مقبول خبریں
پاکستانی کمیونٹی سنٹر اولڈہم میں کپتان محمد منیر میموریل والی بال ٹورنامنٹ کا انعقاد،مانچسٹر کی جیت
پارٹی رہنما شعیب صدیقی کو پاکستان تحریک انصاف پنجاب کا سیکریٹری جنرل بننے پر مبارک باد
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
جس لڑکی نے خواب دکھائے وہ لڑکی نابینا تھی!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
افغانستان میں دہشت گردوں کے بے پناہ ٹھکانے موجود ہیں جنکا وہ فائدہ اٹھا رہے ہیں: اسپیکر کے پی کے اسد قیصر
برمنگھم ... سانحہ پشاور میں معصوم انسانی جانوں سے کھیلنے والے قیامت تک انسانی پھٹکار کے حقدار رہیں گے، اس واقعے نے ملکی تاریخ کو ایک نیا موڑ دیا، سانحہ پشاور پاکستان کی تاریخ کا بدترین ظلم، بربریت اور جبر تھا۔ صوبائی حکومت پاک افواج کی مکمل تائید و حمایت کرتی ہے۔ آپریشن ضرب عضب آخری دہشت گرد کی ہلاکت تک جاری رکھنا ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار اسپیکر خیبر پختوں خواہ اسمبلی اسد قیصر نے اپنے دورہ برمنگھم کے دوران جامع مسجد قادریہ ٹرسٹ میں صاحبزادہ محمد پیر طیب الرحمٰن قادری کی جانب سے اپنے اعزاز میں منعقدہ استقبالیہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ استقبالیہ تقریب کی صدارت مفتی اعظم برطانیہ مفتی گل رحمٰن قادری نے کی۔ استقبالیہ تقریب میں سوات سے ایم پی اے، ڈاکٹر حیدر علی، حاجی محمد رمضان نقشبندی، راجہ سلیم اختر، راجہ اشتیاق خان، قاری محمد سلطان، محمد جاوید خان اور دیگر نے شرکت کی۔ صاحبزادہ پیر محمد طیب الرحمٰن قادری نے کہا کہ اوورسیز کمیونٹی پاکستان اور بالخصوص صوبہ کے پی کے سوات کوئٹہ میں قیام امن کی خواہ ہے۔ اس خطہ میں امن کے لئے بھرپور تعاون کرتی رہے گی۔ صوبائی سپیکر اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ صوبہ میں قیام امن کیلئے وفاقی حکومت اور سیکورٹی ایجنسیوں سے معاملات کا تبادلہ قابل تحسین ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان کے ساتھ بارڈر مشترک ہونے کی وجہ سے دہشت گرد آسانی سے دہشت گردی کرکے بارڈر پار چلے جاتے ہیں۔ افغانستان میں بے شمار ان کی محفوظ پناہ گاہیں موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان بہت جلد دہشت گردی سے چھٹکارا حاصل کرکے امن اور خود کفالت کے جانب بڑھے گا۔ کمیونٹی مل کر مسائل پر قابو پاسکے گی۔ آخر میں پشاور کے شہداء کے لئے دعائے مغفرت کی گئی۔