مقبول خبریں
یوم عاشور کے حوالہ سے نگینہ جامع مسجد اولڈہم میں روح پرور،ایمان افروز محفل کا اہتمام
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
دولت مند غیر ملکی طلبہ کےداخلوں سےآکسفورڈ یونیورسٹی کی ساکھ کوخطرہ ..!!
سلاؤ ...معروف برطانوی اخبار ٹیلی گراف کی ایک رپورٹ کے مطابق خالصتاً کمرشل بنیادوں پر کم گریڈ رکھنے والے غیر ملکی دولت مند طلبہ کے داخلوں سے آکسفورڈ یونیورسٹی کی ساکھ گرنے کا خطرہ پیدا ہو گیا ہے۔ اخبار کے مطابق ایسوسی ایٹس سٹوڈنٹس 13 ہزار پونڈ فی ٹرم ادا کرتے ہیں جن سے یونیورسٹی کی ساکھ کو خراب ہونے کا خطرہ ہے۔ کیونکہ وہ کمزور طالبعلم ہوتے ہیں۔ یہ انکوائری ایک ورکنگ گروپ نے کی ہے جس کے سربراہ پروفیسر پال سلیک ہیں جو آکسفورڈ میں ہی پرو وائس چانسلر کے عہدے پر رہ چکے ہیں۔ ان کی رپورٹ یونیورسٹیوں پر غیر ملکی طلبہ کو کیش کارڈز کے طور پر استعمال کرنے کے الزام کے بعد آئی ہے۔ ہر سال ایسوسی ایٹ طلبہ داخلہ لیتے ہیں۔ ان کا داخلہ تھرڈ پارٹی آرگنائزیشن کے ذریعے ہوتا ہے جو کالج کو پے منٹ کرتی ہے۔