مقبول خبریں
چوہدری سعید عبداللہ ،چوہدری انور،حاجی عبدالغفار کی جانب سے حاجی احسان الحق کے اعزاز میں عشائیہ
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
کیمیائی حملے کی تحقیقات کے لیے شام جانے والی اقوامِ متحدہ کی ٹیم پرفائرنگ ...!!
دمشق ... اقوامِ متحدہ نے کہا ہے کہ نامعلوم حملہ آوروں نے اس کے ماہرین کی اس ٹیم پر فائرنگ کی ہے جو شام کے دارالحکومت میں مبینہ کیمیائی حملے کی تحقیقات کرنے کے لیے جا رہی تھی۔ ایک کار پر ’متعدد‘ فائر کیے گئے جس سے قافلے کو واپس مڑنے پر مجبور ہونا پڑا۔ اقوامِ متحدہ نے کہا ہے کہ ماہرین متبادل گاڑی ملنے کے بعد فوراً دوبارہ تحقیقات شروع کر دیں گے۔ شامی سرکاری میڈیا نے اس حملے کا الزام حزبِ مخالف کے ’دہشت گردوں‘ پر عائد کیا ہے، تاہم اس کی تصدیق نہیں ہو سکی۔ برطانیہ کے وزیرِ خارجہ ولیم ہیگ نے کہا ہے کہ شام پر سفارتی دباؤ نے کوئی اثر نہیں کیا اور اس کے خلاف اقوامِ متحدہ کی طرف سے متفقہ حمایت کے بغیر بھی کارروائی ممکن ہے۔ انھوں نے کہا برطانیہ شامی کشیدگی کے بارے میں اپنی ممکنہ اقدامات پر غور کر رہا ہے اس معاملے پر کوئی بھی ردِعمل ’بین الاقوامی قوانین‘ کے مطابق ہو گا۔ انھوں نے کہا کہ کوئی ماہرین کو خوف زدہ کرنا چاہتا ہے۔ ولیم ہیگ نے کہا کہ وہ شام کے خلاف کسی کارروائی کو حتمی یا خارج از امکان قرار نہیں دے سکتے۔ ان کا کہنا تھا کہ’ہم 21ویں صدی میں اس بات کی اجازت نہیں دے سکتے کہ بے رحمی سے کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال ہو۔‘ انھوں نے اقوامِ متحدہ کے سیکورٹی کونسل کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ’اس نے اپنی ذمہ داری پوری نہیں کی۔‘ اقوامِ متحدہ کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق ہوٹل سے نکلنے کے تھوڑی دیر بعد ہی معائنہ کاروں کی گاڑیاں ’نامعلوم نشانہ بازوں کی جانب سے متعدد بار‘ فائر کی زد میں آ گئیں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ٹیم سرکاری بحفاظت سرکاری چوکی تک واپس آ گئی۔ ٹیم گاڑی تبدیل کرنے کے بعد دوبارہ اس علاقے تک جائے گی۔‘