مقبول خبریں
جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی برطانیہ برانچ کے زیرِ اہتمام فکر مقبول بٹ شہید ورکز یونیٹی کنونشن کا انعقاد
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
وزیر اعظم سےملاقات،مولانا فضل الرحمٰن کی حکومت طالبان مذاکرات میں مدد کی پیشکش
اسلام آباد ...جمعیت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن نے وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف سے خصوصی ملاقات کے دوران حکومت کے طالبان سے مذاکرات میں مدد کی پیشکش کی ہے۔ یہ پیشکش انہوں نے جمعرات کے روز کی۔ مولانا فضل الرحمٰن کا کہنا تھا کہ وہ مذاکرات کے لئے ہر ممکن مدد دینے کو تیار ہیں۔ تاہم، یہ فیصلہ حکومت کو کرنا ہوگا کہ وہ طالبان کے کس گروپ سے مذاکرات میں دلچسپی رکھتی ہے۔ اس سے قبل، جمعیت علمائے اسلام (ایس) کے رہنما مولانا سمیع الحق بھی وزیر اعظم نواز شریف کو مئی میں طالبان سے مذاکرات کرانے میں مدد کی پیشکش کر چکے ہیں۔ مولانا فضل الرحمٰن نے جمعرات کو میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ طالبان کے کس گروپ سے مذاکرات ہوں، اس بات کا فیصلہ کسی فورم میں ہونا چاہئے۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ طالبان کو پرامن رکھنے کے لئے باقاعدہ ایک فورم ہو اور اس فورم کی حکمت عملی بھی طالبان پر وضع ہونی چاہئے کیوں کہ طالبان، حکومت کے حوالے سے عدم اعتماد کا شکار ہیں، اعتماد کی فضا بنانے کے لئے فورم کی ضرورت اہم ہے۔ جے یو آئی ف کے سربراہ نے واضح کیا کہ مذاکرات پر دفاعی اور سیاسی حکومت کا موقف ایک ہونا چاہئے، تبھی طالبان مذاکرات کے لئے سنجیدہ ہوسکتے ہیں۔ نواز شریف سے ملاقات کے موقع پر وفاقی وزیر اطلاعات پرویز رشید بھی موجود تھے اس موقع پر مولانا فضل الرحمان نے وزیر اعظم نواز شریف سے ان کے ماموں کے انتقال پر فاتحہ خوانی بھی کی ..