مقبول خبریں
نائجیریا کمیونٹی ایسوسی ایشن کا میئر چیئرٹی فنڈریزنگ ڈنر کا اہتمام ،مئیر کونسلر محمد زمان کی خصوصی شرکت
بریگزیٹ بحران :کنزرویٹو پارٹی کی تین خواتین ممبر کی آزاد گروپ میں شمولیت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
میں روشنی سے اندھیرے میں بات کرتا ہوں!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
خواتین کو اغواء کرکے سالوں تک اپنے گھر میں قید رکھنے والے مجرم کی امریکی جیل میں خودکشی
نیو یارک ...امریکی ریاست اوہائیو میں 3 خواتین کو اغواء کرکے سالوں تک اپنے گھر میں قید رکھنے والے مجرم ایریل کاسترو نے جیل میں خود کشی کر لی۔ ایریل کاسترو کو امریکی عدالت نے 3 خواتین کو ایک دہائی تک قیدی بنانے اور جنسی زیادتی کرنے پر عمر قید اور ایک ہزار سال قید کی اضافی سزا سنائی تھی۔53 سالہ ایریل کاسترو نے ان خواتین کو ان کی مرضی کیخلاف قید میں رکھا اور ان سے جنسی زیادتی کرتے رہے۔ برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق کاسترو کو جب سیل میں لٹکا ہوا پایا گیا تو جیل کے میڈیکل سٹاف نے ان کی جان بچانے کی کوشش کی لیکن ناکامی کے بعد انہیں جیل کے ہسپتال روانہ کر دیا گيا جہاں امریکی وقت کے مطابق رات 9:30 بجے کے قریب انہیں مردہ قرار دیا گيا۔ جیل کے حکام نے کہا ہے کہ ان کی موت منگل کو دیر گئے ہسپتال میں ہوئی کیونکہ جیل کا میڈیکل سٹاف انہیں بچانے میں ناکام رہے۔ ایریل کاسترو کو انتہائی سخت حفاظتی اقدامات کے تحت حراست میں رکھا گیا تھا۔ وہ ایک ایسے سیل میں تنہا تھے اور ہر 30 منٹ کے وقفے پر ان کی سیل کا راؤنڈ لگایا جاتا تھا۔ اس حادثے کے بارے میں تفصیلی تحقیقات کی جاری ہیں۔سابق سکول بس ڈرائیور نے لڑکیوں کو کلیولینڈ کی گلیوں سے 04-2002ء کے دوران اغواء کیا تھا۔ اغوا کے وقت جینا کی عمر 14 سال تھی، امانڈا 16 سال کی تھیں جبکہ میشیل 21 سال کی تھیں۔ کاسترو کی گرفتاری اور تینوں خواتین کی بازیابی کے بعد چلنے والے مقدمے کے دوران کاسترو نے عدالت میں کہا تھا کہ یہ سب ان کے سیکس کے عادی ہونے کی وجہ سے ہوا۔