مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال نےرضاکارانہ خدمات پرتنظیم وائی فائی کو تعریفی سرٹیفکیٹ اور شیلڈ سے نوازا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
استعمال کنندگان بارے معلومات کیلئے 70 سے زائد ملکوں کی حکومتوں کا فیس بک سے رابطہ
سلاؤ ...فیس بک، مائکروسافٹ اور گوگل نے اعداد و شمار جاری کیے ہیں جن میں بتایا گیا ہے کہ حکومتوں نے کب کب اُن کے صارفین کے بارے میں معلومات کا تقاضا کیا.. سماجی رابطے کی بڑی ویب سائٹ، ’فیس بک‘ کا کہنا ہے کہ اس سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران 70 سے زائد ملکوں میں حکومتی ایجنٹس نے فیس بک استعمال کرنے والے ہزاروں افراد کے بارے میں معلومات طلب کی۔ برطانوی حکومت نے بھی فیس بک استعمال کرنے والے افرادکے بارے میں معلومات فراہم کرنے کے تقریباً 2ہزار مطالبات کیے۔ 74ملکوں میں موجود ایجنٹوں کی جانب سے 38ہزار یوزرزکے بارے میں معلومات میں سے نصف امریکہ میں موجود حکام کی جانب سے کی گئی ہیں۔پولیس اور انٹیلی جنس ایجنسیزکی تحقیقات کے حوالے سے متعلق مذکورہ ڈیٹا جاری کرنے کے فیس بک فیصلے کے بعد مائیکروسافٹ اورگوگل نے بھی یہی اقدام کیا ہے۔ فیس بک سے تعلق رکھنے والے کولن سٹرٹچ کاکہناہے کہ مارک زوکربرگ کی سائٹ نے یہ ڈیٹاجاری کرنے کافیصلہ اس لیے کیاکہ ہماری سروسزاستعمال کرنے والے افرادیہ جان سکیں کہ ہمیں معلومات دینے کے حوالے سے کس قسم کی درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔