مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
دولت مند غیر ملکی طلبہ کےداخلوں سےآکسفورڈ یونیورسٹی کی ساکھ کوخطرہ ..!!
سلاؤ ...معروف برطانوی اخبار ٹیلی گراف کی ایک رپورٹ کے مطابق خالصتاً کمرشل بنیادوں پر کم گریڈ رکھنے والے غیر ملکی دولت مند طلبہ کے داخلوں سے آکسفورڈ یونیورسٹی کی ساکھ گرنے کا خطرہ پیدا ہو گیا ہے۔ اخبار کے مطابق ایسوسی ایٹس سٹوڈنٹس 13 ہزار پونڈ فی ٹرم ادا کرتے ہیں جن سے یونیورسٹی کی ساکھ کو خراب ہونے کا خطرہ ہے۔ کیونکہ وہ کمزور طالبعلم ہوتے ہیں۔ یہ انکوائری ایک ورکنگ گروپ نے کی ہے جس کے سربراہ پروفیسر پال سلیک ہیں جو آکسفورڈ میں ہی پرو وائس چانسلر کے عہدے پر رہ چکے ہیں۔ ان کی رپورٹ یونیورسٹیوں پر غیر ملکی طلبہ کو کیش کارڈز کے طور پر استعمال کرنے کے الزام کے بعد آئی ہے۔ ہر سال ایسوسی ایٹ طلبہ داخلہ لیتے ہیں۔ ان کا داخلہ تھرڈ پارٹی آرگنائزیشن کے ذریعے ہوتا ہے جو کالج کو پے منٹ کرتی ہے۔