مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سیرت مصطفیٰ کا مطالعہ ضرور کریں تاکہ رحمت اللعالمین کے اوصاف حمیدہ اپنانے کا ذوق پیدا ہو
بریڈفورڈ ... سیرت رسولؐ پر عمل پیرا ہوکر ہی دنیا اور آخرت کی کامیابی حاصل ہوسکتی ہے۔ میلاد مصطفٰیؐ کی محافل و جلوس سرکار دو عالم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے عقیدت و وابستگی خوبصورت اظہار کا ذریعہ ہے عقیدت و محبت کے بغیر سیرت پر عمل کا جذبہ پیدا نہیں ہوسکتا۔ ان خیالات کا اظہار جلوس میلاد النبیؐ سےخطاب کرتے ہوئے صدر مرکزی جماعت اہل سنت برطانیہ پروفیسر پیر سید احمد حسین ترمذی نے کیا۔ شاہ ولایت فائونڈیشن کے زیر اہتمام جلوس میلاد الجامعہ الزھرا ھیلی فیکس سے شروع ہوکر اپنے روایتی راستہ کے چکر لگاتا ہوا واپس جامعہ پر اختتام پذیر ہوا۔ جلوس کا آغاز سید حسنات حسین شاہ کی تلاوت قرآن مجید سے ہوا جبکہ دیگر نعت خواہان حضرات اور الجامعہ الذھرا کی طالبات نے مختلف مقامات پر بارگاہ رسالتؐ میں ہدیہ عقیدت پیش کیا۔ پروفیسر پیر سید احمد حسین ترمذی نے اپنے خطاب میں شرکاء و جلوس پر زور دیا کہ وہ محافل میلاد کے انعقاد اور جلوس و جلسہ کے اہتمام کے ساتھ ساتھ سیرت مصطفٰیؐ کا بھی مطالعہ کریں تاکہ رحمت اللعالمین کے اوصاف حمیدہ اور صفات جمیلہ کو اپنانے کا ذوق پیدا ہو۔ خطیب اعلٰی علامہ سجاد رضوی نے اپنے خطاب میں حضورؐ اکرمؐ کی ذات و صفات اور آپ کے ایثار و قربانی کا تفصیل سے تذکرہ کیا۔ علامہ مولانا عبدالرحمن نقشبندی نے سرکارؐ کی آمد کو تخلیق کائنات کا مقصود قرار دیتے ہوئے کہا کہ کائنات کی ہر چیز حضورؐ کے نور پاک سے خلق ہوئی ہے۔ جلوس کا راستے میں مختلف مقامات پر پھولوں کی پتیاں برسا کر استقبال کیا گیا۔