مقبول خبریں
دار المنور گمگول شریف سنٹر راچڈیل میں جشن عید میلاد النبیؐ کے حوالہ سےمحفل کا انعقاد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
برطانیہ میں آباد ایشیائی مقامی سطح پربہترین اور موثر سیاسی کردار ادا کر رہے ہیں: ہاؤن ہاک بونگ
برمنگھم ...برطانیہ میں شمالی کوریا کے سفیر ہاؤن ہاک بونگ نے کہا ہے کہ شام پر امریکی حملہ عالمی برادری کی رضامندی اور اقوام متحدہ کے اصولوں کی خلاف ورزی ہوگا اور اگر ایسا ہوا تو یہ موجودہ حالات میں عالمی امن کے لئے ایک خطرناک عمل ہوگا۔ امریکہ اور اس کے حامی ملکوں کو چاہے کہ وہ اقوام متحدہ اصولوں کی پاسداری کریں اور اقوام عالم کی رائے اور احسانات کا احترام کریں۔ وہ گزشتہ روز برمنگھم میں یونائیٹڈ وی سٹینڈ تنظیم کے زیر اہتمام تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ عالمی برادری میں پہلے ہی ایس بات پر شکوک و شہبات اور تشویش پائی جاتی ہے کہ امریکہ اس کے اتحادیوں نے اس سے قبل بھی مختلف عرب ملکوں، افغانستان اور دیگر ملکوں میں ایسے الزامات اور شبہات پر حملے کئے یہاں ہزاروں افراد قتل ہوئے اور ان ملکوں پر قبضے کئے گئے یہاں کی معیشتیں تباہ ہوئیں یہاں لوٹ مار اور استحصال کیاگیا اور ان ملکوں دہشت گردی اور انتہا پسندی کے سلسلے شروع ہوگئے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کی غلط اور جارحانہ پالیسیوں کی وجہ سے آج دنیا کے بیشتر ملکوں میں عوام کے لئے شدید مشکلات پیدا ہوگئی ہیں اور علاقائی اور عالمی امن کے لئے شدید مشکلات پیدا ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شام کے تنازع کابہترین اور مناسب حل یہی ہے کہ شام پر بمباری اور شام کے عوام کی تبادہی کی بجائے شام کی حکومت اور مخالفین کو ایک ٹیبل پر لاا جائے اور عالمی طاقتیں اور پڑوسی ممالک شام کے مسئلہ کے حل میں اپنا پرامن اور تعمیری کردار ادا کریں۔ انہوں نے برطانیہ میں ایشین کمیونٹی کے سماجی اور سیاسی کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ مجھے خوشی ہے کہ یہاں آباد ایشیائی مقامی سطح پر نہ صرف اپنا بہترین اور موثر سیاسی کردار ادا کر رہی ہیں بلکہ وہ ایشیائی ملکوں کی ترقی پسند اور عوامی توقوں کے لئے بھی ایک قابل تحسین کردار ادا کر رہے ہیں۔ اس موقع پر ترکی کی جرنلسٹس اوزا منگلون، اوتار جوہل، شہزاد عباس، پولاکینسن، ہرپال برار، سمین احمد، فام اونانی اور دیگر رہنماؤں نے بھی شمالی کوریا کے سفیر سے عالمی مسائل اور صورت حال پر اظہار خیال کیا..