مقبول خبریں
دار المنور گمگول شریف سنٹر راچڈیل میں جشن عید میلاد النبیؐ کے حوالہ سےمحفل کا انعقاد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پولیس کاروائی کے دوران صدمے سے جاں بحق ہونے والے ناظم دن کو سپرد خاک کر دیا گیا
لیڈز ...معروف سماجی اور کاروباری شخصیت حاجی خادم گورسی اور محمد اعظم گورسی آف بلیو لائن ٹیکسی لیڈزکے بھائی چوہدری ناظم گورسی کی نماز جنازہ بلال مسجد لیڈز آ ٹھ ہیئر ہلز لین میں ادا کر دی گئی جس کے بعد انھیں سینکڑوں سوگواروں کی موجودگی میں لیڈز کے مقامی قبر ستان میں سپر د خاک کر دیا گیا ..جنازہ میں دور دور سے سیاسی سماجی اور کارروائی لوگوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی اور سواگواران سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے اس عزم کااظہار کیا کہ وہ اس تکلیف دہ مرحلہ میں ان کے غم میں برابر کے شریک ہیں پوسٹ مارٹم کی رپورٹ آنے کے بعد کسی بھی ممکنہ کارروائی کے لئے بھی وہ اہل خانہ سے بھرپور تعاون کریں گے۔ واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے لیڈز کے علاقے درٹلے میں مقیم 54سالہ پاکستان نژاد ناظم دین کی اس وقت ہلاکت واقعہ ہوئی جب پولیس کے ایک مسلح دستے نے ایک کارروائی کرتے ہوئے ناظم دین کے ایک بیٹے کو مبینہ طور پر کرمنل ڈیمج کے ذمرے میں گرفتار کیا تو ناظم دین پولیس کی جانب یہ بتانے کے لئے آگے بڑھا کہ جس نوجوان کو پولیس گرفتار کررہی ہے دراصل وہ مطلوب نوجوان نہیں بلکہ اس کا چھوٹا بیٹا ہے لیکن پولیس نے مبینہ طرپر اس حرکت کو مزاحمت سمجھا اور ناظم دین کو ایک زور کا دھکا دیا جس سے ناظم دین زمین پر جاگرا اور قریب کھڑے اہل خانہ کے مطابق ناظم دین اسی جگہ جاں بحق ہوگیا جبکہ پولیس کے مطابق ناظم دین کی ہلاکت ہسپتال میں ہوئی۔ معاملے کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے پولیس حکام نے آزادانہ انکوائری کے لئے ایک کمیشن قائم کردیا ہے جو مختلف لوگوں کے معاملے کی چھان بین کے لئے انٹرریوز اور دوسرے شواہداکھٹے کررہے ہیں۔