مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
چوگام میں امام مسجد پر کالاقانون پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کرنے پر احتجاجی مظاہرے
سرینگر...مقبوضہ کشمیر میں قاضی گنڈ کے علاقے چوگام میں ایک امام مسجد پر کالاقانون پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کرنے کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرے کئے گئے..پولیس کی فائرنگ,آنسو گیس کی شیلنگ اور لاٹھی چارج کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوگئے اطلاعات کے مطابق امام مسجدحافظ سید کفایت کو بھارتی پولیس نے کچھ عرصہ پہلے گرفتارکیا تھا۔ علاقے کے لوگوں کا کہنا ہے کہ امام مسجد بے گنا ہ ہیں اور انہیں بھارتی انتظامیہ کے آلہ کارسیاسی پارٹیوں سے منسلک کارکنوں کی ایما پرنشانہ بنایا گیا ہے۔مظاہرین انکی فوری رہائی کا مطالبہ کررہے تھے۔ دارالعلوم سید المرسلین سے منسلک حافظ عبدالرحمان اشرفی کا کہنا تھاکہ جس روزچوگام میں کشتواڑکے مسلم کش فسادات کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے گئے اس دن امام مسجدحافظ کفایت ڈورہ میں اپنے آبائی گاﺅںگئے ہوئے تھے اوران کا مظاہروں سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ پولیس کے ترجمان نے میڈیا سے باتیں کرتے ہوئے حافظ کفایت پر کشتواڑ میں فرقہ وارانہ فسادات کے بعد لوگو ں کو اکسانے کا الزام لگایا اورکہا کہ انہیں جموں کی کٹھوعہ جیل منتقل کیا گیا ہے۔ چوگام کے لوگوں نے خبردار کیا کہ اگر انتظامیہ نے امام کو فوری طور پر رہا نہ کیا تو وہ مزید مظاہرے کریں گے۔