مقبول خبریں
چوہدری سعید عبداللہ ،چوہدری انور،حاجی عبدالغفار کی جانب سے حاجی احسان الحق کے اعزاز میں عشائیہ
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
اسلام امن کا درس دیتا ہے اس کے اندر دہشت گردی کا عنصر نہیں، مولانا قادری خادم حسین
اولڈہم:اسلام امن و آتشی کا درس دیتا ہے اس کے اندر دہشت گردی افراتفری اور فساد کا عنصر نہیں ہے،بد قسمتی سے چند مٹھی بھر شر پسند عناصر اپنے ذاتی مفادات اور نظریے کے پرچار کیلئے استعمال کرتے ہیں جسکی وجہ سے آج پورے عالم میں مذہب اسلام کی غلط ترجمانی کی جاتی ہے حالانکہ قرآن و حدیث میں واضع بیان ہے کہ انسانیت کی قدر و قیمت سے بڑھ کر کوئی چیز نہیں ہے لیکن ہم اصل مقصدسے ہٹ کر حرف ذاتیات کی تسکین کیلئے کچھ بھی کر گزرنے کیلئے تیار ہو جاتے ہیں،ہمارے پیارے نبیؐ آخری الزمان کو رب کریم نے اس دنیا میں رحمت العالمین بنا کر بھیجا تھا اور انہوں نے محبت،بھائی چارے،برداشت اور امن کا درس دیا لیکن ہم وہ سب کچھ بھول چکے ہیں،ان خیالات کا اظہار نگینہ جامع مسجد اولڈہم کے خطیب مولانا قادری خادم حسین چشتی نے میڈیا نمائندگان سے سانحہ فرانس کے دہشت گرد واقعہ کے بعد خصوصی نشست کے دوران کیا،انہوں نے کہا کہ گستاخ رسول کریمؐ خداوند کریم خود سزا دیتے ہیں اس طرح دہشت گردی اور بے دردی سے انسانیت کا قتل عام قابل مذمت فعل ہے اور جو کوئی بھی اس کے مرتکب ہوئے ہیں انہیں اس کی قرار واقعی سزا ضرور ملنی چاہئے اور انہوں نے مرنے والوں کے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار کیا،انہوں نے کہا کہ ہمارے اندر برداشت اور صبر کا مادہ دوسرے مذاہب کی نسبت زیادہ ہونا چاہئے تاکہ وہدوسروں کیلئے مثال بنے اور اسلام کی اصل تصویر پورے عالم میں پہنچے ایسے واقعات سے دل رنجیدہ ہوتا ہے کیونکہ ایک انسان کا قتل پورے عالم کا قتل ہوتا ہے آخر میں انہوں نے امید ظاہر کی غیر مذہب کو یہ سمجھنا چاہئے کہ یہ کسی کا ذاتی فعل ہے،ہمارا مذہب اسلام نہ ہی اسکی اجازت دیتا ہے اور نہ ہی اسکی اسلام میں کوئی گنجائش موجود ہے۔بیورو رپورٹ:فیاض بشیر