسلم الائنس کو پیر طریقت علامہ علائو الدین صدیقی کی زیر سرپرستی مزید منظم اور فعال کیا جائے۔ اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ برٹش مسلم الائنس کے پلیٹ فارم سے کسی متنازع موضوع کو زیر بحث لانے کی بجائے کلیدی اور ہنگامی معاملات پر اتفاق رائے سے مسلمانان برطانیہ کی قرآن و حدیث کی تعلیمات میں رہنمائی کی جائے۔ مسلم ایکشن کمیٹی اور برٹش مسلم الائنس کے مرکزی قائدین نے شام کی گھمبیر اور بگڑتی ہوئی صورت حال کا تفصیلی تجزیہ کیا۔ مفتی محمد فاروق علوی نے شامی حکمران اور بعث پارٹی کے رہنمائوں کی شامی عوام پر ظلم و تشدد کی مذمت کی اور مطالبہ کیا کہ شام میں فوری طور پر خون ریزی بند کی جائے، غیر ملکی مداخلت کا خاتمہ کیا جائے اور بشر الاسد کی ظالمانہ حکومت مستعفی ہو کر غیر جانب دارانہ انتخابات کے ذریعے انتقال عوام کے منتخب نمائندوں کو منتقل کیا جائے۔ ہینڈ ورتھ اسلامک سنٹر کے خطیب مولانا محمد سعید نے مصری عوام پر جاری تشدد اور ظالمانہ خون ریزی کی مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ اقتدار فوری طور پر مصری منتخب صدر کے حوالے کیا جائے۔ انہوں نے مسلم حکمرانوں اور بالخصوص عرب حکمرانوں کے رویے کو انتہائی شرمناک قرار دیا جو کہ امریکہ اور اس کے اتحادیوں کو اخلاقی و مالی امداد فراہم کررہے ہیں۔ مولانا علامہ قاسمی نے شام میں مبینہ کیمیکل حملوں کے ذریعے معصوم جانوں کی ہلاکتوں پر سخت نکتہ چینی کی مولانا رفیق احمد شاہ، مولانا محمد سجاد اور مولانا محمد ابراہیم میرپوری نے مذہبی و دینی جماعتوں کی شام کے حوالے سے متفقہ رائے کو خوش آئند قرار دیا۔ حافظ محمد ادریس نے برٹش مسلم الائنس کے زعماء کا شام کی بھیانک اور خطرناک صورت حال پر برطانوی مسلمانوں کے جذبات و احساسات کی ترجمانی پر شکریہ ادا کیا۔ مولانا امیر حسین نقوی نے کہا کہ امت مسلمہ کو شیعہ، سنی فرقوں میں تقسیم کرنے کی سازش کامیاب نہیں ہوگی۔ اجلاس کے اختتام پر ایک متفقہ قرار داد میں شام میں جاری خون ریزی کو فوری طور پر بند کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔ قرار داد میں شامی مظلوم عوام سے مکمل یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے شامی عوام کے قتل و غارت پر گہرے دکھ اور رنج کا اظہار کیا۔ قرارداد میں شام کے ہمسایہ عرب ممالک کے کردار پر نکتہ چینی کرتے ہوئے انہیں متنبہ کیا کہ وہ ہوش کے ناخن لیں اور اسرائیلی مفادات کو تقویت پہچانے کا سبب نہ بنیں۔ قرار داد میں شامی حکومت اور اپوزیشن سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ فوری طور پر جنگ بندی کرکے اپنے معاملات مذاکرات اور گفت و شنید سے حل کریں۔ قرارداد میں برطانوی پارلیمنٹ کے اراکین کو شام میں جنگی مداخلت کے خلاف فیصلہ کرنے پر زبردست خراج عقیدت پیش کیا۔