مقبول خبریں
پاکستانی کمیونٹی سنٹر اولڈہم میں بیڈمنٹن ٹورنامنٹ کا انعقاد، برطانیہ بھر سے 20 ٹیموں کی شرکت
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کنزرویٹو پارٹی کو کامیاب کرکے وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون کو دوبارہ منتخب کیا جائے ،ہوگو سوائر
بریڈ فورڈ :برطانوی وزیر خارجہ برائے سائوتھ ایشیا ہوگو سوائر نے یارکشائر میں بسنے والی کامن ویلتھ کمیونٹی سے اپیل کی ہے کہ وہ کنزرویٹو پارٹی کے پارلیمانی اور مقامی امیدواروں کو کامیاب کرکے وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون کو دوبارہ منتخب کریں تا کہ برطانیہ کے وقار کو جہاں عالمی سطح پر پذیرائی میں اضافہ ہوا وہیں برطانیہ میں تعلیم صحت اور بیروزگاری کے خاتمے کیلئے بھی ہمارے امیدواروں کو کامیابی ضروری ہے ۔ مسئلہ کشمیر کے منصفانہ حل اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا برطانوی حکومت قریب سے جائزہ لے رہی ہے ۔ کشمیریوں کو انکے دلوانے کیلئے برطانوی حکومت کشمیریوں کا ساتھ دے جبکہ بھارت اور پاکستان پر دبائو ڈالا جائے کہ وہ کشمیریوں کی خواہشات کا احترام کریں ۔ وزیر مملکت کے میزبان اور ممتاز کشمیری رہنما راجہ نجابت حسین کی طرف سے برٹش کشمیریوں کے جذبات کی ترجمانی جبکہ پڑسی کے ممبر پارلیمنٹ سٹیورٹ اینڈریو ، بریڈ فورڈ ایسٹ کے کنزرویٹو پارلیمنٹری امیدوار افتخار احمد ، ہڈر سفیلڈ کی کنزرویٹو امیدوار عطرت علی ، بریڈ فورڈ پارٹی کے صدر محمد ریاض ، بریڈ فورڈ مور سے امیدوار کونسلر راجہ سخاوت حسین ۔ بولنگ بارکر اینڈ سے امیدوار کونسلر محمد جمیل نے استقبالیہ سے خطاب کیا جبکہ حاجی محمد نجیب نے تلاوت کلام پاک سے تقریب کا آغاز ہوا اور چوہدریکرامت حسین نے ہدیہ نعت پیش کیا اس موقع پر خصوصی طور پر لٹل ہارٹن وارڈ سے کنزرویٹو پارٹی کی کونسلر کی امیدوار صبیحہ محبوب نے خواتین سے اپیل کی کہ وہ کنزرویٹو پارٹی کو کامیاب کریں جبکہ بریڈ فورڈ مور کیلئے کنزرویٹو پارٹی کے امیدوار سابق کونسلر راجہ سخاوت حسین کی الیکشن مہم کا باقاعدہ آغاز بھی کیا گیا جس کیلئے وارڈ بھر سے عوامی نمائندوں نے انہیں بھر پور حمایت کا یقین دلاتے ہوئے کنزرویٹو پارٹی کے پارلیمانی امیدواروں کی بھی حمایت کی ۔ مہمان خصوصی فارن اینڈ کامن ویلتھ کے وزیر برائے سائوتھ ایشیا ہوگر سوائر نے اپنے خطاب میں کہا کہ وہ یاکشائر کے دورے میں یہاں کے تمام حلقوں کے امیدواروں کی حمایت کیلئے اس علاقے کا دورہ کر رہا ہوں اور توقع کرتا ہوں کہ جہاں آپ پڑسی کے ممبر پارلیمنٹ سٹیورٹ اینڈریو کو دوبارہ کامیاب کریں گے وہیں افتخار احمد اور عطرت علی بھی بھاری تعداد میں ووٹ ڈالیں اور اس علاقے کے ممبران پارلیمنٹ نے جس انداز میں آپکی کنزرویٹو پارٹی کے نمائندوں کی حیثیت سے فعال کردار ادا کیا ہے اور اس ملک کی معیشت کے پہیے کو دوبارہ مضبوطی کی طرف گامزن کیا ہے جس کا تقاضا ہے کہ ہماری حکومت کا تسلسل قائم رہنا چاہئے اور ڈیوڈ کیمرون کی قیادت میں اس ملک کا نظام چلانے کیلئے ہمیں کسی اتحاد کے بغیر اکیلے حکومت بنانے کا موقع ملنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ لیبر پارٹی جس طرح بریڈ فورڈ میں منتشر ہے اسی طرح مرکزی سطح پر مختلف گروپوں میں بٹی ہوئی مگر کنزرویٹو پارٹی پورے ملک میں متحد و منظم ہو کر الیکشن لڑ رہی ہے اس لئے آپ لوگوں کا بھی فرض بنتا ہے کہ اس شہر اور لیڈز میں بھی کنزرویٹو پارٹی کو تمام سیٹیں ملیں ۔ اس موقع پر انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ مقامی امیدواروں کو بھی کامیاب کریں جو پارلیمنٹری سیٹ جیتنے کیلئے بہت ضروری ہے ۔ پڑسی کے ممبر پارلیمنٹ نے کہا کہ وہ جب سے منتخب ہوئے ہیں راجہ نجابت حسین اور انکی ٹیم کے ساتھ ملکر نہ صرف اپنے حلقے میں بسنے والے عوام کی نمائندگی کرتے رہیں ہیں بلکہ بریڈ فورڈ میں آکر بھی کشمیریوں اور مقامی کاروباری شخصیات سے ملاقاتیں کرتے رہے جبکہ پارلیمنٹ میں کشمیر پاکستان اور سلاموفوبیا کی پارلیمنٹری کمیٹی کے چیئرمین کی حیثیت سے بھی اپنا بھر پور کردار ادا کرتے رہیں ہیں اور آئندہ بھی اپنا حق ادا کرینگے ۔ انہوں نے راجہ نجابت حسین کی کاوشوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ وہ مسئلہ کشمیر کے حل اور کشمیری کے حق خودارادیت کے حصول تک اپنی معاونت جاری رکھیں گے جبکہ مقامی مسائل پر بھی توجہ دیں گے ۔ کنزرویٹو پارٹی کے بریڈ فورڈ ایسٹ سے امیدوار افتخار احمد نے تفصیلی خطاب میں بریڈ فورڈ کے عوام سے مطالبہ کیا کہ وہ لیبر پارٹی کو بار بار جتوانے کی بجائے کنزرویٹو پارٹی کو موقع مہیا کریں تو تبدیلی کے واضح نشانات دکھائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ اس شہر کی بد حالی اور گندگی کے علاوہ بیروزگاری اور بد حالی کی دمہ دار لیبر پارٹی ہے جس سے جان چھڑا کر ہی اس شہر کے مستقبل کو سنوارا جا سکتا ہے ۔ انہوں نے مقامی ساتھی امیدواروں کو کامیاب کرنے کی اپیل کی جبکہ وزیر خارجہ کو بریڈ فورڈ ایسٹ آنے پر خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ جس طرح کنزرویٹو وزراء ہماری الیکشن مہم میں دلچسپی لے رہے ہیں وہ ہمارے لئے حوصلہ افزا ہے ۔ ہڈر سفیلڈ کی پارلیمانی امیدوار عطرت علی نے اپنے خطاب میں کہا کہ مسئلہ کشمیر اور پارٹی کیلئے ہم نے ماضی میں جس طرح کام کیا ہے اور ہماری کنزرویٹو ٹیم کو اگر آپ نارتھ آف انگلینڈ سے منتخب کیا اس علاقے میں ترقی اور مسائل کے حل کیلئے حکومت بھی خصوصی توجہ دے گی انہوں نے افتخار احمد اور بریڈ فورڈ کے مقامی امیدواروں کو بھاری اکثریت سے کامیاب کرنے کی بھی اپیل کی ۔ عطرت علی نے کہا کہ کنزرویٹو پارٹی کی قیادت جہاں عالمی سطح پر موثر قیادت کر رہی ہیں وہیں اس ملک کے عوام کی فلاح و بہبود کیلئے بھی ہمار پاس واضح اور موثر پروگرام موجود ہے جو ہمارے دوبارہ اقتدار میں آنے سے مکمل ہو گا ۔ انہوں نے تمام پارٹی کارکنوں اور عوام سے بھی اپیل کی وہ آنیوالے انتخابات کیلئے ملک بھر میں اپنے دوستوں ، رشتے داروں اور ساتھیوں کو ووٹ رجسٹرڈ کرانے اور انتخابات میں بھر پور شرکت پر بھی آمادہ کریں ۔ جموں و کشمیر تحریک حق خودارادیت یورپ کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے برطانوی وزیر خارجہ کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ برطانیہ میں ایک ملین سے زائد کشمیری اور بریڈ فورڈ میں بسنے والے 80% پاکستانی سابق ریاست جموں و کشمیر کے باسی ہیں جنہوں نے برطانیہ کو اپنا دوسرا وطن بنایا تھا مگر اب انہوں نے اسے پہلا وطن بنا لیا ہے اور ہمیں سب سے زیادہ مسئلہ کشمیر کے حل نہ کرانے پر تشویش ہے جبکہ مقامی مسائل کے ساتھ ساتھ فلسطین اور مسلمانوں کیخلاف چلائی جانیوالی مہم پر بھی ہمیں تحفظات ہیں اس لئے ہماری حکومت کو مسلمانوں پر خصوصی توجہ دینا ہو گی جبکہ بریڈ فورڈ ایسٹ اور پڑسی کے علاوہ ہم اپنے کشمیر دوست اور پاکستان دوست ارکان کو بھی بھاری اکثریت سے کامیاب کروائیں گے مگر حکومت کو بھی ہماری طرف توجہ دینا ہو گی ۔ انہوں نے خصوصی طور پر مسئلہ کشمیر کے حقیقی فریق کشمیریوں کو نظر انداز کرکے پاکستان اور بھارت کے درمیان مذاکرات کرنے کو زیادتی قرار دیا اور کشمیریوں کی شمولیت کا بھی مطالبہ کیا ۔ اس موقع پر کنزرویٹو بریڈ فورڈ کے صدر اور سابق پارلیمانی امیدوار محمد ریاض نے اپنے خطاب کے موقع پر لیبر پارٹی کی ناقص پالیسیوں اور لیبر کونسلروں کی نا اہلی کو تنقید کا نظانہ بناتے ہوئے کہا کہ ہمارے اس شہر کی ساری خرابیوں کی ذمہ دار لیبر پارٹی ہے جبکہ 1988 سے قبل بریڈ فورڈ دوسرے شہروں سے بہت آگے تھا مگر نا اہل لوگ اس شہر سے جا کر ہائوس آف کامنز کوئی بات اور نمائندگی نہیں کرتے رہے اس لیے کنزرویٹو پارٹی کو موقع دیں اور ہمارے ایم پی اور کونسلر بنائیں ۔ اس موقع پر کنزرویٹو پارٹی کے دیگر کونسلر کے امیدواران چوہدری عبدالقیوم ، ماجد جہانگیر ، بریڈ فورڈ ایسٹ کے چیئرمین راجہ اشتیاق احمد سمیت درجنوں پارٹی رہنمائوں نے بھی استقبالیہ میں شرکت کی ۔بیورو رپورٹ:فیاض بشیر