مقبول خبریں
پاکستان کا دورہ انتہائی کامیاب رہا ،ممبر برطانوی پارلیمنٹ ٹونی لائیڈ و دیگر کی پریس کانفرنس
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مسئلہ کشمیر پر صحیح پیش رفت نہ ہونے کی وجہ کمزور پاکستان ہے جو مسائل کے گرداب میں ہے:لارڈ قربان
لوٹن ... پاکستان کو بے شمار مشکلات کا سامنا ہے مگر اس کے باجود پاکستان نے بڑی کامیابیاں حاصل کی ہیں۔ اس وقت پاکستان اور چائینہ نے مل کر جو گوادر منصوبہ شروع کیا ہے اس کے دوررس نتائج مرتب ہونگے اور اس سے پاکستان کی معیشت انتہائی مضبوط ہونے کے ساتھ ساتھ ملک سے انرجی بحران کا خاتمہ ہوگا۔ ان خیالات کا اظہارپاکستان کے سنیٹر و چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے پیداوا رجنرل ریٹائرڈ عبدالقیوم نے برطانیہ آمد پر اپنے اعزاز میں منعقدہ ایک افطار ڈنر میں کیا جس کا اہتمام لوٹن کے صحافی شیراز خان نے کیا۔تقریب کی صدارت پیر سلطان فیاض الحسن سروری قادری نے کی جبکہ لارڈ قربان حسین،قاضی عبدالعزیزچشتی،مفتی خالد محمود،سابق میئرز کونسلرز ریاض بٹ،راجہ سلیم،نسیم ایوب، چوہدری محمد ایوب،طاہر ملک، محمد سلیم، پروفیسر ممتاز حسین بٹ،حسین سرور شہید، چوہدری محمد شریف،پروفیسر راجہ ظفر خان،سید تحسین گیلانی،جی عبدالعزیز و دیگر شریک ہوئے۔انہوں نے کہا پاکستان اس وقت ترقی کی منازل طے کر رہا ہے۔موجودہ حکومت نے ملک سے دہشت گردی کے خاتمہ کیلئے بہترین حکمت عملی اپنائی ہے۔پاک فوج کا ضرب عضب اپریشن کی کامیابی پاکستان کی بڑی کامیابی ثابت ہوا ہے۔کراچی بھتہ مافیا کا خاتمہ اور بلدیاتی اور پاک چائینہ کے اشتراک سے گوادر منصوبے کا شروع ہونا پاکستان کی نئی راہیں متعین کرے گا۔جنرل (ر) عبدالقیوم کا کہنا تھا کہ اوورسیز پاکستانی کمیونٹی ہمارا سرمایہ ہے جنکی خدمات ڈھکی چھپی نہیں ہیں۔صدر تقریب پیر سلطان فیاض الحسن سروری قادری نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ ایک سنجیدہ مسئلہ ہے مگر حیرانگی کی بات یہ ہے پاکستان کی جانب سے جو کشمیر کمیٹی کا چیئرمین بنایا جاتا ہے وہ مسئلہ کشمیر کے بارے کوئی معلومات نہیں رکھتا جس کا نقصان یہ ہے کشمیر پر لانگ کیلئے پیش رفت پچھلے دس سالوں سے صفر نظر آ رہی ہے۔انھوں نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان ہم سب کا ہے اور ہر ایک پاکستانی اپنے وطن سے والہانہ محبت رکھتے ہیں یہی جذبہ ہمیں کہیں ناکام نہیں ہونے دیتا۔لارڈ قربان حسین نے کہا کہ پاکستان ہی وہ واحد ملک ہے جو کشمیریوں کی بھرپور نمائندگی کر رہا ہے تاہم بھارت کے مقابلے پاکستانی قیادت اس طرح جاندار موقف نہیں اختیار کر رہی جس طرح بھارت پروپیگنڈہ کر رہاہے۔انھوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر پر صحیح پیش رفت نہ ہونے کی وجہ کمزور پاکستان ہے جو مختلف مسائل کے گرداب میں ہے پاکستان کا مضبوط ہونا گویا کشمیرکاز کے مضبوط ہونے کے مترادف ہے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے جماعت اہلسنت برطانیہ و یورپ کے جنرل سیکرٹری علامہ قاضی عبدالعزیز چشتی نے جنرل ریٹائرڈ عبدالقیوم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اوورسیز پاکستانی کمیونٹی کی نمائندگی اور ان کے مسائل کے حل کیلئے آپ جیسے فرد کو وزارت لینی چاہیے تھی جو اوورسیز پاکستانی کمیونٹی کی نمائندگی کرتا۔اس وقت بے شمار ایسے ہیں جو حل طلب ہیں ۔انھوں نے کہا کہ اگر پاکستان اوورسیز کمیونٹی کو قیمتی سرمایہ سمجھتا ہے اس کمیونٹی کے مسائل بھی کرے ۔ سابق میئر کونسلر ریاض بٹ،سابق میئر کونسلر راجہ سیلم،کونسلر محمد سلیم، سابق ڈپٹی میئر کونسلر طاہر ملک، کونسلر نسیم ایوب، کونسلر چوہدری محمد ایوب نے سوالات سیشن میں جنرل ریٹایرڈ عبدالقیوم کی توجہ مسئلہ کشمیر کی مبذول کرواتے ہوئے کہا کہ پاکستان حکومت کو اس مسئلہ کو سنجیدہ لیتے ہوئے اس کے حل کیلئے کشمیریوں اعتماد میں لیکر بھارت سے بات چیت کرنی ہوگی۔