مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
تادیبی کارروائی نہ ہونے سے امریکہ کے دیگر مخالفین کو ’’مبارک باد کا پیغام‘‘جائیگا:جان کیری
لندن ... امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے ایک بار پھر شام کے خلاف فوجی کارروائی کی حمایت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ ماہ ہونے والے کیمیائی ہتھیاروں کے حملے میں اس ملک کی حکومت کے ملوث ہونے کے ٹھوس شواہد موجود ہیں۔ اُنھوں نے کہا کہ تادیبی کارروائی نہ ہونے سے شام کے صدر بشار الاسد اور مشرقِ وسطی میں امریکہ کے دیگر مخالفین کو ’’مبارک باد کا پیغام‘‘ جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار جان کیری نے لندن میں یورپ اور مشرق وسطی سے تعلق رکھنے والے قائدین سے ملاقاتوں کے بعد اپنے برطانوی ہم منصب ولیم ہیگ کے ہمراہ فارن کامن ویلتھ آفس میں ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہووے کیا ایک سوال کے جواب میں جان کیری نے یہ بھی تسلیم کیا کہ شام کو کیمیائی ہتھیاروں سے پاک کرنے کا روسی مطالبہ غلط نہیں ہے (واضح رہے کہ روس مسلسل اس کوشش میں ہے مسلے کا حل جنگ کی بجائے افہام و تفہیم سے ہو جائے ) تاہم امریکی وزیر خارجہ کا زور دیکریہی کہنا تھا کہ واشنگٹن کے پاس ’’ٹھوس‘‘ شواہد موجود ہیں کہ شام کی حکومت نے کیمیائی ہتھیاروں کے حملے کا حکم دیا تھا۔ ’’اعلیٰ سطحی افسران یہ ہدایات دیتے ہوئے اور تیاریوں میں ملوث پائے گئے، جب کہ حملے کے نتائج براہ راست صدر اسد کو بھیجے گئے۔‘‘ کیری نے شام کے صدر کی طرف سے ایک امریکی ٹی وی کو دیئے گئے انٹرویو میں شامی حکومت پر الزامات کی تردید اور جوابی کارروائی کی دھمکیوں کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ بشار الاسد قابل اعتماد شخصیت نہیں۔ امریکی وزیرِ خارجہ نے متنبہ کیا کہ اگر بین الاقوامی برادری نے ردِ عمل ظاہر نا کیا تو شام اور اس سے باہر بھی سنگین نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا۔ کیری نے کہا کہ شام تمام کیمیائی ہتھیار بین الاقوامی برادری کے سپرد کر کے اور معائنہ کاروں کو اجازت دے کر اپنے خلاف حملے سے بچ سکتا ہے۔ تاہم اُن کے بقول اُنھیں ایسا ممکن ہوتا نظر نہیں آتا۔ اس سے قبل پیر کو شام کے وزیرِ خارجہ ولید المعلم نے کہا کہ امریکہ کی جانب سے فوجی کارروائی شام کے بحران کا حل تلاش کرنے کے لیے جنیوا میں امن کانفرنس کے انعقاد کی کوششوں کو نقصان پہنچا سکتی ہے۔