مقبول خبریں
پاکستان کا دورہ انتہائی کامیاب رہا ،ممبر برطانوی پارلیمنٹ ٹونی لائیڈ و دیگر کی پریس کانفرنس
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
یورپی ممبران پارلیمنٹ کی تحریک حق خود رادیت کو مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے معاونت کی یقین دہانی
بریڈ فورڈ:یورپی پارلیمنٹ میں کنزرویٹو پارٹی کے ارکان ڈینیل ہننان اور امجد بشیر کی طرف سے جموں و کشمیر تحریک حق خود رادیت یورپ کے عہدیداروں کو مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے جدو جہد میں معاونت کی یقین دہانی،سکاٹ لینڈ اور یورپ کیلئے ریفرنڈم ہو سکتا ہے تو کشمیریوں کو بھی یہ حق ملنا چاہئے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ اپنی مرضی سے کر سکیں،ریاست جموں و کشمیر کے عوام یورپی سیاستدان کے مشکور ہیں جو انکے حق خود رادیت کی کھل کر حمایت کر رہے ہیں،برطانیہ اور یورپ میں متحرک کشمیری پوری قوم کے سفیر ہیں جن کی محنت اور سرگرمیوں سے مسئلہ کشمیر عالمی سطح پر زندہ ہے،آل جمو ں و کشمیر مسلم کانفرنس کے مرکزی چیف آرگنائزر اور سابق وزیر مرزا شفیق نے تحریک کے سربراہ راجہ نجابت حسین اور مسلم کانفرنس برطانیہ کے کنوینئر چوہدری محمد بشیر رٹوری اور دیگر رہنمائوں کے ہمراہ سابق وزیر خارجہ بیرونس سعیدہ وارثی،دونوں یورپی ارکان پارلیمنٹ اور بریڈ فورڈ ویسٹ کی ممبر پارلیمنٹ ناز شاہ سے ملاقات کے موقع پر کیا جبکہ اس موقع پر سائوتھ ایسٹ آف انگلینڈ سے کنزرویٹو یورپی ممبر پارلیمنٹ ڈینیل ہننان نے تحریک کی کشمیر پٹیشن پر دستخط کر کے برطانوی اور یورپی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پر تفصیلی بحث کا بھی مطالبہ کیا،یارکشائر سے کنزرویٹو ممبر پارلیمنٹ امجد بشیر نے ان ملاقاتوں کا اہتمام کیا تھا جس پر کشمیری رہنمائوں نے انکا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ریاستی عوام کی سفارتی محاذ پر آج ایک مضبوط لابی موجود ہے جس کا کریڈٹ جہاں پر تحریک حق خود ارادیت یورپ جیسی تنظیموں کا جاتا ہے وہاں پاکستانی و کشمیری نژاد ممبران پارلیمنٹ کا بھی خصوصی کردار ہے جو اسے ایک قومی فرض سمجھ کر ادا کر رہے ہیں،تحریک کے چیئرمین راجہ نجابت حسین اور سر پرست سردار عبدالرحمان خان نے تمام پارٹیوںکے ان ارکان کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا جو خالصتاً انسانی ہمدردی اور انصاف پسندی کی بناء پر کشمیر ی عوام کے کیس میں حمایت کر رہے ہیں،مسلم کانفرنس کے مرکزی چیف آرگنائزر مرزا شفیق جرال نے برٹش کشمیریوں کو بھی خراج تحسین پیش کیا جو ریاستی عوام کا کیس عالمی سطح پر اپنے وسائل سے اجاگر کر رہے ہیں جسے پوری قوم قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے،مگر ضروری ہے کہ ریاستی عوام کے اس عالمی کیس کو نوجوانوں اور خواتین کے علاوہ عام یورپی عوام تک بھی بلا امتیاز سیاسی وابستگی پہنچائیں تاکہ ہماری قوم بھی فلسطینیوں کی طرح موثر حمایت حاصل کر سکے اور کشمیر قوم بھی آزادی لے سکے،انہوں نے کہا کہ ریاست کے اندر اور آزاد کشمیر و گلگت بلتستان کے عوام پوری ریاست کی آزادی کیلئے چلائی جانیوالی اپنے بزرگوں کی اس تحریک کو منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے جدو جہد جاری رکھے اور کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کیا جائے گا،ڈینیل ہننان ایم ای پی نے کہا کہ وہ راجہ نجابت حسین کو1998سے جانتے ہیں اور جس طرح مسلسل وہ مسئلہ کشمیر پر لابی کر رہے ہیں ہم تمام وہ برطانوی سیاستدان انکے ساتھ ہیں جو قوموں کے حق خود ارادیت پر یقین رکھتے ہیں اور انکی پوری ٹیم کو برطانیہ میں ہونیوالے ریفرنڈم میں بھرپور حصہ لے کر کشمیری عوام کیلئے ریفرنڈم کا نکتہ نظر اجاگر کرنا ہو گا،بیرونس سعیدہ وارثی نے اس موقع پر کہا کہ برطانیہ نے چونکہ تقسیم ہند کے وقت مسئلہ کشمیر چھوڑا تھا اس لئے برطانیہ کا اخلاقی،سیاسی اور برٹش کشمیریوں کی وجہ سے سماجی حق بھی ہے کہ وہ پاکستان اور بھارت سے مسئلہ کشمیرکے حل اور مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بند کروانے میں اپنا کردار ادا کرے،بریڈ فورڈ کی ممبر پارلیمنٹ ناز شاہ نے کہا کہ بحیثیت ممبر پارلیمنٹ اور کشمیر ی بھی وہ تحریکی رہنمائوں کی ہر جدو جہد میں شانہ بشانہ شامل ہیں اور مسئلہ کشمیر کو پارلیمنٹ میں اٹھانے کیلئے بھی تحریک کی پٹیشن پر دستخط کر چکی ہیں اس موقع پر تحریک کے شعبہ خواتین کی متعدد ارکان کے علاوہ وائس چیئرمین امجد حسین مغل،سیکرٹری جنرل محمد اعظم بھی موجود تھے۔بیورو رپورٹ:فیاض بشیر