مقبول خبریں
یوم عاشور کے حوالہ سے نگینہ جامع مسجد اولڈہم میں روح پرور،ایمان افروز محفل کا اہتمام
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
سلاؤ برو کونسل کی چالوے وارڈ میں لیبر امیدوار کونسلر کی دوڑ: سابق میئرراجہ زراعت فاتح
سلاؤ ... پاکستانی و کشمیری کمیونٹی کی اکثریت سے آباد سلاؤ کا علاقہ چالوے مقامی سیاست کے حوالے سے بڑی اہمیت کا حامل ہے یہ سلاؤ برو کونسل کی وہی وارڈ ہے جہاں گزشتہ دور میں ایک ایسے شخص کو آئندہ انتخابات کیلئے کونسلر کا ٹکٹ نہ مل سکا جو وہاں کا میئر تھا تقریبا اسی طرح کی کہانی اب آئندہ انتخابات کیلئے بھی دہرائی گئی ہے فرق یہ ہے کہ اس دفعہ ایک اسے شخص کو ٹکٹ نہیں مل سکا جو گزشتہ کئی سالوں سے وہاں سے کونسلر منتخب ہوتا چلا آرہا تھا لیکن سابقہ میئر اس دفعہ ٹکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئے ہیں، تفصیلات کے مطابق لیبر پارٹی چالوےکے ممبران نے آئندہ لوکل کونسل کے الیکشن میں چالوے وارڈ سے لیبر پارٹی کے امیدوار کے لئے کونسلر محمد شریف اور راجہ محمد زراعت کو سلیکٹ کرلیا۔ لیبر پارٹی ممبران کے اجلاس میں سابق میئر راجہ محمد زراعت کو 41 ووٹ ملے۔ جبکہ گزشتہ سال انھیں پچھاڑنے والے کونسلر محمد شریف کو 29 ووٹ ملے جبکہ کئی سالوں سے کونسلر منتخب ہونے والے کونسلر راسب کو 28 ملے جو کامیابی حاصل نہ کر سکے۔ اس اعتبار سے کونسلر محمد شریف اور راجہ محمد زراعت آئندہ لوکل الیکشن میں چالوے وارڈ سے لیبر پارٹی کے امیدوار قرار پائے جبکہ خواتین کی نشست کے لئے کونسلر نتاشہ کے حق میں دوسری امیدوار فاطمہ صفور کے دستبردار ہونے کے باوجود ممبران پارٹی نے دوبارہ اس وارڈ سے خواتین امیدواروں کو شارٹ لسٹ کرکے انتخابات کروانے کا مطالبہ کردیا جس کی وجہ سے کونسلر نتاشہ اس وارڈ سے لیبر امیدوار نامزد نہ ہوسکیں۔ 60 لیبر پارٹی ممبران نے سلیکشن میٹنگ میں شرکت کی۔