مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
دولت مند غیر ملکی طلبہ کےداخلوں سےآکسفورڈ یونیورسٹی کی ساکھ کوخطرہ ..!!
سلاؤ ...معروف برطانوی اخبار ٹیلی گراف کی ایک رپورٹ کے مطابق خالصتاً کمرشل بنیادوں پر کم گریڈ رکھنے والے غیر ملکی دولت مند طلبہ کے داخلوں سے آکسفورڈ یونیورسٹی کی ساکھ گرنے کا خطرہ پیدا ہو گیا ہے۔ اخبار کے مطابق ایسوسی ایٹس سٹوڈنٹس 13 ہزار پونڈ فی ٹرم ادا کرتے ہیں جن سے یونیورسٹی کی ساکھ کو خراب ہونے کا خطرہ ہے۔ کیونکہ وہ کمزور طالبعلم ہوتے ہیں۔ یہ انکوائری ایک ورکنگ گروپ نے کی ہے جس کے سربراہ پروفیسر پال سلیک ہیں جو آکسفورڈ میں ہی پرو وائس چانسلر کے عہدے پر رہ چکے ہیں۔ ان کی رپورٹ یونیورسٹیوں پر غیر ملکی طلبہ کو کیش کارڈز کے طور پر استعمال کرنے کے الزام کے بعد آئی ہے۔ ہر سال ایسوسی ایٹ طلبہ داخلہ لیتے ہیں۔ ان کا داخلہ تھرڈ پارٹی آرگنائزیشن کے ذریعے ہوتا ہے جو کالج کو پے منٹ کرتی ہے۔