مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مشکلات کے باوجود کشمیری حق خود ارادیت کی شمع کو روشن رکھیں گے:پروفیسر نذیر شال
برمنگھم : کشمیر کنسرن کے زیر اہتمام برمنگھم میں انڈو پاک کشمیر پر مذاکرات میں ڈیڈ لاک پیدا ہونے پر کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میںپاکستان آزاد کشمیر کی تمام سیاسی جماعتوں کے رہنماوں نے شرکت کی ۔صدارت کے فرائض سرانجام دیتے ہوے کشمیر کنسرن کے صدر کونسلر چوہدری افتخار احمد نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کو مسلہ کشمیر کے حل کے لیے ایک بار پھر سے مذاکرات کا عمل شروع کرنا ہو گا اورکشمیر پر لانگ سٹینڈنگ یونائٹیڈ نیشن کی قرار دادوں پر عملدآمد کروانے کے لیے مقبوضہ کشمیر میں کشمیری عوام کوانکا بنیادی حق خود ارادیت دینا ہو گا تاکہ وہ اپنا مستقبل کافیصلہ کر سکیں۔انہوں نے کہا انڈو پاک ڈائیلاگ تعطل کا شکار ہیں دونوں ممالک اس پر سنجیدہ ہو کر پیش رفت کریں اور مظلوم کشمیریوں کی آزاد ی کے لیے مسلہ کو حل کریں۔کشمیر کنسرن کے جنرل سیکرٹری ساجد یوسف نے نظامت کے فرائض سرانجام دئیے۔مہمان خصوصی کشمیری حریت رہنما پروفیسر نذیر شال نے کہاکہ 1947 سے لیکر آج تک 6 لاکھ کشمیری آزادی کی خاطر شہید ہوے لیکن ہمیں بین الاقوامی وعدوں کے باوجود اس حق سے محروم رکھا گیا جبکہ یونائٹیڈ نیشن کے چارٹر میں قوموں کی آذادی بنیادی حق ہے۔انہوں نے کہا تمام مشکلات کے باوجود کشمیری حق خود ارادیت کی شمع کو روشن رکھیں گے اور اپنے مقاصد میں کامیاب ہوں گیاور کہا کامیابی اس صورت ممکن ہو گی جب ہم آپس میں متحد ہوں گے اور اس کے لیے نقطہ اتفاق حق خود ارادیت کے اصول ہیں۔انہوں نے کہ ابھارت کا سیکو لرازم دفن ہو چکا ہے اور RSS ایک فاشسٹ پارٹی ہے جس کے ایجنڈے پر اس وقت کام ہو رہا ہے اور بین الاقوامی طاقتوں کو اس پر نوٹس لینے کی ضرورت ہے۔کشمیر لبریشن لیگ کے مرکزی رہنما حاجی شیر عالم نے کہا کشمیری قوم نصف صدی سے اپنے حقوق کی جنگ لڑھ رہی ہے اور کشمیری قوم کو آزادی سے محروم رکھاگیا ہے لیکن ہمارے ثالثی اس میںکمزوری دکھارہے ہیںجبکہ یو نائٹیڈ نیشن کی قرار دادیں موجود ہیں جن کو عمل میں لاتے ہوے کشمیری اپنا فیصلہ کر سکتے ہیں۔انہوں نے شگاف الفاظ میں کہاکہ گلگت اور بلتستان کشمیر کا حصہ ہیںاس پر کسی قیمت سمجھوتہ نہیںہوسکتا۔پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور مشیر حکومت آزاد کشمیر حاجی محمد سعید مغل ایم بی ای نے کہاکہ تحریک کشمیر کے بیس کیمپ کی کمزوری سے مسلہ کشمیر اُلجھتا گیا اور آج بین الاقوامی سطہ پر حالات کروٹ بدلتے بدلتے عالمی برادری بھی ہمارا ساتھ چھوڑ گئی ہے لیکن مظلوم کشمیروں کی دادرسی کے لیے اوورسیز کشمیروں نے مسلہ کشمیر کے لیے تن من دھن کی بازی لگائی اورتحریک پر کوئی کمزوری نہ دکھائی جس کی وجہ سے مسلہ کشمیر زندہ ہے۔کشمیر لبریشن لیگ کے مرکزی رہنما چوہدری لطیف ثانی نے کہا کہ ہمار اپیغام واضع ہے کشمیر کی آزادی کے لیے حق خود ارادیت کا عمل لازمی ہے اس پرسلامتی کونسل میں قرارداد موجود پڑی ہیںاورکشمیر کا بٹوارا کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔پاکستان مسلم لیگ ن آزاد کشمیر مڈلینڈ کے چیرمین چوہدری محمد شکیل نے کہا کہ قوموں کی کامیابی اچھے کردار سے وابسطہ ہیں۔انہوں نے سلامتی کونسل میں وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف کی کشمیر پر دھواں دار تقریر کوقابل ستائش قرار دیا۔مسلم لیگ ن آزاد کشمیر مڈلینڈ کے صدر راجہ امجد نے کہا کشمیر کے نام پر سیاسی دکانوں پر تالا لگنا چائیے اور تحریک پر اتفاق رائے سے اہم پیش رفت ہو سکتی ہے۔دیگر مقررین سے مسلم کانفرنس برمنگھم کے صدر راجہ اسحاق صابر، تحریک کشمیر یورپ کے صدر محمد غالب،مولانا طارق مسعود،ذاہد چوہدری ایڈووکیٹ، تحریک انصاف آزاد کشمیر کے رہنما ناظم حسین۔بین الاقوامی کشمیر رابطہ کمیٹی کے جنرل سیکرٹری مولانا الطاف حسین،رفعت مُغل،جموں و کشمیر پیپلز پارٹی کے رہنما ڈاکٹر شوکت حسین،بین الاقوامی کشمیر رابطہ کمیٹی کے سپریم ہیڈ مولانا بوستان قادری اور دیگر بھی موجود تھے۔قبل ازیں کشمیر کانفرنس سے دن تین بجے کشمیر کنسرن کے زیر اہتمام برمنگھم کے خدمت سینٹر میں کشمیر پر ایک ورکشاپ کا اہتمام بھی کیا جس میں ایم پی خالد محمود نے خطاب کے دوران کہا کہ مسلہ کشمیر پر ہاوس آف کامن کی میٹنگ رومز کو صرف ذاتی تصویری نمائش کے لیے استعمال کیا جاتا ہے اس سے مسلہ کشمیر کو نقصان پہنچ رہاہے،انہوں نے کہامسلہ کشمیر پراہم پیش رفت اسی صورت ممکن ہو گی جب انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پرآواز بلند کریں گے اوراتفاق رائے سے اس پر کا م کرنے کی اشد ضرورت ہے اور اپنے بھر پور تعاون کا یقین دلایا۔ کونسلر چوہدری عنصر علی خان، ڈپٹی لارڈ مئیر برمنگھم سید شفیق شاہ،کونسلر حبیب الرحمن،کونسلر مریم خان،راجہ امجد خان، مولانا محمد بوستان قادری ، چوہدری خادم حسین، چوہدری محمد بشیر رٹوی،خواجہ انعام ا؛لحق، مولانا طارق مسعود، مولانا الطاف حسین ، چوہدری منظور حسین، محمد غالب، ڈاکٹر شوکت، کونسلر چوہدری اللہ دتہ،ساجد یوسف، چوہدری شاہ نواز،چوہدری عبدالخالق،پروفیسر نذیر شال،اور دیگر نے بھی خیالات کا اظہار کیا۔