مقبول خبریں
دی سنٹر آف ویلبینگ ، ٹریننگ اینڈ کلچر کے زیر اہتمام دماغی امراض سے آگاہی بارے ورکشاپ
پارٹی رہنما شعیب صدیقی کو پاکستان تحریک انصاف پنجاب کا سیکریٹری جنرل بننے پر مبارک باد
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
جس لڑکی نے خواب دکھائے وہ لڑکی نابینا تھی!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کالعدم جمہوری صدرمرسی کے خلاف تشددپر مقدمہ چلایا جائے گا: مصری سرکاری ذرائع ابلاغ
مصر میں سرکاری ذرائع ابلاغ کے مطابق برطرف صدر محمد مرسی کے خلاف تشدد اور قتل پر اکسانے کے الزامات پر مقدمہ چلایا جائے گا۔ وکیلِ استغاثہ کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ مرسی پر 14 دیگر مشتبہ افراد سمیت مقدمہ چلے گا، تاہم اس سلسلے میں کسی تاریخ کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ الزامات کی وجہ گزشتہ دسمبر صدارتی محل کے باہر مرسی کے حامیوں اور مخالفین کے درمیان جھڑپیں ہیں، جن میں سات افراد ہلاک ہوئے تھے۔ فوج کی جانب سے 3 جولائی کو اقتدار سے ہٹائے جانے کے بعد مرسی منظرِ عام پر نہیں آئے ہیں۔ مرسی کی بحالی کا مطالبہ کرنے والی جماعت اخوان المسلمین نے دارالحکموت قاہرہ میں دو بڑے احتجاجی کیمپ بھی قائم کیے۔ جولائی کے اواخر میں ان کیمپوں کے خلاف پولیس کی کارروائی میں سینکڑوں شہری ہلاک ہو گئے تھے۔ اخوان نے ہلاکتوں کی تعداد ہزاروں میں بتائی تھی۔ مصری فوج نے عبوری حکومت قائم کی تھی، جس نے نئے انتخابات منعقد کروانے اور آئین میں ترمیم کا اعلان کیا ہے۔ عبوری صدر عدلی منصور نے مجوزہ آئینی ترامیم پر تبادلہ خیال کے لیے 50 رکنی گروپ کا اعلان بھی کیا ہے، جس میں آزاد خیال شخصیات اکثریت میں ہیں۔