مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کالعدم جمہوری صدرمرسی کے خلاف تشددپر مقدمہ چلایا جائے گا: مصری سرکاری ذرائع ابلاغ
مصر میں سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق برطرف صدر محمد مرسی کے خلاف تشدد اور قتل پر اکسانے کے الزامات پر مقدمہ چلایا جائے گا۔ وکیلِ استغاثہ کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ مرسی پر 14 دیگر مشتبہ افراد سمیت مقدمہ چلے گا، تاہم اس سلسلے میں کسی تاریخ کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ الزامات کی وجہ گزشتہ دسمبر صدارتی محل کے باہر مرسی کے حامیوں اور مخالفین کے درمیان جھڑپیں ہیں، جن میں سات افراد ہلاک ہوئے تھے۔ فوج کی جانب سے 3 جولائی کو اقتدار سے ہٹائے جانے کے بعد مرسی منظرِ عام پر نہیں آئے ہیں۔ مرسی کی بحالی کا مطالبہ کرنے والی جماعت اخوان المسلمین نے دارالحکموت قاہرہ میں دو بڑے احتجاجی کیمپ بھی قائم کیے۔ جولائی کے اواخر میں ان کیمپوں کے خلاف پولیس کی کارروائی میں سینکڑوں شہری ہلاک ہو گئے تھے۔ اخوان نے ہلاکتوں کی تعداد ہزاروں میں بتائی تھی۔ مصری فوج نے عبوری حکومت قائم کی تھی، جس نے نئے انتخابات منعقد کروانے اور آئین میں ترمیم کا اعلان کیا ہے۔ عبوری صدر عدلی منصور نے مجوزہ آئینی ترامیم پر تبادلہ خیال کے لیے 50 رکنی گروپ کا اعلان بھی کیا ہے، جس میں آزاد خیال شخصیات اکثریت میں ہیں۔