مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
جس طرح میں نے میر پور الیکشن میں پانچ مخالفین کو ہرایا اسی طرح لیبر پارٹی بھی سبقت لے گی: بیرسٹر سلطان
ناٹنگھم ... آزاد کشمیر کے سابق وزیر اعظم و پاکستان تحریک انصاف آزاد کشمیرکے صدر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا ہے کہ میں 50ملین کشمیریوں کا لیڈر ہونے کی حیثیت سے برطانیہ کے انتخابات میں لیبر پارٹی کی حمائت کرتا ہوں کیونکہ لیبر پارٹی نے مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے کوششیں کی ہیں ۔ انہوں نے زور دیا کہ برطانوی انتخابات میں ارکان پارلیمنٹ اور کونسلر کے لیبر امیدواروں کو ووٹ دئے جائیں کیونکہ اگر لیبر پارٹی الیکشن جیت گئی تو کشمیر کی آزادی یقینی ہو جائے گی ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے تحریک انصاف ایسٹ مڈلینڈز کے صدر راجہ بشارت سلیم کی طرف سے منعقدہ استقبالیہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ جس طرح انہوں نے میرپور کے الیکشن میں پانچ حکومتوں کو شکست سے دوچار کیا اسی طرح لیبر پارٹی بھی اپنے پانچ مخالفین کو چاروں شانے چت گرادے ہماری کمیونٹی اس میں لیبر پارٹی کا بھرپور ساتھ دے گی۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر میںآزادی کی جدوجہد شروع ہونے کی اصل وجہ یہ تھی کہ ایک طرف تو بھارت مقبوضہ کشمیر کے عوام کو ان کا حق خودارادی نہیں دے رہااور دوسری طرف بھارتی سیکیورٹی فورسز نے کشمیریوں پر ظلم و بربریت کا بازار گرم کر رکھا ہے ۔ انسانی حقوق کی پامالی، گینگ ریپ، اجتماعی قبروں کے ساتھ ساتھ قید وبند کی صعوبتوں کے باعث کشمیری قوم اپنے حقوق کے لئے اٹھ کھڑی ہوئی ہے اور اپنی آزادی کی جنگ لڑ رہی ہے ۔ اگر آج مسئلہ کشمیر حل ہو جائے تو خطے میں امن قائم ہوجائے اور کوئی لڑائی نہ ہو ۔ تقریب سے سابق ممبر پارلیمنٹ کرس لزلی، ورنن کوکر اور لیسلن گرین وڈ نے بھی خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ دوبارہ منتخب ہوکر مسئلہ کشمیر کو اسی ٓب و تاب سے زندہ رکھیں گے جی طرح پہلے بیرسٹر سلطان محمود کیساتھ مل کر رکھا۔ان کا بھی کہنا تھا کہ بھارت کو یہ بات سمجھ لینی چاہیئے کہ مسئلے کے حل میں ہی سب کی بھلائی ہے۔اس موقع پر میزبان تقریب بشارت سلیم، پروفیسر مقصود ابدالی، ڈاکٹر نثار ابدالی، اور دیگر نے بھی اظہار خیال کیا۔