مقبول خبریں
پاکستانی کمیونٹی سنٹر اولڈہم میں بیڈمنٹن ٹورنامنٹ کا انعقاد، برطانیہ بھر سے 20 ٹیموں کی شرکت
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ہارلو اسلامک سنٹر حادثہ کی تفتیش، سی سی ٹی وی فوٹیج سے ایک شخص گرفتار..!!
لندن... پولیس نے ہارلو اسلامک سینٹر میں آتشزنی حملے کی کوشش کے سلسلے میں ایک شخص کو گرفتار کرلیا ہے، ایسیکس پولیس نے کہا ہےکہ ہارلو سے تعلق رکھنے والے 28سالہ شخص کو پکڑا گیا ہے جس سے ڈیٹکٹیوز تفتیش کررہے ہیں۔ ہارلو اسلامک سنٹر میں لگنے والی آگ کی تفتیش کے سلسلے میں پولیس سی سی ٹی وی فوٹیج کا باریک بینی سے جائزہ لے رہی تھی پولیس نے تین مشتبہ افراد کو ویڈیو میں دیکھا مسجد کے آس پاس پولیس کی پیٹرولنگ بھی زیادہ کردی گئی .. مسجد کمیٹی کے وائس چیئرمین ضیاء الرحمن کا کہنا تھا کہ بعض شرپسندوں نے جان بوجھ کر آگ لگائی تھی۔ اس واقعہ کے بعد علاقے کی مسلمان کمیونٹی شدید خوف و ہراس کا شکار ہوگئی ہے۔ تاہم ضیاء الرحمن کا کہنا ہے کہ کمیونٹی اس طرح کے بزدلانہ حملوں سے مرعوب نہیں ہوگی اور وہ اپنا کام جاری رکھے گی۔ ہارلو کی مسجد کو اتوار اور پیر کی درمیانی شب رات گیارہ بجے سے چار بجے کے دوران آگ لگانے کی کوشش کی گئی تھی۔ ایک اطلاع کے مطابق پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج میں تین افراد جائے وقوعہ کے قریب دیکھا ہے۔ چیف انسپکٹر ایڈ ویلز کا کہنا ہے کہ ہارلو کی ساری کمیونٹیز اس قسم کے واقعات کے خلاف متحد ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ بظاہر شرپسندوں نے مسجد کے ایک دروازے پر فوم رکھ کر اُسے آگ لگائی جس سے مسجد کے پچھلے حصہ کو نقصان پہنچا۔ تاہم آگ نے ساری عمارت کو اپنی لپیٹ میں نہیں لیا۔ اُنہوں نے کہا کہ اگر پولیس نے مناسب سمجھا تو وہ سی سی ٹی وی کی فوٹیج کو میڈیا پر جاری کرے گی تاکہ مجرموں کا پتہ چلایا جاسکے۔