مقبول خبریں
کشمیر سالیڈیرٹی کیلئے یکم فروری سے 11فروری تک تقریبات منعقد کرائی جائیں گی
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
جے آئی ٹی رپورٹ بد اعتمادی کا شکار، کارکنوں نے قربانی کی مثال قائم کی: ڈاکٹر حسن محی الدین قادری
بریڈفورڈ:منہاج القرآن انٹر نیشنل سپریم کونسل کے صدر ڈاکٹر حسن محی الدین قادری نے کہا ہے کہ نام نہاد جے آئی ٹی کی رپورٹ بد اعتمادی کا شکار ہے کیونکہ بدنام زمانہ رپورٹ آنے کے بعد بھی جے آئی ٹی کی جانب سے ہمارے چالیس افراد کو مختلف شہروں سے بذریعہ خط گواہی کیلئے طلب کیا گیا وہ گزشتہ روز بریڈ فورڈ میں منہاج القرآن برطانیہ کی تنظیم نو کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے ان کا کہنا تھا کہ منہاج القرآن کے کارکنوں نے قربانی کی جو مثال قائم کی ہے اس کو پاکستان کی تاریخ میں سنہری حروف سے لکھا جائے گا جبکہ قاتل حکمرانوں کو اس وقت تک ان بے گناہوں کے خون سے چھٹکارا حاصل نہیں ہو گا جب تک وہ خود کو عدل و انصاف کے تقاضوں کے مطابق پیش نہیں کر دیتے، ڈاکٹر حسن کا کہنا تھا کہ مشرق وسطیٰ اور پاکستان سمیت برما تک مسلمانوں کا خون پانی کی طرح بہایا جا رہا ہے لیکن مسلمان حکمران اس پر عملی اقدامات کرنے سے گریزاں ہیں کرپٹ اور بد دیانت قیادت کبھی بھی اپنی عوام کے تحفظ اور حقوق کیلئے آواز بلند کر سکتی انہوں نے کہا منہاج القرآن نے ہمیشہ شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری کی قیادت میں وقت کے یزیدوں کو للکارا ہے خواہ ان کا تعلق اندرونی یا بیرونی سطح پر ہو دہشت گردی کے خلاف فتویٰ اور اس سازش کے پیچھے خوارج کے کردار کو جس طرح عالمی سطح پر سامنے لایا گیا ہے یہ ڈاکٹر قادری کی علمی و تحقیقی صلاحیتوں کا منہ بولتا ثبوت ہے انہوں نے اعلان کیا کہ چند دنوں بعد برطانیہ اور یورپ کے مسلمان نوجوان نسل کو انتہائی پسندی اور دہشت گردی سے بچانے کیلئے اعلیٰ سطح پر سلیبس کو متعارف کروایا جا رہا ہے جس کو منہاج القرآن کے پچاس کے قریب تربیت یافتہ نوجوان کالجوں،یونیورسٹیوں اور سکولوں سمیت مساجد و مدارس میں جا کر نئی نسل تک پہنچائیں گے تاکہ وہ علمی سطح پر ایسے نام نہاد جہادیوں کا مقابلہ کر سکیں جو جہاد کے نام پر دنیا میں فساد پھیلا کر بد امنی کا باعث بن رہے ہیں،اس موقع پر برما کے مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف قرارداد مذمت بھی پیش کی گئی اور مسلمان ممالک سمیت اقوام متحدہ سے فوری طور پر مداخلت کا مطالبہ کیا گیا،آئندہ دو سال کیلئے منہاج القرآن برطانیہ کے صدر کیلئے سید علی عباس بخاری ایڈووکیٹ اور سیکرٹری جنرل کیلئے معظم رضا کو چنا گیا جب کہ شاہد اقبال،عاصم اکرم،عبدالقدیر،رضوان رحمن،احمد نواز،تنویر پاشا،علامہ شاہد بابر،عثمان نذیر،ڈاکٹر رفیق،علامہ ذیشان قادری،ڈاکٹر زاہد اقبال،عباس عزیز،آصف حبیب،علامہ صادق قریشی،علامہ محمد افضل سعیدی کو دیگر ذمہ داریوں کیلئے منتخب کیا گیا،تقریب سے امیر تحریک منہاج القرآن برطانیہ ظہور احمد نیازی،علامہ اشفاق عالم قادری،محترمہ فاطمہ مشہدی،محترمہ مسرت حسین،عثمان ریاض،یاسمین حسین اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔